اسنیہ رانا کے بلے اور گیند کی افادیت نے ان کا انتخاب کرایا: متالی

برسٹل/یو این آئی/ ٹسٹ کرکٹ میں ڈیبیو کرنے والی اور پانچ برسوں سے زیادہ وقت کے بعد ہندوستانی کرکٹ ٹیم میں جگہ بنانے والی اسنیہ رانا نے اس وقت کی تلافی کرتے ہوئے انگلینڈ کے خلاف پہلی اننگز میں چار وکٹ لئے اور فالو آن کے بعد ہندوستان کی دوسری اننگز میں ناٹ آؤٹ 80 رن بناکر اس واحد ٹسٹ کو عزت دارانہ ڈرا کرانے میں کامیابی حاصل کی۔ گیند اور بلے سے اسی فادیت کے سبب ہندوستانی ٹیم میں ان کا انتخاب ہوا تھا۔ یہ ہندوستانی کپتان متالی راج کا کہنا ہے متالی نے کل پہلا ٹسٹ ڈرا ہونے کے بعد کہا کہ یہ بلے اور گیند سے ان کی فادیت تھی جس کے سبب ہندوستانی ٹیم میں ان کا انتخاب ہوا، اگرچہ وہ ٹیم میں دوسری آف اسپنر تھیں۔ متالی نے کہا کہ گھریلو کرکٹ میں رانا کی شاندار فارم ہی ان کے پونم یادو اور رادھا یادو کے مقابلے ٹیم میں شامل ہونے کی وجہ رہی۔کپتان نے کہا ‘‘ہمارے لئے یہ اہم تھا کہ وہ اسپنرس چنے جائیں جو اچھا کررہی ہیں کیونکہ ہمارا کوئی کیمپ نہیں لگا تھا، کوئی ٹورنامنٹ نہیں تھا جب ہم ٹیم کا انتخاب کررہے تھے ۔ اسنیہ، دپتی کے ساتھ اچھی گیند بازی کررہی تھیں اور ان کا بونس یہ تھا کہ وہ اچھی بلے بازی بھی کرسکتی ہیں۔ ہم اپنے بلے بازی آرڈر کو طویل کرنا چاہتے تھے ’’۔ متالی نے کہا ‘‘ ایک وقت میرے دماغ میں تنوع کی کمی تھی۔ مخالف ٹیم کے پاس بہترین لیفٹ آرم اسپنرس میں سے ایک موجود تھی اس لیے ہم نے سوچا کہ کیوں کہ دو آف اسپنر کو کھلایا جائے ۔ اسنیہ نے گھریلو کرکٹ میں کافی وکٹ حاصل کئے ۔ اس لئے ایسی کھلاڑی کا انتخاب کرنا جو گھریلو کرکٹ میں گزشتہ دو برسوں سے گیند اور بلے کے ساتھ شاندار فارم میں ہیں۔ ہم نے سوچا کہ کیوں نہ ایسی کھلاڑی کو پہلے میچ میں موقع دیا جائے ’’۔