پیر پنچال اور چناب خطے

جموں وکشمیر سٹیٹ روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن کی مدد سے ریاست میں ٹرانسپورٹ کے نظام کو بہتر بنانے کے دعوئوں کی قلعی کھل کر رہ گئی ہے اور خاص طور پر پہاڑی علاقوں میں یہ نظام بہتری کے بجائے مزید خرابیوں کا شکار ہوتاجارہاہے ۔یہ حقیقت اس حوالے سے حکام کی سنجیدگی پر بہت بڑا سوالیہ نشان ہے کہ ٹریفک حادثات کیلئے پُر خطر مانے جانے والے خطہ چناب اور خطہ پیرپنچال میں اس وقت صرف16ایس آر ٹی سی بسیں چل رہی ہیں جبکہ ان دونوں خطوں میں ایسی سینکڑوں گاڑیوں کی ضرورت ہے ۔قابل ذکر ہے کہ پیر پنچال اور چناب خطوں میں آئے روز ایک سے بڑھ کر ایک خطرناک سڑک حادثات رونماہوتے رہتے ہیں جن میں سے بیشتر کی وجہ صرف اور صرف ائورلوڈنگ ہوتی ہے ۔چونکہ ان پہاڑی خطوں کے عوام کو ٹرانسپورٹ کی بہتر سہولیات فراہم نہیں ہوتیں تو وہ مجبوراًپہلے سے ہی ائورلوڈ گاڑی میں سفر کرتے ہیں، جو ان کیلئے بعض اوقات وبال جان بن جاتاہے ۔سرکاری اعدا

تازہ ترین