تازہ ترین

میعاری ضابطہ کار پر عمل آوری ؟

 ریاستی گورنر کی طرف سے سیکورٹی ایجنسیوں پر کاروائی کے دوران معیاری ضابطہ کار(SOP) پر عملدرآمد کرنے کی یاد دہانی کراتےہوئے شہریوں کو کسی قسم کے جانی ومالی نقصان سے محفوظ رکھنے کی تلقین کرنے سے اس بات کا انداز ہ لگانا مشکل نہیں کہ انتظامی سطح پر بھی یہ احساس اُجاگرہو رہا ہے کہ موجودہ حالات میں فورسز کی طرف سے کاروائیوں کے دوران اُن اصولوں پر عمل نہیں ہو رہا ہے، جو ایسے حالات کےلئے ایک ضابطے کی حیثیت رکھتے ہیںاور جسکے وہ پابند ہیں۔ یہ اظہار گزشتہ دنوں کولگام میں تین شہری ہلاکتوں کے بعد ایک اجلاس میں کیا گیا جس میں شمالی کمان کے سربراہ کوبھی بلایا گیا تھا۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ مختلف سیاسی طبقوں اور عوامی حلقوں کی جانب سے کافی عرصہ سے یہ باور کرانے کی تواتر کے ساتھ کوشش کی جارہی ہے کہ عسکریت مخالف کاروائیوں کے دوران معیاری ضابطہ کار کا کوئی خیال نہیں رکھا جاتا ، جس کی وجہ سے بار بار