تازہ ترین

بٹہ مالو میں پانی کی قلت اور سڑکوں کی حالت ناگفتہ بہہ

سرینگر//شہر سرینگر میں گزشتہ برسوں سے سڑکوں کی صرف لمبائی اور چوڑائی ناپی جارہی ہے اور اس حوالے سے سیاسی حلقوں کی طرف سے دل لبھانے والے باتیں سامنے لائی جارہی ہیں تاہم بعد میں ایسا کچھ نظر نہیں آتا ہے ۔شہر کے کئی علاقوں میں گزشتہ کئی برسوں سے سڑکوں کی معمولی مرمت تک نہیں کی گئی اور اسطرح سڑکوں کی تعمیر ومرمت کو بھی سیاسی کھیل بنادیا گیا ہے ۔بٹہ مالو سے ٹینکہ پورہ جانے والی سڑک کا ایک حصہ پچھلے کئی برسوں سے تجدید و مرمت کا انتظار کررہا ہے تاہم حکام کی نظروں سے اوجھل یہ سڑک نہ صرف پیدل چلنے والوں بلکہ نجی گاڑیوں میں سفر کرنے والے لوگوں کیلئے بھی پریشانی کا سبب بن گئی ہے۔لوگوں کا کہنا ہے کہ سڑکیں انتہائی خستہ ہو چْکی ہیں ،جس کے سبب سڑکوں پر گہرے کھڈے بن گئے ہیں اور تباہ حال سڑکوں کی وجہ سے عوامی حلقوں میں سخت ناراضگی پائی جارہی ہے۔بٹہ مالو سے ٹینگہ پورہ تک اہم سڑک کافی خستہ ہو چکی ہے ، س

نئے کالجوں کے قیام پر الطاف بخاری کا اظہار مسرت

سرینگر// سابق وزیر خزانہ سید محمد الطاف بخاری نے ریاست میں 50نئے ڈگری کالجوں کے قیام کے سرکاری اعلان کو سراہتے ہوئے زود یا ہے کہ سرکار کو چاہئے کہ اب ان کالجوں کیلئے سٹاف کی تعیناتی عمل میں لائی جائے۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ میں نئے ڈگری کالجوں کے کھولنے پر گورنر کا شکریہ ادا کرتا ہوں اور میری نے اولین مانگ ہے کہ ان کالجوں میں فیکلٹی اور دیگر سٹاف کی تعیناتی فوری طور عمل میں لائی جائے تاکہ ان کالجوں میں درس و تدریس شروع ہوسکے ۔انہوں نے کہا کہ کالجوں کیلئے عمارتوں کی تعمیر کے ساتھ ساتھ بنیادی ڈھانچے کو جنگی بنیادوں پر شروع کیا جانا چاہئے ۔بخاری نے مزید کہا کہ ان کالجوں کے لئے اراضی کی نشاندہی کے ساتھ ساتھ فی الحال انہیں کرایہ کی عمارتوں میں قائم کیا جانا چاہئے جوکہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ نئے کالجوں کے قیام سے نہ صرف یہاں تعلیمی نظام کو بڑھاوا ملے گا بلکہ اس سے بے ر

مولوی مشتاق احمد کی 15ویں برسی

سرینگر// عوامی مجلس عمل کے سرکردہ رہنما ،حریت پسند شخصیت اور میرواعظ خاندان کے رکن رکین شہید مسجد مولوی مشتاق احمد کی 15ویں برسی انتہائی عقیدت و احترام کے ساتھ منائی جارہی ہے ۔ اس سلسلے میں  میرواعظ منزل سرینگر میں مولوی مشتاق ، بانی تنظیم شہید ملت میرواعظ کشمیر مولوی محمد فاروق صاحب ؒ سمیت دیگر جملہ شہداء کے درجات کی بلندی کے لئے قرآن خوانی اور دعائیہ مجلس کا اہتمام کیا گیا۔قرآن خوانی کے فوراً بعد ایک خصوصی تقریب جس کی صدارت تنظیم کے قائمقام جنرل سیکریٹری جی این زکی نے کی ، میں شہید مسجد کو تنظیم اور تحریک کے تئیں موصوف کی بے لوث اور گراں قدر سیاسی خدمات کو تنظیم کے مرکزی زعما اور عہدیداروں نے شاندار الفاظ میں خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ مولوی مشتاق احمد ایک انتہائی پرخلوص شخصیت کے مالک، غریبوں کے ہمدرد اور تحریک حق خودارادیت کے ایک پر جوش علمبردار تھے جنہوں نے پوری زندگی ت

گورنر کے شکایتی سیل میں عوامی دربار

سری نگر//گورنر کے مشیر خورشید احمد گنائی نے کل گریوینس سیل چرچ لین سونہ وار میں ایک عوامی دربار کا انعقاد کیا۔لگ بھگ 16وفود نے مشیر موصوف سے ملاقات کی اور اُنہیں اپنے متعلقہ علاقوں سے متعلق مختلف مسائل اور مشکلات سے آگاہ کیا۔ کئی افرد بھی فرداً فرداً مشیر موصوف سے ملاقی ہوئے اور انہیں اپنے مسائل سے جانکاری دلائی۔ شالیمار علاقے سے آئے ہوئے ایک وفد نے علاقہ میں ایک ڈگری کالج کے قیام کا مطالبہ کیا۔سیزنل اساتذہ کے ایمپلائی ڈیلی گیشن نے مشیر موصوف سے ملاقات کی اور ان کی ملازمتوں کو باقاعدہ بنانے اور ماہانہ مشاہرے میں اضافہ کرنے کا مطالبہ کیا۔سپورٹس فیڈریشن مٹن نے اپنے علاقے میں کھیل کود کے بنیادی ڈھانچے کو ترقی دینے کا مطالبہ کیا۔بیروہ سے آئے ہوئے ایک وفد نے علاقے کو ہِل ڈسٹرکٹ کادرجہ دلانے ، پینے کے پانی ، سڑک ، تعلیم و طبی سہولیات سے متعلق مطالبات پیش کئے ۔سری گفوارہ اننت ناگ کے وفود ن

پارم پورہ سے لالچوک تک سپیشل بس سروس چالو کرنے کامطالبہ

سرینگر// شمالی کشمیر کے ہزاروں مسافروں نے بس اسٹینڈ پارم پورہ سے لالچوک تک ایس آ رٹی سی یا کوئی سپیشل بس سروس چالو کرنے کی مانگ کرتے ہو ئے اس بات پر تشویش ظا ہر کی کہ پارم پورہ سے چلنے والی سست رفتار میٹاڈار سروس سے سرکاری ملازمین ،تاجر،طالب علم اوریہاں تک علیل بیماربھی مقررہ وقت پراپنی اپنی منزلوں تک نہیں پہنچ پاتے ہیں اوراُنھیں سخت مشکلات وپریشانیوں سے دوچارہوناپڑتاہے۔بغرض ملازمت ،ذریعہ معاش اورتعلیم وغیرہ روزانہ سرینگرآنے والے شمالی کشمیرکے مسافروںکی وفد نے بتا یا کہ مختلف علاقوں سے آ نے کے بعد جب وہ نئے بس اڈہ پارم پورہ پہنچ جاتے ہیں تو وہاں ان کو روایتی سست رفتارمیٹا دار سروس میں سوار ہونا پڑ رہا ہے جو کم سے کم ایک گھنٹہ لاچوک تک پہنچنے میں دیتے ہیں۔ سست رفتاری سے چلنے والی ٹرانسپورٹ سروس کے نتیجے میں ’ سینکڑوںنجی ٹرانسپورٹروں اورہزاروں مسافروں بشمول علیل بیماروں کوسخت پر