اسروکے چیئرمین کی ڈاکٹر جتیندر سنگھ سے ملاقات | گگنیان اور دیگر خلائی مشنوںپرتبادلہ خیال

نئی دہلی//خلائی تحقیقی تنظیم (اسرو) کے نئے چیئرمین ڈاکٹر ایس۔ سومناتھ نے سائنس اور ٹکنالوجی کے مرکزی وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ سے ملاقات کی اور‘گگنیان’ کے ساتھ ساتھ مستقبل قریب میں دیگر خلائی مشنوں کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔ ڈاکٹر سنگھ کے پاس ایٹمی توانائی اور اور اسپیس کے محکمے کا کام بھی ہے ۔ڈپارٹمنٹ آف اسپیس کی طرف سے جاری کردہ ایک ریلیز کے مطابق، اسرو کے نئے سربراہ کو مبارکباد دیتے ہوئے ڈاکٹر سنگھ نے کہا کہ ڈاکٹر سومناتھ نے انتہائی اہم وقت پر یہ باوقار ذمہ داری سنبھالی ہے ۔ انہوں نے ڈاکٹر سومناتھ کو ہندوستان کے پہلے انسان بردار خلائی مشن 'گگنیان' سمیت کچھ بڑے تاریخی مشنوں کے ذریعے اسرو کی کامیاب قیادت کرنے پر نیک خواہشات پیش کیں۔ریلیز کے مطابق، اس میٹنگ میں ڈاکٹر سنگھ نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں خلائی پروگراموں کی خصوصی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے اور خلائی ٹیکنالوجی کو اب سڑکوں اور شاہراہوں، ریلوے ، صحت کی دیکھ بھال اورزراعت وغیرہ جیسے مختلف شعبوں میں لاگو کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگلے چند سالوں میں خلائی راستے سے ہندوستان کا چوٹی تک پہنچنا شروع ہو جائے گا۔اسرو کے چیئرمین نے ڈاکٹر جتیندر سنگھ کو گگنیان پروگرام کی صورتحال سے آگاہ کیا اور کہا کہ کووڈ اور دیگر رکاوٹوں کی وجہ سے وقت مقررہ میں تاخیر ہوئی ، لیکن اب چیزیں دوبارہ پٹری پر آ گئی ہیں اور پہلے بغیر پائلٹ کے مشن کے لیے ضروری درکار تمام انتظامات درست ہورہے ہیں۔ منصوبے کے مطابق، پہلے بغیر پائلٹ کے مشن کے بعد دوسرا بغیر پائلٹ مشن 'ویوم مترا' روبوٹ لے جائے گا اورتب انسان بردارکے ذریعہ اس کاتعاقب کیاجائے گا۔وزیرموصوف کو یہ بھی بتایا گیا کہ ہندوستانی خلابازوں نے روس میں کامیابی کے ساتھ خلائی پرواز کی عمومی تربیت حاصل کی ہے ۔