آدھار کارڈ کو ووٹر کارڈ سے جوڑنے والے بل پر راجیہ سبھا کی مہر ثبت

نئی دہلی// راجیہ سبھا میں منگل کو کانگریس اور پوری اپوزیشن کے واک آؤٹ کے درمیان انتخابی قانون (ترمیم) کو آدھار کارڈ کو ووٹر کے آئی کارڈ سے جوڑنے ، سروسز کی ووٹنگ میں صنفی مساوات لانے اور سال میں چار بار نئے ووٹرز بنانے کے التزام کے بل 2021’ پر پارلیمنٹ نے منظور کرلیا۔قبل ازیں راجیہ سبھا نے بل کو صوتی ووٹ سے منظور کرتے ہوئے اسے سلیکٹ کمیٹی کو بھیجنے کی تجویز کو مسترد کر دیا۔ لوک سبھا نے اسے پیر کو منظور کر لیا تھا۔اپوزیشن کا کہنا تھا کہ حکومت نے اپوزیشن کو اس اہم بل کا مطالعہ کرنے کے لیے کافی وقت نہیں دیا اس لیے اسے سلیکٹ کمیٹی کو بھیجا جائے ۔ اپوزیشن نے الزام لگایا کہ اس بل کے ذریعے حکومت عوام کو حق رائے دہی سے محروم کرنا چاہتی ہے ۔اپوزیشن کے ہنگامے کے درمیان تقریباً ایک گھنٹے تک جاری رہنے والی مختصر بحث کا جواب دیتے ہوئے وزیر قانون اور انصاف کرن رجیجو نے کہا کہ بل کی مخالفت وہ لوگ کر رہے ہیں جو فرضی اور جعلی ووٹنگ کے ذریعے الیکشن جیت رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس بل کو پارلیمانی قائمہ کمیٹی کو بھیجا گیا تھا جہاں تمام جماعتوں کے ارکان کی تجاویز کو اس میں شامل کیا گیا ہے ۔