اردو کونسل کے قیام کا خیر مقدم

 
مینڈھر//شعبہء اردوگورنمنٹ ڈگری کالج مینڈھرنے ایک پر وگرام کا انعقاد کیا جس میں ’’ کونسل برائے فروغِ اردو زبان کے قیام ‘‘ کے حوالے سے حکومتی فیصلے کا خیرمقدم کیا گیا۔ تقریب کی صدارت کالج کے پرنسپل پروفیسر شبیر حسین شاہ نے کی۔ اس موقعہ پر ڈاکٹر محمد لطیف میر،صدر،شعبہء اردونے اپنے استقبالیہ میں اردو کونسل کے قیام کے ضمن میں حکومت کے فیصلے کی ستائش کی اور محکمہء اعلی تعلیم کے اربابِ اختیار خصوصی طور پر محکمہ کے وزیر الطاف حسین بخاری اورکمشنر سیکریٹری اصغر حسن سامون کاشکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ آزادی کے ستر سال بعد اس تاریخی فیصلے کا سہرا اصغر حسن سامون کے سربندھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس فیصلے سے اردو کو وہ  مراعات میسر آئیں گی جو کسی بھی ملک میں سرکاری زبان کو دی جاتی ہیں۔انہوں نے خطہ پیرپنچال سے معروف ماہرِتعلیم فاروق مضطر کو اردو کونسل کا ممبر نامزد کرنے پر بھی حکومت کا شکریہ ادا کیا۔اپنے خطاب میں شبیر حسین شاہ نے تمام اہل اردو کو مبارک باد پیش کی اور کہا کہ اس حکومتی فیصلے سے اردو زبان کو اس کا صحیح مقام ملنے کی راہ  ہموار ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ اردو صرف زبان ہی نہیں تہذیب بھی ہے اس لئے اس کی بقا ایک تہذیب کی بقا ہے۔ انہوں نے طلبا پر زور دیا کہ وہ اس زبان کی ترقی و ترویج کے لئے اپنا کردار ادا کریں۔ڈاکٹر عبدالرئوف صدر شعبہء ریاضی، سکریٹری اسٹاف کونسل، پروفیسر محمداکرم ، پروفیسر تحسین عباس اور پروفیسر خورشید عالم صدر شعبہء عربی نے بھی اپنے اپنے خیالات کا اظہار کیا اور کونسل کے قیام کے حکو متی فیصلے کی ستائش کی۔اس تقریب میں پروفیسر جاوید منظور، پروفیسرایازچوہدری، پروفیسر شوکت حسین وانی، ڈاکٹر عبدالرشید خان، ڈاکٹر رفعت ناز، پروفیسر محمد الیاس، پروفیسر رینوشرما، پروفیسر گیتو شرما، پروفیسر جمیل احمد، ڈاکٹر مکھن دین وغیرہ بھی موجو دتھے ۔آخر پر پروفیسر اکرم نے سبھی کا شکریہ اد اکیا ۔