اربعین کے موقعہ پر جلوسِ عزاء اور مجالس کا اہتمام

 معرکہ کربلا ایک دائمی تحریک اور مشن :آغا حسن 

سرینگر// انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے وادی کے طول و عرض میں خصوصی مجالس عزا اور جلوس ہائے عزا کا انعقاد کیا گیا۔بیان کے مطابق مرکزی نوعیت کے جلوس عزا آستان بڈگام اور زیلدار محلہ سعدہ کدل سرینگر سے انجمن کے صدرآغا سید حسن کی قیادت میں برآمد کئے گئے ۔زیلدار محلہ سعدہ کدل میں عزاداروں سے خطاب کرتے ہوئے آغا حسن نے یوم اربعین کی اہمیت پر تفصیلی روشنی ڈالی۔انہوں نے کہا کہ معرکہ کربلا صرف ایک سانحہ نہیں بلکہ ایک دائمی تحریک اور مشن ہے جس کا ہدف دین و شریعت کی حفاظت اور ظالم قوتوں کے خلاف نبرد آزمائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عصر حاضر میںجب دنیا کے مختلف گوشوں میں مسلمانوں پر استکباری قوتوں کا جبروقہر جاری ہے معرکہ کربلا میں حسینی جانثاروںکا جذبہ مزاحمت اور صبر و استقامت مظلومین عالم کیلئے نقش ِ راہ کی حیثیت رکھتی ہے۔
 

حضرت حسینؑ نے انسانیت کو تذلیل سے بچایا:مولانا قمی

سرینگر //پیروان ولایت کے سربراہ مولانا سبط محمد شبیر قمی اور صدر مولانا شبیر احمد صوفی نے اربعین کے موقع پر شہدائے کربلا کو  خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ مولانا قمی نے امام عالی مقامؑ کو تاریخ بشریت کا آئیڈل قرار دیتے ہوئے کہا کہ امام عالی مقامؑ کی عظیم قربانیوں کی بدولت ہی آج دنیا میں انسانیت باقی اور مزاحمتی تحریکیں برسرپیکار ہیں ۔انہوں نے کہا کہ امام عالی مقامؑ نے عظیم الشان قربانی کے ذریعے اسلام میں نئی روح پھونک دی اور مذہب اسلام کے ساتھ ساتھ انسانیت کو تذلیل اور توہین سے بچایا۔ انہوں نے مزید کہا کہ کربلا ایک درسگاہ ہے جس میں عالم بشریت بالخصوص عالم اسلام کے تمام مشکلات کا حل مضمر ہے اسلئے امت مسلمہ کو چاہئے کہ وہ اس عظیم الشان درسگاہ کی پناہ میں آجائے۔
 
 
 
 

تحریک کربلا آزادی پسند اقوام کیلئے مشعل راہ: مسرورعباس 

سرینگر//اتحاد المسلمین کے اہتمام وادی کے مختلف مقامات پر عزاداری کی مجالس منعقد ہوئیں۔ اس سلسلے میں سب سے بڑی اور عظیم االشان مجلس سجاد آباد چھتہ بل سرینگر میں منعقد ہوئی ۔اس موقع پرمولانا مسرور عباس انصاری نے قرآن و سنت اور اہلبیتؑ کے مختلف پہلوئوں کو اجاگر کیا اور فلسفہ قیام کربلا پر مفصل روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ کربلا عالم بشریت کیلئے تا ابد درس ہدایت اور حق و باطل کی پہچان بن گیا جس کی وسعتوں اور گہرائیوں کی کوئی حد نہیں۔ انہوں نے کہا کہ امام عالی مقامؑ نے خفتہ ذہن اور مردہ ضمیر امت کو بیدار کرنے اور باشعور بنانے کیلئے کربلا میں عظیم الشان قربانیاں پیش کیں اور ظلم و زیادتی، کفر و شرک، جبر و استبداد اور جھوٹ و فریب جیسی برائیوں و ناانصافیوں کے خلاف ایک تحریک شروع کی جو چودہ سو سال گزر جانے کے باوجود تروتازہ ہے۔ مولانا نے کہا کہ تحریک کربلا آزادی پسند اقوام کیلئے نشان بن چکی ہے۔ اس تحریک نے سنہ اکسٹھ ہجری سے لیکر آج تک انسانیت کی ڈوبتی ہوئی کشتی کو پار لگایا اور ظلم و تشدد کے گھٹا ٹوپ اندھیرے میں مظلومین کو جینے کا سلیقہ سکھایا۔مولانا مسرور عباس نے نجف سے کربلا تک پیدل مارچ میں عرب و عجم سے وابستہ زائرین امام حسین علیہ السلام کی جانب سے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے پر ان کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا اور ان کے اس اقدام کو کافی سراہا۔
 

امام عالی مقام ؑسے تجدید عہد وفا کا دن: آغا سید محمد ہادی

سرینگر// بمنہ میں انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے ایک جلوس برآمد ہوا جس میں شہدائے کربلا کوخراج عقیدت پیش کیاگیا ۔جلوس امام بارہ گاری پورہ سے برآمد ہوکر مرکزی امام بارگاہ آیت اللہ یوسف فضل اللہ اور امام خمینیؒ چوک سے گزرتے ہوئے قبل از نماز مغربین غازی منزل میں اختتام پذیر ہوا۔ جلوس سے خطاب کرتے ہوئے صدر انجمن شرعی شیعیان آغا سید محمد ہادی نے کہا کہ یہ دن امام عالی مقامؑ سے تجدید عہد وفا کا دن ہے۔ انہوں نے کہا کہ سید الشہداؑنے دین کی بقاء اور انسانی اقرار کے تحفظ کے لئے بے مثل قربانی پیش کی۔ انہوں نے کہا کہ امام عالی مقام کی عملی زندگی تمام عالم انسانیت کے لئے قیامت تک مشعل راہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہداے کربلاکی بے مثال قربانی عالم انسانیت کو باطل کے سامنے ڈٹ جانے کا درس دیتی ہے۔