تازہ ترین

ہفتہ حقوق انسانی

سچکو احتجاجی ریلی برآمد ہوگی:چیمبرآف کامرس سرینگر//ہڑتال کا متبادل تلاش کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے ’ کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز‘ نے کہا ہے کہ اقتصادی طور پر کشمیر کو اِس وقت سنگین بحرانی صورتحال کا سامنا ہے جبکہ تجارت کیلئے پر امن اور ساز گار ماحول ناگزیر ہے ۔ ’دی کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز‘ کے صدر دفتر واقع ریذیڈنسی روڑ پر ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیمبر کے نائب صدر ڈاکٹر عبدالمجید میر نے کشمیر وادی میں موجودہ صورتحال اور انسانی حقوق کی مبینہ پامالیاں قابل تشویش ہے  اور مبینہ انسانی حقوق کی پامالیوں کے خلاف8دسمبر کو’’ چیمبر ‘‘کی جانب سے ایک احتجاجی ریلی نکالی جائیگی۔ان کا کہناتھا کہ اس وقت ایک طرف کشمیر کو اقتصادی طور پر بحرانی صورتحال کا سامنا ہے جبکہ دوسری جانب کشیدہ صورتحال ،انسانی حقوق کی پام

کمسنوں کیلئے رائج قوانین پر عمل کرنے کی ضرورت :ایس پی پانی

سرینگر//صوبائی پولیس سربراہ  ایس پی پانی نے کہا ہے کہ انصاف برائے اطفال کے حوالے سے جو قانون رائج ہے اُس من وعن عمل کرنے کی اشد ضرورت ہے۔جمعرات کو یہاں پولیس ہیڈ کوراٹر سرینگر میں جموں وکشمیر پولیس نے ورلڈ ویژن نامی غیر سرکاری تنظیم کے اشتراک سے یک روزہ انصاف برائے اطفال پروگرام میں افتتاحی خطبہ کے دوران انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ سماج کے مختلف مکتب ہائے فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کو بچوں کے حقوق کے بارے میں جانکاری فراہم کی جائے۔ انہوںنے مزید کہا کہ انصاف برائے اطفال کے حوالے سے جو قانون رائج ہے اُس من وعن عمل کرنے کی اشد ضرورت ہے تاکہ اس بہترین قانون سے بچوں کو انصاف فراہم ہو سکے ۔ آئی جی کشمیر کے مطابق سماج کو جن نئے چیلنجز کا سامنا ہے اُن سے نپٹنے کیلئے ہمیں بھی احسن اقدامات اُٹھانے ہونگے۔ ورلڈویژن سے وابستہ سینئر ڈاکٹر انجنا نے ایک مختصر سی دستاویزی فلم کے ذریعے

’مجھے میری صلاحیتوں سے پہچانو‘

مساوی حقوق کی فراہمی پر زور،ترقیاتی کمشنر کی ہرممکن مدد کی یقین دہانی سرینگر//محکمہ اطلاعات وتعلقات عامہ نے جسمانی طور خاص افراد کے لئے کل میڈیا کمپلیکس سرینگر میں ایک روزہ ثقافتی وتمدنی پروگرام کا انعقاد کیا۔پروگرام کا موضوع تھا ’مجھے میری صلاحیتوں سے پہچانو‘‘ جس کا مقصد اُن حیات کو یاد کرنا تھا جو کہ مختلف جسمانی معذوری میںمبتلا ہیں لیکن جدوجہد اور خدمات میں مصروف ہیں۔یہ تقریب دو حصوں سیمنار اورثقافتی پروگرام پر مشتمل تھی جس دوران مقررین اور فنکاروں نے ناخیز افراد کی خدمات اور انہیں مساوی مواقع فراہم کرنے کی ضرورت پر روشنی ڈالی۔پروگرام میں وادی کشمیر کے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے جسمانی طور خاص افراد کے علاوہ ڈی آئی پی آر کے کلچرل یونٹ کے فنکاروں نے بھی شرکت کی۔اس موقعہ پر مقررین نے جسمانی طور خاص افراد کو مساوی حقوق دینے کی ضرورت پر زوریا۔ضلع ترقیاتی کمشن

مادرمہربان یتیم خانہ بمنہ میں حسن قرآت اور نعت خوانی کا مقابلہ

سرینگر//مادر مہربان یتیم خانہ (کامن کاز کلب) واقع بمنہ میں طلبہ و طالبات کے درمیان مقابلہ حسن قرآت اور نعت خوانی منعقد ہوا۔ تقریب کی صدارت ادارے کے چیئرمین اور نیشنل کانفرنس جنرل سکریٹری علی محمد ساگر نے کی جبکہ تقریب میں عالم الدین مولانا محمد نورانی نقشبندی، سید محمد شفیع قریشی اور مفتی بشیر الدین (کپوارہ) اور صحافی رشید راہل بھی موجود تھے۔قرآت کے مقابلے میں اول، دوم ، سوم پوزیشنیں حاصل کرنے والوں کو بالترتیب 7000، 4000اور 3000روپے کے نقد انعامات دیئے گئے جبکہ چوتھی پوزیشن پر10طلباء کو ایک ایک ہزار روپے دئے گئے۔نعت خوانی میں اول، دوم اور سوم پوزیشن حاصل کرنے والوں کو بالترتیب7000، 4000اور 3000روپے نقد انعام دیا گیا۔  

منظور شدہ ڈگری کالج کی منتقلی کا معاملہ

سرینگر// شوپیاں کے وچی علاقہ کے لوگوں نے علاقے میں ڈگری کالج قائم کرنے کے مطالبے کو لیکر جمعرات کو پریس کالونی میں احتجاج کیا اورکالج کیلئے مفت اراضی فراہم کرنے کا اعلان کیا۔احتجاجیوں نے سابق ممبر اسمبلی پر الزام عائد کیا کہ انہوں نے وچی کیلئے منظور شدہ ڈگری کالج کو ریشی پورہ منتقل کیا۔وچی حلقہ کے در باغ،چک،صفا نگری،اگلر،نائنہ،کاونی اور بنڈینہ علاقوں سے تعلق رکھنے والے احتجاجی مظاہرین نے نعرہ بازی کرتے ہوئے کہا’سرکار نے زینہ پورہ میں ڈگری کالج قائم کرنے کا منصوبہ بنایا تھاتاہم اراضی کی عدم دستیابی کی وجہ سے اس کو سرد خانے میں ڈال دیا گیااور ہم سرکار کو85 اراضی کی مفت پیشکش کرتے ہیں‘۔مظاہرین نے متعلقہ ممبر اسمبلی اور ضلع ترقیاتی کمشنر پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اعلیٰ حکام کے پاس دستاویزات پیش کرنے کی بھی اجازت نہیں دی۔ انہوں نے کہا کہ تمام ضوابط پورا کرنے کے باو

مزید خبرں

 دلال اور محکمہ مال کے ملازم کے خلاف کارروائی راولپورہ میں اراضی کا قطعہ 2افراد کو فروخت کرنے کا شاخسانہ سرینگر//کرائم برانچ نے محکمہ مال کے ملازم اور اراضی دلال کو معصوم شہریوں کو دھوکہ دینے کی پاداش میں کاروائی عمل میں لانے کا دعویٰ کیا ہے۔کرائم برانچ کا کہنا ہے کہ ہمایوں اشرف لون کی طرف سے شکایت موصول ہوئی جس میں کہا گیا  تھا کہ انہوں نے روال پورہ میں ایک کنال اراضی کا قطعہ اراضی دلال نذیر احمد ڈار کی وساطت سے فاروق احمد صوفی سے2007میں خریدااور اس سلسلے میں11اپریل2007کو سب راجسٹرار بڈگام کی عدالت میں طرفین میں بیعہ نامہ بھی بنایا۔شکایت میں مزید کہا گیا کہ الطاف احمد چودھری اس بات کا دعویٰ کر رہا ہے کہ انہوں نے اسی دلال سے سال2008میں یہ قطعہ اراضی خریدا ہے۔ کرائم برانچ کے مطابق اس سلسلے میں ابتدائی تحقیقات کی گئی،جس کے دوران یہ معلوم ہوا کہ اراضی دلال نذیر احمد ڈار