تازہ ترین

ایران کے ساتھ تجارتی تعلقات: امریکا نے دنیا کو خبردار کردیا

تہران// امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران کے ساتھ کاروبار کرنے پر دنیا بھر کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے ایران پر سب سے زیادہ سخت پابندیاں لگائی ہیں۔ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے امریکی صدر نے کہا کہ ’ ایران پر پابندیوں کا باضابطہ آغاز ہوگیا ہے، یہ اب تک کی سب سے سخت پابندیاں ہیں اور نومبر میں یہ دوسری سطح تک پہنچ جائیں گی‘۔خیال رہے کہ گزشتہ روز امریکا کی جانب سے ایران پر دوبارہ معاشی پابندیاں عائد کردی گئیں تھیں، جس کے بعد تہران میں غصے اور خوف کا ملا جلا ردعمل سامنے آیا تھا۔ان پابندیوں کے چند گھنٹے بعد جرمن کارمیکر دیاملر کا کہنا تھا کہ انہوں نے ایران کے ساتھ اپنی کاروباری سرگرمیاں روک دی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ’ جو ایران کے ساتھ کاروبارہ کرے گا وہ امریکا کے ساتھ اپنا کاروبار جاری نہیں رکھ سکے گا، میں دنیا سے سوائے

امریکہ کا چین کی 279 مصنوعات پر 25 فیصد درآمدات چارج وصول کرنے کا فیصلہ

واشنگٹن//امریکہ چین کی 279 مصنوعات پر 23 اگست سے 25 فیصد کی شرح سے درآمدات فیس وصول کرے گا. اس طرح سے اسے 16 ارب ڈالر کی آمدنی ہوگی۔امریکی کامرس ڈپارٹمنٹ نے منگل کو اس بارے میں آخری فہرست شائع کی۔ کامرس ڈپارٹمنٹ نے بتایا کہ اس کارروائی سے چین کے درمیانے درجہ کے برآمدات متاثر ہوں گے ۔ ان میں سے کئی اپنے چپس کی پیداوار امریکہ، تائیوان اور جنوبی کوریا میں کرتے ہیں۔ کامرس ڈپارٹمنٹ کے مطابق جن سامانوں پر 25 فیصد درآمدات فیس لگائی گئی ہے ان میں بڑے پیمانے پر الیکٹرانک اشیاء، پلاسٹک اشیاء، کیمیائی گڈز اور ریلوے کے اوزار شامل ہیں۔ قابل ذکر ہے کہ چینی مصنوعات پر گذشتہ ماہ 34 ارب ڈالر کے درآمد ات کی فیس لگانے کے بعد امریکہ کی چین پر تجارتی مراعات پر مذاکرات کے لئے دباؤ ڈالنے کی یہ تازہ ترین کارروائی ہے ۔یو این آئی    

ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم پر فرد جرم عائد

کوالالمپور// ملائیشیائی عدالت کی جانب سے منی لانڈرنگ کیس میں ملائیشیا کے سابق وزیر اعظم نجیب رزاق پر آج فرد جرم عائد کی جائے گی۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ کئی عرصے سے سابق ملائیشیائی وزیر اعظم نجیب رزاق کے خلاف منی لانڈرنگ کیس سے متعلق تحیقات جاری تھیں، جبکہ آج ان پر ملائیشیا کی عدالت فرد جرم عائد کرے گی۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ملائیشیائی اینٹی کرپشن کمیشن گزشتہ کچھ عرصے سے سابق وزیراعظم نجیب رزاق سے بدعنوانی کے مختلف معاملات کی تفتیش جاری رکھے ہوئے تھے۔گزشتہ ماہ انتخابات میں شکست کے بعد نجیب رزاق کو حراست میں بھی لیا گیا تھا، اْن پر اختیارات کے ناجائز استعمال اور اعتماد شکنی کے فوجداری الزامات عائد کیے گئے تھے۔خیال رہے کہ مہاتیر محمد نے منصبِ وزارت عظمیٰ سنبھالتے ہی نجیب رزاق کے خلاف مبینہ کرپشن کے الزامات کی تفتیش کرانے کا حکم جاری کیا تھا۔اس دوران اْن کی رہائش گاہ کے علاوہ مخ

صنفی تفریق کو للکارتی مصر کی خواتین بائیکرز

قاہرہ// دنیا بھر میں جہاں خواتین ہر شعبہ میں آگے بڑھ رہی ہیں اور مردوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہیں وہاں خواتین کی حدود کے حوالے سے بحثوں میں بھی شدت آرہی ہے۔کچھ مخصوص ذہنیت کے حامل گروہ خواتین کی ترقی سے خوفزدہ ہو کر اس یقین کے پیروکار ہیں کہ خواتین کو صرف گھر میں رہنا چاہیئے۔ یا اگر وہ باہر نکلتی ہیں تو صرف کچھ مخصوص کام ہی ایسے ہیں جو خواتین کو انجام دینے چاہئیں۔کچھ مغربی ممالک میں اس بات پر بھی بحث جاری ہے کہ کام کرنے والی خواتین کی تنخواہیں اتنی ہی ہونی چاہئیں جتنی مردوں کی ہیں۔ یہ امر بھی زیر بحث ہے کہ مختلف اداروں میں فیصلہ سازی کے عمل میں خواتین کو شامل کیوں نہیں کیا جاتا۔ہالی وڈ اداکارہ ایما واٹسن اسی سلسے میں ایک مہم ’ہی فار شی‘ کا آغاز کر چکی ہیں۔ ان کا ماننا ہے کہ خواتین کی خود مختاری میں مرد سب سے بڑا کردار ادا کر سکتے ہیں۔ ایک باپ اپنی بیٹی، ایک شوہر اپنی بیوی او