ابھینندن کا مگ 21اسکواڈرریٹائر کیلئے تیار

نئی دہلی// ہندوستانی فضائیہ سری نگر میں مقیم اپنے مگ 21 سکواڈرن ‘سورڈ آرمز’ کو ریٹائر کرنے کے لیے تیار ہے جس میں ونگ کمانڈر ابھینندن ورتھمان اس وقت شامل تھے جب انہوں نے فروری 2019 میں بالاکوٹ حملے کے ایک دن بعد پاکستان کے ایک ایف-16 لڑاکا طیارے کو مار گرایا تھا۔’سورڈ آرمز’ اس کے پرانے مگ 21 لڑاکا طیاروں کے باقی چار اسکواڈرن میں سے ایک ہے۔آئی اے ایف کے لڑاکا طیاروں نے پلوامہ حملے کے تقریباً دو ہفتے بعد 26 فروری 2019 کو بالاکوٹ میں جیش محمد کے تربیتی کیمپ پر بمباری کی تھی۔ پاکستان نے 27 فروری کو پہندوستانی فوجی تنصیبات کو نشانہ بنانے کی کوشش کرتے ہوئے جوابی کارروائی کی تھی۔ورتمان (اب گروپ کیپٹن) نے دشمنوں کی طرف سے کیے گئے فضائی حملے کو ناکام بنانے کے لیے آسمانوں پر چڑھایا تھا اور فضائی لڑائی کے دوران پاکستانی جیٹ طیاروں کے ساتھ ڈاگ فائٹ میں مصروف تھے۔ان کے مگ-21 بائیسن جیٹ کو مار گرانے سے پہلے، ورتھمان نے پاکستان کے ایف-16 لڑاکا طیارے کو مار گرایا تھا۔ انہیں 2019 میں یوم آزادی کے موقع پر ویر چکر سے نوازا گیا، جو ہندوستان کا تیسرا اعلیٰ ترین جنگی تمغہ ہے۔دفاعی ذرائع نے بتایا کہ نمبر 51 اسکواڈرن کو ستمبر کے آخر تک “منصوبہ کے مطابق” ریٹائر ہونا ہے۔مگ-21 جیٹ طیاروں کو چار دہائیوں سے زیادہ پہلے ایر فورس میں شامل کیا گیا تھا اور ان میں سے بہت سے طیارے حادثے میں ضائع ہو گئے تھے۔