ادبی کنج جموں کے زیر اہتمام یومِ مادر پر ادبی نشست

  جموں //مختلف زبانوں کے اِشتراک سے عرصہ دراز سے اُردوُ زبان کی ترقی و ترویج کیلئے سرگرمِ عمل ریاست کی سرکردہ کثیر اللسانی ادبی تنظیم ادبی کُنج جے اینڈ کے جموں کے زیراہتمام گذشتہ روز اِس کے ادبی مرکز واقع کڈذی سکول تالاب تِلّو جموں میں عالمی سطح پر مدرز ڈے کے موقعہ پر ایک خصوصی ادبی و ثقافتی نِشست کا انعقاد ہوُا۔ مختلف اوقات میں مختلف مقامات سے گُذرتے ہوئی یہ تحریک پہلی دفعہ 10 مئی 1908ء کو امریقہ میں منایا گیا ۔ اور اِس کے بعدیہ دِن ہر سال مئی کے دوُسرے ایتوار کو منایاجارہا ہے۔ اِس خصوُصی نشست کی صدارت کے فرائض اُردوُ کے جانے پہچانے شاعر وفا سنگدِل نے کی۔ جبکہ سرکردہ دانشور ڈوگری شاعر پرنسپل کے آر سلگوترہ مہمانِ سلگوترہ مہمانِ خصوُصی تھے۔اِس نِشست کی نظامت کے فرائض اِس بار گلوکار چمن سگوچ نے انجام دِئے۔ نِشست کے آغاز میں چئیرمین آرشؔ دلموترہ نے صدرِتنظیم شام طالب ؔ اور نائب صدر سنتوش نادانؔ اور جنرل سیکرٹری ایم ایس سنگدلؔ وفاؔ اوردیگر مقرّرین نے اِس دِن کی اہمیّت اور خصوُصیت پر مفصّل روشنی ڈالتے ہوئے مقدّس شخصیّت ماں کی عظمت کا سلام کِیا۔ اور کہا گیا کہ ماں نہ ہوتی تو ہم بھی نہ ہوتے۔ نِشست میںخاص موضوع ’ ماں کی صورت بھگوان کی صوُرت کے تحت مقررّین نے اپنے اپنے خیالات کا اظہار کِیا ۔ اِس موقعہ پر ایک خصوُصی اُردوُ پیپر ’ماں کی صورت خُدا کی صورت‘۔ (اُردوُ)از، آرشؔ دلموترہ۔ اِس نِشست کے شعری دوَر میں شعراء حٖرات نے ا س د ِن کے حوالے سے اپنی مختلف نظمیں اور گیٖت پیش کِئے۔ اِس موقعہ پر شام طالب کی طرف سے پیش کی گئی ایک نظم’ ماں ‘کا ایک بند اِس طرح ہے۔ ’ لوریاں منتظر توُ کہاں سو گئی   ڈھونڈتا ہوں نہ جانے کہاں کھو گئی،   زندگی کی کڑی دھوُپ میں میری ماں  میری خاطر سدا چھاؤںہی بو گئی۔  آج کے سُر مئی دوَر میں گلو کار چمن سگوچ نے ماں کی عظمت کو اُجاگر کرتا ہوُا آرشؔ دلموترہ کا ایک ڈوگری گیٖت گا کر حاضرین کو محظوظ کِیا۔ نِشست میں چئیرمین آرشؔ دلموترہ کی دعوت پر اِتفاق رائے سے اعلان کِیا گیا کہ ادبی کُنج جموں کی آیئندہ نِشست20مئی2018ایتوارکے روز ایک خصوُصی تقریب( مُبارکبادی مُشاعرہ) کے طور پر منعقد کی جائے گی ۔جو آرشؔ اوم دلموترہ کے74ویں یوُمِ پیدائش کے موقعہ پر F-6A نزد پارک راج پورہ منگوتریاں کے ’رونق ہال‘ جموں میں منعقد ہوگی۔ آج کی شعری نِشست کے اِسمائے گرامی اِس طرح ہیں۔ آرشؔ دلموترہ ،سنتوش شاہ نادانؔ، سرور چوہان حبیٖبؔ، چمن سگوچ،شمسؔ راجن،  بِشن داس خاکؔ،  محمّد باقر صباؔ،ویدؔ اُپّل، راجؔ کمل، ایس کے گُپتا، سنجیو کُمار ، راجیو کُمار اور شام طالبؔ۔نشست کا اِختتام حسبِ معمول آرشؔ دلموترہ چیئرمین کی طرف سے پیش کردہ شُکریہ کی تحریک سے ہُوا۔