GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  کشمر
پنچایت ایکٹ میں ترامیم قبول نہیں
نیشنل کانفرنس کا بڈگام میںحکومت کے خلاف احتجاجی جلوس

سرینگر // نیشنل کانفرنس ضلع بڈگام کی طرف سے جمعرات کو مجاہد منزل بڈگام سے ڈی سی آفس تک ایک احتجاجی جلوس بر آمد ہوا ۔ جس کی قیادت پارٹی کے سینئر لیڈر اور ایم ایل سی علی محمد ڈار کر رہے تھے ۔احتجاجی جلوس میں شامل پارٹی کارکنوں نے ہاتھوں میںپلے کارڑ اٹھا رکھے تھے جن پر حکومت مخلاف نعرے درج تھے۔احتجاجی مظاہرین نے مخلوط سرکار کو خبر دار کیا کہ وہ کسی بھی صورت میں پنچایت ایکٹ ترمیم یا من پسند وارڈ حد بندی نہ کریں ۔انہوں نے کہا کہ اگر ایسا کیا گیا توبھیانک نتائج برآمد ہونگے اور ریاست میں امن وامان کی فضاء درہم برہم ہونے کا احتمال ہے جس کی تمام تر ذمہ داریاں موجودہ حکومت پر عائد ہونگی۔انہوں نے مزید کہا کشمیری عوام کے خلاف خصوصاً اہل کشمیر کے مفادات اور احساس کا سودا کرنا ریاستی عوام کو قبول نہیں ہے ۔مظاہرین نے اس موقع پر کہا کہ ریاست میں اس وقت دس لاکھ کے قریب بیروز گار ہیں جن کی عمر بھی حد سے تجاوز کر گئی ہے اور وہ روزی روٹی کے لئے پریشان ہیں ۔ اس موقع پر علی محمد ڈار ایم ایل سی ، حاجی عبدالاحد ڈارصدر ضلع بڈگام ، صوبائی جوائنٹ سیکریٹری غلام نبی بٹ، محمد امین بانڈے ،ماسٹر محمد مقبول اور دیگر لیڈران نے بھی خطاب کیا ۔انہوں نے کہا کہ پنچایت راج جمہوریت کی جڑ ہوتی ہے اور پنچایت راج گاؤں گاؤں میں چھوٹی موٹی حکومتوں کا کام انجام دیتی ہیں اورریاست میں نیشنل کانفرنس نے ہی جمہوری اور آئینی اداروں کی بنیادیں قائم کیں ۔ احتجاج کے اختتام پر پارٹی کی طرف سے ڈی سی بڈگام اور ایس پی بڈگام کو ایک میمورنڈم بھی پیش کیا گیا ۔

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2017 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By