منشیات کی وبا کیلئے انسدادی تدابیر اور مسلم خواتین کو درپیش مسائل

سرینگر//متحدہ مجلس علماء کے سرکردہ علمائے کرام ، مفتیان عظام ، انسداد منشیات پر کام کررہے ماہرین، ڈاکٹرس ، کئی غیر سرکاری تنظیموں این ائو جیز سے وابستہ افراد کا ایک غیر معمولی اجلاس تاریخی میرواعظ منزل راجوری کدل سرینگر پر منعقد ہوا۔ یہ اجلاس جموںوکشمیر میں منشیات کی بڑھتی ہوئی وبا کے انسداد تدابیر اور مسلم خواتین کو درپیش کئی سنگین نوعیت کے مسائل جن میں ان کو حق وراثت سے محروم رکھنا، گھریلو تشدد(Domestic Voilence)کا شکار بنانے جیسے معاملات کے تناظر میں طلب کیا گیا تھا۔اپنے افتتاحی خطاب میں میرواعظ نے کشمیر میں منشیات کی بڑھتی ہوئی لعنت خاص طور پر نوجوان نسل کا اس میں بری طرح سے ملوث ہو جانے پر گہری فکر و تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اب ہاتھ پر ہاتھ دھرے رہنے کا وقت نہیں رہابلکہ من حیث القوم یہ ہم سب کیلئے ایک Challenging  Situationہے اور اس کے سد باب کیلئے ہم کو اجتماعی طور پر

اے پی ڈی پی کا خاموش احتجاج | لاپتہ افراد کی بازیابی کا مطالبہ دہرایا

سرینگر//وادی کشمیر میں انیس سو نوے کی دہائی میں شروع ہوئی مسلح شورش کے دوران مبینہ طور پر فورسز کے ہاتھوں لاپتہ ہوئے افراد کی بازیابی کے لئے محو جدوجہد تنظیم ایسوسی ایشن آف پیرنٹس آف ڈس اپیئرڈ پرسنز (اے پی ڈی پی) کی طرف سے بدھ کویہاں پرتاب پارک میں ماہانہ احتجاجی دھرنے کا اہتمام ہوا۔احتجاجی دھرنے میں درجنوں مرد وخواتین جن میں بیشتر عمر رسیدہ تھے، اپنے لخت ہائے جگر کی تصویریں اور پلے کارڈس ہاتھوں میں اٹھارکھے تھے اور ان کے مایوس چہروں پر لاچاری اور بے بسی کی چادر ان کی اندورنی کربناک کیفیت بیان کررہی تھی۔اس موقع پر اے پی ڈی پی کی چیئرپرسن پروینہ آہنگر نے میڈیا کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم یہ احتجاج گزشتہ تیس برسوں سے کررہے ہیں اور ہم خاموش نہیں بیٹھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ عدالت میں بھی ہمیں انصاف نہیں ملتا ہے۔کشمیر میں انسانی حقوق کی مبینہ پامالیوں کے حوالے سے اقوام متحدہ کی طرف سے

سرجان برکاتی کی رہائی کامطالبہ | اہلخانہ کا پریس کالونی میں احتجاج

 سرینگر//سال2016کی عوامی احتجاجی تحریک کے دورا ن گرفتار کئے گئے سرجان برکاتی کے اہلخانہ نے بدھ کوپریس کالونی میں احتجاج کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ دو روز قبل ان کی اہلیہ کے ساتھ پیش آ ئے واقعہ کے بعد افراد خانہ کوعدم تحفظ لاحق ہو گیا ہے۔ سرجان برکاتی کے اہلخانہ جن  میں اسکی11 سالہ بیٹی اور  8سالہ بیٹا  بھی شامل تھے ،نے برکاتی کی رہائی کا مطالبہ کیا۔برکاتی کی دس سالہ بچی صغرہ برکاتی نے کہا ’’میرے والد کے بغیر گھر میں اور کوئی بھی مرد نہیں ہے جو اْن کی کفالت کر سکے ،ہم بہن بھائی بھی دوسرے بچیوں کے ساتھ تعلیم حاصل کرناچاہتے ہیں لیکن جب ماں والد کی رہائی کیلئے عدالتوں کے چکر کاٹے اور والد جیل میں ہو تو اْن کی تعلیم کیسے ممکن بن سکتی ہے۔انہوںنے دو روز قبل گھر میں پیش آ ئے واقعہ کی تفصیل میڈ یا کو بتا تے ہوئے کہاکہ7 جولائی کو ہماری والد دودھ لانے کیلئے گھر

روسی لوک کتھائوں کے کشمیر ی ترجمہ ’’ پو￿ز تہ￿ اپُز‘‘ کی رسم اجرائی

سر ی نگر//جموںوکشمیر کلچرل کونسل نے محکمہ اطلاعات کے اشتراک سے کل یہاں نظامت اطلاعات کے آڈیٹوریم میں روسی تحریروں کے کشمیری ترجمے پر مشتمل ایک کتاب کی رسم رونمائی انجام دی۔ترجمہ نگار مہاراج کرشن ماوا مسرور ؔؔ کی تصنیف ’’ پو￿ز تہ￿ اپُز‘‘ روسی لوک اور جدید کہانیوں کے ترجمے پر مشتمل ہے ۔تقریب کے مہمان خصوصی ناظم اطلاعات گلزار احمد شبنم نے ماواکو اُن کی کتاب کی رسم اجرائی پر مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ ٹالسٹائی کی تحریروں کا کشمیری ترجمہ ماوا کے لئے عزت افزائی کا باعث ہے ۔اُنہوں نے مزید کہا کہ اپنی زبان اور تہذیب کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے جذبے کا ہونا لازمی ہے اور اس بات کو نئی نسل میں منتقل کیا جانا چاہیئے۔گلزار احمد شبنم نے کہا کہ کسی اور کے ادب کا کشمیری میں ترجمہ ادب کے لئے ایک قابل قدر اضافہ ہے۔اُنہوں نے کہا کہ ترجمہ نگاری سے مختلف لسانی قوموں کے مابین خلیج کو

مزید خبریں

حضرت میر سید محمد ہمدانی ؒکا عرس مبارک،خانقاہِ معلی میں مجلس آراستہ سرینگر//666واں عرس مبارک (یوم ولادت) حضرت میر سید محمد ہمدانیؒ (فرزند حضرت بانی اسلام کشمیرحضرت شاہ ہمدانؒ) کا عرس مبارک برصغیر، وسط ایشیا اور پوری ریاست میں عقیدت واحترام کے ساتھ منایا گیا۔ اِس سلسلے میں ریاست کے خانقاہوںمیں خصوصی تقریبات کا انعقاد ہوا۔ سب سے بڑی تقریب خانقاہ معلی میں منعقد ہوئی ۔نماز ظہر سے قبل جمعیت ہمدانیہ کے سربراہ مولانا ریاض احمد ہمدانی نے حضرت میر سید محمد ہمدانیؒ کے تاریخ اسلامی خدمات ، علمی اور روحانی کمالات پر روشنی ڈالی گئی۔ حضرت میر محمد ہمدانیؒ نے ریاست کے تینوں خطوں میں 110مساجد بشمول تاریخی خانقاہیں تعمیر کئے اور تبلیغ دین اسلام اور ریاست کی صنعت وحرفت کو فروغ دینے میں جو ملی اور تاریخی رول ادا کیا وہ ہمارے لئے مشعل راہ ہے۔ حضرت میر سید محمد ہمدانیؒ نے 22سال تک خطہ کشمیر میں قیام ک

محکمہ بجلی کی نجکاری | پولیس نے ہڑتالی ملازمین کا احتجاج ناکام بنایا

سرینگر// محکمہ بجلی کی نجکاری اور دیگر مسائل کیخلاف غیر معینہ ہڑتال پر جانے والے بجلی ملازمین کیطرف سے احتجاج کو پولیس نے ناکام بنادیاجس کے دوران ایک ملازم زخمی ہوا۔محکمہ بجلی کی نجکاری کے منصوبہ کومحکمہ کی بقا اور وجود کیلے کھلا اور اعلاناً خطرہ قرار دیتے ہوئے الیکٹریکل ایمپلائز یونین کی کال پر ملازمین8 جولائی سے ہڑتال پر ہے۔ اس دوران ملازمین نے چیف انجینئرنگ آفس محکمہ بجلی کے صحن میں منگل کو احتجاج کرنے کی کوشش کی تاہم پولیس نے اس احتجاج کو ناکم بنا یا۔ ملازمین نے الزام عائد کیا کہ بسنت باغ سے ملازمین کی ایک بڑی تعداد چیف انجینئر دفتر آرہی تھی جس کے دوران پولیس کی کارروائی کے دوران جاوید احمد زخمی ہوا جبکہ ایک اور ملازم کو گرفتار کیا گیا۔اس موقعہ پر الیکٹریکل ایمپلائز یونین کے صدر محمد مقبول نجار نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ محکمے کو کمپنیوں میں تبدیل کرنے سے محکمہ کی اعتباریت کو شدی

۔6ہزار اساتذہ کی مستقلی | ٹیچرس ایسوسی ایشن نے خیر مقدم کیا

سرینگر// گورنر انتظامیہ کی طرف سے6ہزار اساتذہ کو مستقل کرنے کا خیر مقدم کرتے ہوئے ٹیچرس ایسو سی ایشن نے اس فیصلے کو تاریخی سنگ میل قرار دیاہے۔ایوان صحافت میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ٹیچرس ایسو سی ایشن نے انتظامی کونسل کی طرف سے اساتذہ کو مستقل کرنے کے فیصلے کی سراہنا کرتے ہوئے کہا کہ یہ اساتذہ کی دیرینہ مانگ تھی ۔جموں کشمیر ٹیچرس ایسو سی ایشن کے صدرشاہ فیاض نے سرو شکھشا ابھیان کے تحت تعینات اساتذہ کے مسائل کا ازالہ کرنے پر ریاستی گورنر ایس پی ملک اور انکے مشیروں کے علاوہ محکمہ تعلیم و صوبائی انتظامیہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ95فیصد مسائل کا ازالہ کیا گیاجو ایک تاریخی قدم ہے۔انہوں نے کہا کہ41ہزار اساتذہ کے مسائل حل ہونے سے9لاکھ کی آبادی مستفید ہوئی۔انہوں نے کلہم خواندگی مہم کے تحت تعینات اساتذہ کے مسائل کو شدید قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سے قبل مسلسل حکومتوں نے انہیں ناامید کی

شہر خاص میں بجلی اور پانی کی قلت | انتظامیہ شکایات کا ازالہ کرے: ساگر

سرینگر //نیشنل کانفرنس جنرل سیکریٹری علی محمد ساگر نے شہر خاص کے آرم مسجد، بابہ ڈیمب، خانیار، روزہ بل اور بنگلہ دیش سمیت درجنوں علاقوں کا دورہ کیا ۔ دورے کے دوران لوگوں نے ساگر کو مسائل اور مشکلات سے آگاہ کیا۔ لوگوں نے جگہ جگہ پر پینے کے صاف پانی کی شدید قلت، بجلی کی آنکھ مچولی، صحت و صفائی کا فقدان اور ضروریاتِ زندگی کی عدم فراہم سے متعلق شکایات کیں۔ ساگر نے لوگوں کے مسائل سنے اور موقعے پر متعلقہ حکام کے ساتھ رابطہ کرکے ان کا سدباب کرانے پر زوردیا۔ اس کے علاوہ لوگوں نے شکایت کی کہ پارکوں اور کمیونٹی ہالوں کی دیکھ ریکھ صحیح ڈھنگ سے نہیں کی جارہی ہے، جس سے اس عوامی سرمایہ کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ انہوںنے انتظامیہ پر زور دیا کہ لوگوں کو درپیش مشکلات دور کرنے کے لئے جنگی بنیادوں پر اقدامات کئے جائیں اور کمیونٹی ہالوں کے علاوہ پبلک پارکوں کی دیکھ ریکھ صحیح ڈھنگ سے کی جائے۔انہوں نے محکمہ بج

پریس کالونی میں کنٹریکچول لیکچراروں کا احتجاج

سرینگر// کنٹریکچول لکچراروں نے احتجاج کرتے ہوئے انکی ملازمت کو مستقل کرنیکا مطالبہ کرتے ہوئے ریاستی گورنر کو معاملے میں مداخلت کرنے کی اپیل کی ہے۔ پریس کالونی لالچوک میں 10+2 کنٹریکچول لکچرار جمع ہوئے اور اور نعرہ بازی کرنے لگے۔احتجاجی مظاہرین میں خواتین لکچرار بھی شامل تھیں۔مظاہرین نے مولانا آزاد روڑ کی طرف پیش قدمی کی اور پوریس کالونی پہنچے۔انہوں نے انتظامیہ سے اپیل کی کہ ان کے مطالبات کو گورنر تک پہنچائیا جائے تاکہ انکا ازالہ ہوسکے۔ مطاہرین کا کہنا تھا کہ وہ روز دور دراز علاقوں سے احتجاج کی غرض سے سرینگر پہنچتے ہیں تاہم انکے مطالبات کی طرف کوئی بھی دھیان نہیں دیاجاتا ۔انہوں نے کہا کہ انہیں یقین دہانی کرائی گئی تھی کہ لکچراروں کو7برسوں کے بعد مستقل کیا جائے گا،تاہم یہ صرف کاغذات تک محدود رہا،اور زمینی سطح پر کچھ دیکھنے کو نہیں ملا۔ انکا کہنا تھا کہ انہیں ایسا محسوس ہو رہا ہے کہ انہی

مزید خبریں

حضرت میر سید محمد ہمدانیؒ کا666واں عرس خانقاہ معلی میں آج تقریب ہوگی  سرینگر//حضرت میر سید محمد ہمدانیؒ (فرزند حضرت شاہ ہمدانؒ) کا 666واں عرس مبارک آج یعنی بدھوار کو 6ماہ ذی القدبمطابق 10جولائی کو منایا جارہاہے۔ اس سلسلے میں سرینگر کے تاریخی خانقاہِ معلی حضرت میر سید علی ہمدانیؒ میں خصوصی تقریب کا انعقاد ہوگا۔ نمازِ ظہر سے قبل میرواعظ کشمیر اور بقعہ عالیہ کے سرپرست اعلیٰ مولانا ریاض احمد ہمدانی حضرت میر محمد ہمدانی ؒ کے تاریخ ساز اسلامی خدمات، علمی اور روحانی کمالات پر وعظ فرمائیں گے۔ نمازِ کے بعد حسب قدیم ختمات المعظمات، دورد و ازکار اور اوراد خوانی کی مجلس آراستہ ہوگی جبکہ جمعہ کے حسب معمولات بھی انجام دیئے جائیں گے۔  تقریب کے سلسلے میں ریاست کے تمام خانقاہوں میں بھی مجالس کا انعقاد ہوگا۔خصوصاً خانقاہِ فیض پناہ ڈورو شاہ آباد، ترال، خانقاہِ اول وچی، سیر ہمدان، نو

تازہ ترین