اسرائیلی فائرنگ سے زخمی فلسطینی نوجوان دم توڑ گیا

یروشلم// فلسطین میں قابض اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا پندرہ سالہ نوجوان اسپتال میں دم توڑ گیا۔تفصیلات کے مطابق فلسطین میں اسرائیلی فوج کی جارحیت مسلسل جاری ہے، معصوم اور نہتے مظلوم شہریوں پر ظلم کی انتہا کردی گئی ہے، ایک ہفتے قبل اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے شدید زخمی ہونے والا 15 سالہ نوجوان آج اپنی زندگی کی بازی ہار گیا۔ترجمان فلسطینی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ 15 سالہ ’عدی اکرم ابو خلیل‘ ایک ہفتے قبل امریکی سفارت خانے کی القدس منتقلی کے خلاف احتجاجی مظاہرے میں شریک تھا کہ اچانک اسرائیلی فوج نے اس پر فائرنگ کردی جس کے باعث وہ شدید زخمی ہوگیا تھا۔فلسطینی وزارت صحت کے مطابق بعد ازاں اسے فوری طور پر طبی امداد فراہم کرنے کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا جہاں اسے بچانے کی ہرممکن کوکشش کی گئی لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے آج جاں بحق ہوگیا، عدی اکرم غزہ میں اسرائیلی فوج کے خلاف احتجاج کر رہا تھا۔خیال رہے کہ سرحد پر اسرائیلی فورسز کی وحشیانہ فائرنگ سے زخمی متعدد فلسطینی اردن کے اسپتالوں میں زیرعلاج ہیں، دوسری جانب فلسطینی وزیر خارجہ ریاد المالکی نے عالمی عدالت انصاف سے اسرائیلی فوج کے ہاتھوں نہتے فلسطینیوں کے قتل عام کی مکمل تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔