GK Communications Pvt. Ltd
Edition :
  صفحہ اوّل
وقف بورڑ انتظامیہ کے خلاف تاجر مورچہ زن
کرایہ میں3ہزار گنا اضافے کا لگایا الزام،احتجاج کا الٹی میٹم

سرینگر// وقف بورڑ کی طرف سے کرایوں میں3ہزار گنا اضافہ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے تاجروں اور صنعت کاروں نے الٹی میٹم دیا کہ اگر اس فیصلے کو ایک ہفتے تک واپس نہیں لیا گیا تو جامع احتجاجی مہم شروع کی جائے گی۔انہوں نے کرایہ طے کرنے کیلئے ایک کمیٹی تشکیل دینے کا مطالبہ کیا جس میں تاجروں کے نمائندوں کو بھی شامل کرنے کا مشورہ دیاگیا۔کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز اور کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینو فیکچرس فیڈریشن نے وقف بورڈ انتظامیہ کے خلاف مورچہ کھولتے ہوئے الزام عائد کیا کہ یہ ادارہ رشوت خوری کے اڈہ میں تبدیل ہوا ہے۔سرینگر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینو فیکچرس فیڈریشن کے صدر محمد یاسین خان نے کہا کہ مسلسل حکومتوں نے اس ملی ادارے کو تباہ کیا اور اپنے ورکروں،رشتہ داروں اور اقرباءکیلئے باز آبادکاری مرکز میں تبدیل کیا۔انہوں نے وقف بورڈ انتظامیہ پر بیک وقت کرایوں میں 3ہزارگنااضافہ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ نہ ہی اس فیصلے میں تاجروں کیلئے کوئی انصاف ہے اور نہ یہ منطق ہے۔محمد یاسین خان نے لالچوک کے ایک معروف ہوٹل کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ1965میں اس ہوٹل کا کرایہ سالانہ12ہزار روپے طے ہوا جس میںبعد میں وقت کے ساتھ اضافہ کیا گیا،اور اس کا کرایہ فی الوقت30ہزار روپے ماہانہ ہے،مگر یہ کیا منطق ہے کہ اچانک اس ہوٹل کا کرایہ8لاکھ روپے ماہانہ یکمشت کیا جائے۔محمد یاسین خان نے کہا کہ عالمی سطح پر ہر3سال بعد10سے 15فیصد کرایوں میں اضافہ ہوتا ہے اور اس میں تاجروں کو کوئی بھی حرج نہیں ہے،تاہم سیلاب،کرفیو اور احتجاجی لہر سے پہلے ہی تاجروں کو کافی نقصانات کا سامنا کرنا پڑا۔کے ٹی ایم ایف کے چیئرمین نے مطالبہ کیا کہ ایک کمیٹی کو تشکیل دیا جائے جو تمام بازاروں کا معائنہ کر کے فیس طے کرے اور اس دوران اس بات کا بھی ملحوظ نظر رکھا جائے کہ ان بازاروں میں فی الوقت دوسرے کرایہ دار نجی کمپلیکسوں کے مالکاں کو کتنا کرایہ ادا کرتے ہیں۔اس موقعہ پرکشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریزکے مشاق احمد وانی نے کہا کہ ہم کرایہ میں اضافہ کے خلاف قطعی نہیں ہیںتاہم یہ معقول ہونا چاہے۔انہوں نے وقف بورڑ کے وایس چیئرمین کو ہٹانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اس ملی ادارے کی کمان غیر سیاسی ایماندار شخص کو سونپی جائے۔کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کے صدر نے وقف بورر سے متعلق ”وائٹ پیپر“ اجرا کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ان تفصیلات کو منظر عام پر لایا جانا چاہے کہ وقف بورڑ کی آمدنی اور اخرجات کتنے ہیں۔ صنعت کاروں اور تاجروں نے واضح کیا کہ وہ وقف بورڑ کے وائس چیئرمین سے قطعی طور پر نہیں ملیںگے بلکہ اس سلسلے میں حج اور اوقاف کے وزیر کو سامنے آنا چاہے تاکہ اس معاملے کو سلجھایا جاسکے۔

 

یہ صفحہ ای میل کیجئے پرنٹ کریں












سابقہ شمارے
  DD     MM     YY    


 


© 2003-2017 KashmirUzma.net
طابع وناشر:رشید مخدومی  |  برائے جی کے کمیونی کیشنزپرائیوٹ لمیٹڈ  |  ایڈیٹر :فیاض احمد کلو
ایگزیکٹو ایڈیٹر:جاوید آذر  | مقام اشاعت : 6 پرتاپ پارک ریذیڈنسی روڑسرینگرکشمیر
RSS Feed

GK Communications Pvt. Ltd
Designed Developed and Maintaned By