GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  صفحہ اوّل
قاضی نثارکی برسی پراسلام آباد قصبے میں ہڑتال
عیدگاہ میں جلسہ ،اِکا دکا پتھرائو کے واقعات

اننت ناگ(اسلام آباد)//میرواعظ جنوبی کشمیرڈاکٹر قاضی نثار کی برسی کے سلسلے میں ہڑتال کال کے پیش نظرتمام کاروباری سرگرمیاں بند رہیں جبکہ اس دوران قصبے میں کئی مقامات پر پتھرائو کے واقعات پیش آئے اور حریت کے ایک لیڈرکی گاڑی کوفورسز نے چکناچورکیا جسکے نتیجے میں4افراد زخمی ہوئے۔ منگل کو ڈاکٹر قاضی نثار کی 18ویں برسی کے موقعہ پر امت اسلامی سربراہ میرواعظ قاضی یاسر نے ہڑتال کی کال دی تھی۔ہڑتال کی وجہ سے قصبہ میں تمام کاروباری ادارے،سرکاری اور دیگر پرائیویٹ ادارے بند رہے جبکہ گاڑیوں کی آمد و رفت بھی معطل رہی ۔ ڈاکٹر قاضی کی برسی کے سلسلے میں ان کے مقبرے پر صبح سے ہی فاتحہ خوانی کی مجالس آراستہ ہوئیں اور لوگوں کی بڑی تعداد نے وہاں حاضری دیکر گلباری کی اور اجتماعی فاتحہ خوانی میں حصہ لیا۔اس موقعہ پر جنگلات منڈی عید گاہ میں ایک تعزیتی جلسے کا پروگرام بھی مرتب کیا گیا تھا جس میں میر واعظ جنوبی کشمیر قاضی یاسر کے علاوہ سینئر حریت رہنماء اور فریڈم پارٹی سربراہ شبیر احمد شاہ ، نیشنل فرنٹ چیئرمین نعیم احمدخان ،سالویشن مومنٹ چیئرمین ظفر اکبر بٹ اور لبریشن فرنٹ(حقیقی )کے سربراہ جاوید احمد میر کے علاوہ لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ تعزیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے حریت لیڈران نے قاضی نثار کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان کی مذہبی اور سیاسی خدمات کیلئے انہیں اپنے دور کا بے مثال قائد قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر قاضی نثار نے اپنے دورحیات میں جو سرگرمیاں انجام دیں ان کا مقصد حکمرانوں کی اس کوشش کا عملی توڑ کرنا تھا کہ مذہب اور سیاست دو الگ الگ میدان ہیں اور مذہبی پیشوائوں کو مسجد سے نکل کر عملی میدان میں قدم نہیں رکھنا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ قاضی نثار نے دین ودنیا کو ایک دوسرے سے علیحدہ کر نے کی حکمرانوں کی جادوگری کا طلسم توڑ کر جو کا م کیا ،اس میںامت کی سربلندی کا راز پو شید ہ ہے۔انہوں نے کہا کہ مرحوم نے اتحاد بین المسلمین کے سلسلے میں جو قابل فخر کارنامہ سرانجام دیا ہے، وہ انکی سیاسی بالیدگی اور دور اندیشی کا نتیجہ ہے ، قاضی نثارمیدان سیاست کے شہسوارہو نے کیساتھ ساتھ اسلامیان کشمیر کے مختلف فقہی اور مسلکی گروہوں کے درمیان اتحاد کے بھی زبردست قائل تھے ۔حریت قائدین نے ان کے روحانی اور سیاسی جا نشین قاضی یا سر کے ساتھ اظہار یکجہتی کر تے ہو ئے کہا کہ امید ہے کہ قاضی یا سر اپنے والد ڈاکٹر قاضی نثار کے نقش قدم پر چل کر امت مسلمہ کو ظلم وجبر کیخلاف متحد کر کے تحریک آ زادی کو اسکے منطقی انجام تک پہنچانے میں اپنا قائد انہ رول ادا کر یں گے۔اپنے خطاب میںقاضی یاسر نے مسلکی اختلافات کو یکسر خارج کرتے ہوئے کہاکہ اسلاف کے دین پر چلنے والوں اور دین اسلام کی خدمت میںنماناں کردارنبھانے والوں سے نہیں بلکہ دین میں نئی تشریعات اور دین سلف کو بھلا دینے والوں سے ہی ملت تفریق درتفریق منقسم ہورہی ہے چنانچہ مسلکی اختلافات کا دنڈورہ پیٹنے والے ہی اصل میں وحدت امت کا شیرازہ بکھیرنے کے در پے ہیں۔ قاضی یاسر نے کہا کہ کشمیر کا ہر فرد تحریک آزادی کیلئے اپنی جان نچھاور کرنے کو تیار ہے۔عیدگاہ میں تقریب کے بعدایک بہت بڑا جلوس نکالاگیا جس کی قیادت مذکورہ حریت لیڈران کر رہے تھے ۔ جلوس قاضی نثار کے مقبرے تک پہنچ گیاجہاں فاتحہ خوانی کی گئی۔ حریت لیڈرظفراکبربٹ نے کشمیر عظمیٰ کوبتایا کہ جلوس کے دوران ہی فورسزنے اُنہیں عیدگاہ سے باہر نکلنے کے بعدروکا جسکے بعد اُنہیں گرفتار کرنے کے علاوہ اُن کی گاڑی کے شیشے چکناچور کئے گئے۔اُن کا کہنا تھا کہ اس کارروائی میں چار افراد زخمی ہوئے تاہم وہ گاڑی لیکرفرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔اِدھرہڑتال کے دوران قصبے کے چینی چوک، ملکھ ناگ اور ریشی بازارمیں نوجوان سڑکوں پر نکل آئے اور اُنہوں نے پتھرائو کیا۔پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے لاٹھی چارج کیا جس کے بعد صورتحال معمول پر آگئی۔

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2014 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By