GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  صفحہ اوّل
عہدیداروں و کارکنوں پر سیفٹی ایکٹ کا اطلاق
تحریک حریت کا شدید ردعمل ،اقدام حکومتی بوکھلاہٹ قرار دیا

سرینگر//تحریک حریت جموں کشمیر نے صدر ضلع بارہمولہ عبدالغنی بٹ ،منظور احمد سوپور،محمد اشرف ملک اور عبدالاحمد تیلی پر پبلک سیفٹی ایکٹ کے نفاز کو حکومتی بوکھلاہٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے قوانین کے اطلاق سے تحریک آزادی سے وابستہ قائدین و کارکنان کو زیر نہیں کیا جاسکتا ۔تحریک حریت نے مسلسل چھاپوں اور گرفتاریوں کو انتہائی تشویشناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ اصولوں اور انصاف کا تقاضا تھا کہ جن لوگوں نے حالیہ عوامی تحریک کے دوران پُر امن نہتے اور معصوم بچوں کا قتل عام کیا،ان کو جیلوں میں ہونا چاہئے تھااورجن فوجیوںنے ہزاروں جوانوں کو پیلٹ فائر کر کے زخمی کردیا یا آنکھوں کی بینائی سے محروم کردیا ان کے خلاف کاروائی ہونی چاہئے تھی۔ عبدالغنی بٹ ،منظور احمد کلو ،محمد اشرف ملک،اور عبدالاحد تیلی جانے پہچانے سیاسی اور سماجی سطح پر متحرک ہیںاور انہیںگرفتار کرنے کا کوئی جواز نہیں۔اسی طرح شاکر احمد میر ،جاوید احمد پھلے،مولانا سرجان برکاتی اور محمد امین پرے PSAکے تحت سزا بھگت چکے ہیں ،عدالت نے ان پر عائد سبھی الزام رد کئے ہیں مگر ضلع انتظامیہ شوپیان شاید ان کو دوبارہ پابند سلاسل کرنے کے لئے PSAعائد کرنے کا من بنارہے ہیں۔محمد امین پرے گزشتہ 13مہینوں سے PSAکے تحت بار بار گرفتار ہیں ۔تحریک حریت نے صدر تحصیل رفیع آباد اعجاز احمد بہرو کو سوپور تھانے میں انہیں جسمانی ٹارچر کئے جانے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وہ کوئی مجرم نہیں بلکہ ایک سیاسی تنظیم کا تحصیل صدر ہے ۔

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2017 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By