تازہ ترین

بارہمولہ کے کئی علاقوں میں متعدد واٹر سپلائی اسکیمیں برسوں سے تشنہ تکمیل

  بارہمولہ//بارہمولہ کے کئی علاقوں میں سینکڑوں واٹر سپلائی اسکیمیں کئی دہائیوں سے تشنہ تکمیل ہیں،جبکہ کئی جگہوں پر فلٹریشن پلانٹ اور پائپیں خستہ حال ہوچکی ہیں جس کے نتیجے میں ضلع میں پینے کے صاف پانی کو لیکر ہر سو ہا ہا کار مچی ہوئی ہے  اور مقامی لوگوں کو پانی کی عدم دستیابی کو لیکر سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔بارہمولہ ،پٹن ،سوپور ،ٹنگمرگ ،رفیع آباد ،نارواو ،بونیار اور اوڑی کے سینکڑوں دیہات کے لوگوں نے بتایا کہ ان علاقوں میں و اٹر سپلائی اسکیموں کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہوپارہا ہے کیونکہ ان علاقوں میںکہیں  10 تو کہیں15 سال گذرجانے کے باوجود بھی اسکیموں کا کام مکمل نہیں ہوپایا ہے۔ مقامی لوگوں نے الزام لگا تے ہوئے کہاکہ محکمہ پی ایچ ای کے کچھ انجینئر وںکے ساتھ ساز باز کرکے ٹھیکیدار اپنی بلیں واگذار کرانے میں کامیاب ہوگئے ہیں،لیکن ان دیہات کے لوگ صاف پانی کے ا

ایڈوکیٹ جنرل کی گورنر سے ملاقات

 سرینگر//ریاست کے ایڈوکیٹ جنرل ڈی سی رینہ نے یہاں راج بھون میں گورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ ملاقات کی ۔ انہوں نے گورنر کو ہائی کورٹوں اور سُپریم کورٹ میں ریاست سے متعلق زیر التواء معاملات کی تازہ پیش رفت کے بارے میں گورنر کو جانکاری دی۔اس دوران لداخ بُدھشٹ ایسوسی ایشن زنسکار کے ایک وفد نے یہاں راج بھون میں گورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ ملاقات کی ۔ وفد کی قیادت سیوابک چوتسر کر رہے تھے جبکہ وفد میں سونم دورجے، چھیرنگ موتپ، چھیرنگ تُندپ کھنپوہ اور سونم ترینچوز بھی شامل تھے۔وفد نے گورنر کو بُدھشٹ گمپاؤں خاص کر زنسکار خطے کی گمپاؤں کو معقول پولیس تحفظ دینے،مقدس کتاب تریپکتاس کو رنبیر لائبریری جموں سے زنسکار لائبریری منتقل کرنے، فوٹانگ میں گمپا کی تعمیر کے لئے روائتی نرخوں پر کائر اور بُدل لکڑی فراہم کرنے، ایسوسی ایشن کے لئے جموں میں اقامت فراہم کرنے کی مانگ سمیت رنگدوم دیہات کے باشندوں کی

۔2دن کیلئے گھروں سے باہر نکالے گئے

 سرینگر//90کی دہائی میں اپنے آشیانوں سے بے گھر کئے گئے بور کیرن کے متاثرین 28برس بعد بھی بازآبادکاری او ر نقل مکانی کی اسناد سے محروم ہیں تاہم محکمہ باز آباد کاری نے ایک مرتبہ پھر پلو جھاڑتے ہوئے کہا کہ اُن کی فائل کو جانچ کیلئے سکریننگ کمیٹی کو بھیج دیا گیا ہے اور کمیٹی کی رپورٹ آنے کے بعد ہی اُس پر عمل کیا جائے گا ۔معلوم رہے کہ بور کیرن کے لوگوں کو ’’8دسمبر 1990کو فوج نے انہیں رات کو 12بجے یہ دلیل دے کر اپنے گھروں سے باہر نکالا کہ یہاں سیکورٹی صورتحال ٹھیک نہیں اور آپ کو 2دن کیلئے گھروں سے باہر جانا ہو گا‘۔تاہم دو دن کیلئے گھر سے بے گھر ہوئے افراد 28برس بعد بھی اپنے آشیانوں میں داخل نہیں ہو سکے ہیں۔لوگوں کا کہنا ہے کہ وہ پچھلے 28برسوں سے در در کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں۔انہوں نے ڈی سی آفس سے لیکر سیاسی لیڈران اور عہدیداران کے دروازے بھی کھٹکھٹائے ہیں

آپسی رقابت کاہلاکت خیز نتیجہ

  ٹنگمرگ// ٹنگمرگ میں چند روز قبل لاپتہ ہوئے نوجوان طالب علم کی لاش برآمد کی گئی ہے جبکہ پولیس کے مطابق اس معاملے میں مقتول نوجوان کے دو قریبی رشتہ داروں کو حراست میں لے لیا گیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق ٹنگمرگ سے 10 کلو میٹر دور کھی پورہ بالا میں 23 اگست کی شام کوپوسٹ گریجویشن کرنے والا 26 سالہ طالب علم معراج الدین تیلی ولد عبدالمجید تیلی گھر سے باہر نکلتے ہی اچانک لاپتہ ہوگیا اگرچہ لاپتہ ہونے کے ساتھ ہی اس کے لواحقین اور رشتہ داروں نے اسے ہر ممکن جگہ پر تلاش کیا تاہم جب مذکورہ بازیاب نہ ہوا تو لواحقین نے اس کی گمشدگی کی رپورٹ پولیس تھانہ ٹنگمرگ میں درج کرائی۔ پولیس نے اسکی تلاش شروع کرنے کے لیے کاروائی شروع کی جس دران پولیس نے شک کی بنیاد پر نصف درجن افراد کو حراست میں لے لیا ۔ذرائع کے مطابق پولیس کو اسوقت بڑی کامیابی حاصل ہوئی جب اس نے امتیاز احمد وانی ولد غلام محی الدین وانی ا

گاندربل میں آوارہ کتوں کی ہڑبونگ

  گاندربل//ضلع گاندربل میں آوارہ کتوں کی بھرمار سے مقامی آبادی میں خوف و ہراس پھیل گیاہے۔ گاندربل،کنگن،گنڈ، صفاپورہ ،تولہ مولہ، لار،شالہ بگ، ڑھندھنہ، واکورہ، سمیت دیگر علاقوں میں درجنوں آوارہ کتوں کی موجودگی سے مقامی آبادی کاجینا محال ہوا ہے جبکہ ضلع انتظامیہ،میونسپل کمیٹی آوارہ کتوں کے پکڑنے اور نس بندی کرنے میں ناکام ہوچکی ہے۔کنگن کے مقامی باشندوں کے مطابق ہر گلی ہر کوچے میں درجنوں کتے ڈیرا جمائے بیٹھے رہتے ہیں جس کے باعث بچوں،بزرگوں اور خواتین کو چلنے پھرنے میں کافی مشکلات اور دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔کنگن اور گاندربل کے ملحقہ علاقوں سے کتوں کے کاٹنے کی شکایات موصول ہورہی ہیں۔محکمہ صحت کے اعلی حکام کے مطابق رواں سال کے اپریل سے لیکر اگست تک پورے ضلع کے مختلف علاقوں سے آوارہ کتوں کے کاٹنے کے افراد لائے گئے ہیں جن کو ARV نامی انجیکشن لگانے پڑے جبکہ تین زخمی افراد کو

فاروق عبداللہ علیحدگی پسندوں کے طریقہ پر گامزن:بھاجپا

 جموں// پنچایتی وبلدیاتی انتخابات کے علاوہ پارلیمانی اور اسمبلی انتخابات سے بائیکاٹ کرنے سے متعلق این سی صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ کے بیان کی بی جے پی ریاستی اکائی نے مذمت کی ہے۔پارٹی ترجمان بریگیڈئر انیل گپتا نے کہاکہ سال 2014کے پارلیمانی انتخابات اور اسمبلی انتخابات میں شکست کے صدمہ سے باہر نہ نکل پانے کے بعد فاروق عبداللہ نے کھوئی ہوئی مقبولیت حاصل کرنے کے لئے علیحدگی پسندوں کا طریقہ اپنانا شروع کیا ہے۔انہوں نے کہاکہ لندن سے واپسی کے بعد فاروق عبداللہ کشمیرکے سیاسی منظر نامہ پر خود کو کنگ میکر کے طور ظاہر کرنے کے لئے ہر طرح کی چالیں چل رہے ہیں۔ انہوں نے نہ صرف مرکزی سرکار کو بلیک میل کرنا شروع کیا ہے بلکہ وہ فرقہ وارانہ اورعلیحدگی پسند کارڈ کھیلنے سے بھی نہیں ہچکچائے۔بی جے پی ترجمان نے کہاکہ فاروق عبداللہ نے اپنے والدکی برسی پر دیئے گئے بیان میں کھلے طور حریت اور علیحدگی پسند لیڈ

حق خودارادیت کے مطالبہ پر لوٹنے کیلئے این سی سے انجینئر رشید کی اپیل

 سرینگر//دفعہ35Aاور370سے متعلق نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبداللہ کے تازہ موقف کا خیر مقدم کرتے ہوئے عوامی اتحاد کے سربراہ انجینئر رشید نے نیشنل کانفرنس سے جموں کشمیر کے لوگوں کیلئے حق خود ارادیت کے اپنے اصل مطالبے پر واپس آنے کی اپیل کی ہے۔ ایک بیان میں انجینئر رشید نے کہا’’حقائق نے ثابت کیا ہے کہ 1975میں اندرا-عبداللہ ایکارڈ کے بعد تحریک رائے شماری کا ختم کیا جانا ایک ہمالیائی غلطی تھی اور اگر مرحوم شیخ عبداللہ نے استقامت دکھائی ہوتی تو حالات یکسر مختلف ہوتے‘‘۔انجینئر رشید نے مزید کہا کہ نیشنل کانفرنس کی جانب سے بلدیاتی اداروں، اسمبلی اور پارلیمنٹ کے انتخابات کے بائیکاٹ کا فیصلہ خوش آئیندہ تو ہے ہی البتہ ساتھ ہی یہ اپنے آپ میں اس بات کا اعتراف ہے کہ عوام کے بائیکاٹ کے باوجود 1996میں فوج کے بل پر کرائے گئے عام انتخابات میں نیشنل کانفرنس کی شرکت ایک بہت

حکیم الرحمان سلطانی کے پُراسرار قتل پر مزاحمتی جماعتوں کو تشویش

 سرینگر//حریت (گ) کے رکن حکیم الرحمان سلطانی کے نامعلوم بندوق برداروں کے بہیمانہ قتل کی مسلم کانفرنس کے ایک دھڑے، سالویشن مومنٹ، پیپلز لیگ، محاذ آزادی کے ایک دھڑے ، مسلم لیگ نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔ مسلم کانفرنس چیئرمین شبیر احمد ڈار ،تحریک استقلال چیئرمین غلام نبی وسیم،محمد رمضان اور شریف الدین شامل تھے ، بمئی سوپور گئے اورحکیم الرحمان کے لواحقین سے تعزیت پرسی کی۔ شبیر ڈار نے کہاکہ حکیم الرحمان اور آصف نذیر ڈار کو مارنا ظلم و ستم کی مثال ہے ۔ شبیر ڈار نے کہاکہ حکیم الرحمان ایک دینداراور پر خلوص حریت پسند تھے اور ان دونوں حریت پسندوں کا صرف ایک قصور تھا کہ یہ تحریک آزادی کے کاروان حق کا حصہ تھے ۔ادھر  پیپلز لیگ چیئر مین شیخ محمد یعقوب نے کہا کہ آ ج تک سینکڑوں حریت پسندوں کو نا معلوم بندوق برداروں کی آ ڑ میں مارا گیالیکن ان حربوں سے تحریک کو ہر گز دبا یا نہیں جاسکتا ہے ۔

قدغن کے باوجود جلوسِ عزا برآمد ہونگے: آغا حسن

 سرینگر/انجمن شرعی شیعیان کے دیہہ ، زونل اور ضلع صدور و سیکریٹری صاحبان اور دیگر معزز اراکین و عاملین کا خصوصی محرم اجلاس صدر دفتر پر تنظیم کے سربراہ آغا سید حسن کی صدارت میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں تنظیم کے اہتمام سے وادی کے اطراف و اکناف میں محرم الحرام کے دوران برآمد ہونے والے جلوس ہائے عزا اور مجالس حسینیؑ کے انتظامات کو تفصیلی مشاورت کے بعد حتمی شکل دی گئی۔ اراکین و عاملین نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ وہ محرم تقریبات کے تسلی بخش اور پُرامن انعقاد کو یقینی بنانے کیلئے اپنی تمام تر صلاحتیوں کو بروئے کار لاکر تنظیمی ذمہ داریوں کا بھر پور ثبوت پیش کریں گے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے آغا سید حسن نے ماہ محرم الحرام کو دین وشریعت کے تحفظ کیلئے احساس ذمہ داریوں کی تجدید کا مہینہ قرار دیتے ہوئے اراکین و عاملین سے تاکید کی کہ وہ محرم تقریبات کے دوران ہر سطح پر حدود شریعت اور احترام انسانیت ک

دفعہ35اے کے تحفظ کیلئے سول سوسائٹی پُرعزم

  کپوارہ//جمو ں و کشمیر سول سوسائٹی کارڈنیشن کمیٹی کی جانب سے اتوار کو کپوارہ کے ٹاون ہال میں دفعہ35Aکی تحفظ کے لئے ایک گول میز کانفرنس کا اہتمام کیا گیا جس میں سماج سے جڑے مختلف طبقوں کے نمائندو ں نے شرکت کر کے اس کی تحفظ کا عہد کیا ۔جموں و کشمیر سول سو سائٹی کی جانب سے نائب مفتی اعظم جمو ں و کشمیر مفتی ناصر الا سلام ،عوامی نیشنل کانفرنس کے مظفر شاہ ،سکھ کارڈی نیشن کے جگ موہن سنگھ رینہ ،مسلم پر سنل بورڈ کے منظور احمد کرمانی ،ایڈوکیٹ جاوید احمد میر ،ایڈوکیٹ طارق احمد لون ،ایڈوکیٹ خورشید احمد شاہ اور ایڈوکیٹ جی ایم شاہ ،ابن شہباز نے شرکت کی ۔ا س موقع پر مقررین نے کہا کہ جمو ں و کشمیر کی ایک الگ شناخت ہے ۔نائب مفتی اعظم جمو ں و کشمیر نا صر لااسلام نے کہا کہ جب تک نہ مسلہ کشمیر حل ہو گا 35Aکی ساتھ کسی بھی قسم کی چھیڑ خوانی کرنے نہیں دیں گے ۔انہو ں نے کہا ہندوستان کے ساتھ ہمارا ال

۔2مرکزی جلوسوں پر پابندی غیر اخلاقی: مولانا قمی

 سرینگر//پیروا ن ولایت کا ایک اجلاس محرم الحرام کے سلسلے میں صدر دفتر سرینگر میں منعقد ہوا جس میں جلوس عزاداری کے دو مرکزی جلوسوں پر جاری سرکاری پابندی کو غیر اخلاقی قرار دے کر امت مسلمہ سے اپیل کی کہ وہ ان جلوسوں میں شامل ہوکر ان جلوسوں کی برآمدگی کو یقینی بنائے۔اجلاس کی صدارت پیروان ولایت کے سربراہ مولا نا سبط محمد شبیر قمی نے کی جبکہ صدر مولانا شبیر احمد صوفی بھی موجود تھے ۔مولانا سبط محمد شبیر قمی نے محرم الحرام کے دو بڑے مرکزی جلوسوں پر پابندی کی پر زور الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے مداخلت فی الدین قرار دیا ۔ آخر پر مولانا شبیر احمد صوفی نے اس بات کو آگے بڑھاتے ہوئے مغربی میڈیا سے جو اس وقت مسلمانوں کے درمیان تفرقہ پھیلانے میں مصروف ہے سے ہوشیار رہنے کی تاکید کی۔  

قصبہ بارہمولہ میں پارکنگ کی عدم دستیابی

  بارہمولہ// بارہمولہ میں پارکنگ کی عدم دستیابی کی وجہ سے روزانہ بدترین قسم کے ٹریفک جام کے مناظر دیکھنے کو ملتے ہیں ،جس کی وجہ سے عام لوگوں ، تاجروںکے ساتھ ساتھ اسکولی بچوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے  ۔ قصبہ بارہمولہ کے مین چوک،سیمٹ پُل،جدید روڑ،آر اینڈ بی روڑ،نانک بھون نیشنل ہائی وئے کے علاوہ کئی علاقوں میں ٹریفک جام معمول بن گیا ہے او رٹریفک پولیس عملے کو ٹریفک جام پر قابو پانے میں شدید دقتوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ خاص کربس اسٹینڈ سے مین چوک تک سخت ترین ٹریفک جام ہوجاتاہے جبکہ تحصیل روڈ سے لیکر نانک بھوون تک سینکڑوں کی تعداد میں چھوٹی بڑی گاڑیوں کو گھنٹوں تک درماندہ رہنا پڑ تا ہے ۔ جوں ہی جنرل بس اسٹینڈ سے گاڑیاں نکلتی ہے تو اُسی وقت  بدترین ٹریفک رہتاہے ۔مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ پارکنگ نہ ہونے کی وجہ سے قصبے کی سڑکوں پراکثر بدترین

مزید خبریں

قاضی آباد ہندوارہ میں سڑک حادثہ، 24زخمی  اشرف چراغ    کپوارہ// قاضی آ باد کرالہ گنڈ میں ایک سڑک حادثہ کے دوران 24مسافر زخمی ہوگئے ہیں ۔معلوم ہو اہے کہ قاضی آ باد ہندوارہ علاقہ میں قاضی آ باد علاقہ کے ہندون پورہ علاقہ میں ایک ٹاٹا مسافر گاڑی جو کرالہ گنڈ کی طرف جارہی تھی ڈرائیور کے قابو سے باہر کر الٹ گئی جسمیں پیپلز ڈیمو کریٹک پارٹی کے بلاک صدر سمیت 24 مسافر زخمی ہوگئے ۔حادثہ کے بعد مقامی لوگو ں اور پولیس کی ٹیم جائے واردات پر پہنچ گئے اور میٹا ڈار سے مسافروں کو باہر نکال کر کرالہ گنڈ کے مقامی اسپتال میں علاج و معالجہ کے لئے دا خل کیا  ۔ڈاکٹرو ں نے زخمیو ں کا علاج و معالجہ کر کے انہیں اسپتال سے رخصت کیا اور کہا کہ زخمیو ں کی حالت مستحکم ہے اور سارے مسافر ٹھیک ہیں ۔     بینک کی حفاظت پر مامور پولیس اہلکار کی موت  سرینگر/