GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  شھرنامہ
جبری گمشدگیوں کیخلاف متاثرین کا احتجاج،کلینڈر جاری کیا گیا
’ناد ہا لائیے میانہ یوسفو ولو‘

سرینگر//نمناک آنکھوں،روح شکن نالوں اوردلریز آہوں کے ساتھ لاپتہ ہوئے لوگوں کے اقرباء نے اپنے جگر گوشوں کی یاد میں سال2017کا کلینڈر ’’یوسف نامہ‘‘ جاری کیا،جس میں دوران حراست لاپتہ کئے گئے12نوجوانوں کی تصاویر اور ان کی گمشدگی کی روداد کو قلمبند کیا ۔منگل کو پریس کالونی میں منعقدکئے گئے خاموش احتجاجی دھرنے کے دوران ’یوسف نامہ ‘عنوان کے تحت ایک کلینڈر جاری کیا گیا جبکہ اس موقعہ پر دھرنے میں شامل عمر رسیدہ والدین نے اپنے جگر پاروں کی فوری بازیابی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ انہیں اس بات کا یقین ہے کہ ایک نہ ایک دن وہ اپنے بچوں سے ضرور ملیں گے۔کلینڈر کے سر ورق پر گزشتہ خاموش مظاہروں کی تصاویر کے علاوہ معروف کشمیری شاعر محمود گامی کی مثنوی’’یوسف زلیخاء‘‘ کا ایک شعر’’ناد لائے میانہ یوسُفو وُلو‘‘ تحریر کیا گیا ہے۔جنوری کیصفحے پر سرینگر کے بمنہ سے تعلق رکھنے والے ایک پھل فروش شبیر احمد گاسی کی تصویر لگائی گئی ہے جبکہ شبیر احمد کو2000 کے دوران مبینہ طور پر فوج نے گرفتار کیا تھا اور بعد میں وہ حراست کے دوران لاپتہ ہوا۔ فروی کے صفحہ پر نظر احمد کی تصویر ہے،جس کا بقول انکی اہلیہ کے لالچوک میں2006کے دوران گرفتار کیا گیا جبکہ بعد میں2007کو پتہ چلا کہ انہیں فوج اور پولیس نے فرضی جھڑپ کے دوران جان بحق کیا اور غیر ملکی جنگجوئوں کے خاتے میں ڈال دیا گیا۔مارچ کے صفحہ پر منظور احمد وانی کو جگہ دی گئی ہے جس کے بارے میں پولیس کا کہنا ہے کہ1994میں انہوں نے عسکریت میں شمولیت کی اور1996میں گرفتار ہوئے۔رپورٹ کے مطابق رہائی کے بعد2003 میں کریک ڈائون کے دوران چھتہ بل میں گرفتار کیا گیا اور بعد میں دوران حراست لاپتہ ہوئے۔ باغندر ہمہامہ کے غلام محی الدین ڈار کو انکی اہلیہ کے مطابق فوج نے1996میں گرفتار کیا جبکہ بعد میں5بچوں کے اس باپ کا دوران حراست پتہ نہیں چلا۔انکی تصویر معہ احوال گرفتاری اپریل کے صفحہ پر درج ہے۔مئی کے ماہ میں محمد شفیع ڈار ساکنہ ٹینگہ پورہ کی تصویر کو شائع کیا گیا جبکہ بشری حقوق کے ریاستی کمیشن کے فیصلے نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ محمد شفیع ڈار کو1990میں سرحدی حفاطتی فورس نے گرفتار کیا ۔ ماہ جون میں شہر خاص کے صفا کدل کے رہائشی8ویں جماعت کے طالب علم عرفان احمد خان کا ذکر ہیجو 1993میں ان کے اہل خانہ کے مطابق گھر سے باہر گیا اور بعد میں واپس نہیں لوٹا تاہم8ماہ کے بعد وہ بٹہ مالو کے ریکہ چوک میں آرمی کریک ڈائون کے دوران فوج کی حراست میں دیکھا گیا۔اہل خانہ کے مطابق اس نے کئی لوگوں کو انکے اہل خانہ کو مطلع کرنے کی اپیل بھی کی۔ احوال نامہ میں درج کیا گیا ہے کہ بعد میں پولیس سے اس سلسلے میں اگر چہ رجوع کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ عرفان کو فوج نے حراست میں لیا ہے تاہم گھر والے کیس کا تعاقب نہ کرسکیں کیونکہ عرفان کے والد اور ہمشیرہ کو ایک جنگجویانہ کیس میں پھنسایا گیا۔ نور باغ سرینگر کے شبیر احمد ڈار2005 میں لاپتہ ہوئے جبکہ اس سلسلے میں بشری حقوق میں ان کے گھر والوں نے جو بیان دیا اس کے مطابق وہ سالویشن مومنٹ کے دفتر پر میٹنگ کیلئے نکلے اور میٹنگ کے بعد انہیں کچھ میوہ فروشوں نے ایک سفید جپسی میں جبراً سوار کرتے ہوئے دیکھا جس کے بعد اسکا کوئی بھی پتہ نہیں چلا۔ شبیر احمد ڈار کی تصویر جولائی کے صفحہ میں شائع کی گئی ہے۔ اگست کے صفحہ پر ظہور احمد صوفی کی تصویر شائع کی گئی ہے،جبکہ ظور احمد کے بارے میں کہا گیا ہے کہ انہیں2000میں بٹہ مالو میں گرفتار کیا گیا اور جبری طور پر لاپتہ کیا گیا۔ستمبر میں خورشید احمد بٹ کا ذکر کیا گیا ہے ،ایس ایچ آر سی میں پیش کی گئی رپورٹ کے مطابق1990میں خورشید احمد کو سی آر پی ایف نے سوپور سے گرفتار کیا،اور اہل خانہ کی طرف سے فورسز کیمپوں کی خاک چھاننے کے بعد بھی اس کا کوئی بھی پتہ نہیں چلا۔ کپوارہ کے فتح محمد ڈار کو ان کے اہل خانہ کے مطابق سال2000میں فوج نے گھر سے گرفتار کیا اور ما بعد انکے بارے میں کوئی بھی اطلاع موصول نہیں ہوئی جبکہ اس سے قبل بھی فتح محمد کو گرفتار کیا گیا تھا اور وہ جموں کے کوٹ بلوال جیل میں بند تھا۔فتح محمد کو اکتوبر کے صفحہ پر جگہ دی گئی ہے۔نومبر کے صفحہ پر ساتویں جماعت کے طالب علم جاوید احمد متو کو جگہ دی گئی ہے جبکہ جاوید کو1993میں انہیں اپنے گھر پلوامہ سے سرحدی حفاظتی فورس نے گرفتار کیا جبکہ اس کا بھی کوئی پتہ نہیں چلا۔ سال کے آخری ماہ دسمبر میں منظور احمد وانی کی تصویر شائع کی گئی ہے،جبکہ منظور احمد کے بارے میں کہا گیا ہے کہ2001میں ترگہ پورہ بارہمولہ کیمپ میں بس سے نیچے اتارا گیا اور گرفتار کرکے بند کیا گیا ،تاہم بعد میں انکا کوئی بھی پتہ نہیں چلا۔

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2017 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By