تازہ ترین

سرکٹ ہائوس قاضی گنڈ9سال سے تشنہ تکمیل

اننت ناگ// قاضی گنڈ میں زیر تعمیر سرکٹ ہائوس پر سست رفتاری سے کام جاری ہے ،جس کے سبب اس حوالے سے خدشات پیدا ہوگئے ہیں۔گیٹ وے آف کشمیر کہلانے والے قاضی گنڈ میں محکمہ تعمیرات عامہ نے 2010میں سرکٹ ہائوس پر کام شروع کیاتاہم 9سال گذرنے کے باوجود بھی کام مکمل نہیں ہوپایا ہے ۔ 5مئی 2010کو اُس وقت کے وزیر برائے تعمیرات غلام محمد سروری نے سرکٹ ہائوس کاسنگ بنیاد ڈالا،جس پر4.73کروڑ روپے خرچ آنے کا تخمینہ تھا ۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اُن سے وعدہ کیا گیا تھا کہ سرکٹ ہائوس پر کام قلیل وقت میں مکمل کیا جائے گا لیکن تاحال وہ وعدہ وفا نہ ہوا ۔ایگزیکٹیو انجینئربشارت احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ فنڈس کی عدم دستیابی کے سبب کام میں رکاوٹ پیدا ہوگئی اور اُمید ہے کہ اگلے چند روز تک رقم واگذار ہوگی جس کے بعد اُدھورے کام کو مکمل کیا جائے گا۔  

ٹنگڈارکے طلاب کا سیکورٹی اہلکاروں کے خلاف احتجاج

کپوارہ// چوکی بل کپوارہ کی نستہ چھن گلی پر اُس وقت طلبہ اور مقامی لوگو ں نے احتجاج کیا جب وہا ں تعینات فوجی اہلکاروں نے کالج پروفیسر کے ساتھ نا شائستہ سلوک کیا ۔معلوم ہوا ہے کہ گورنمنٹ ڈگری کالج ٹنگڈار کرناہ میں زیر تعلیم طلبہ ہفتہ کو سیر کیلئے جارہے تھے اور جب وہ نستہ چھن گلی پر پہنچ گئے تو فوج نے انہیں روک ان کی گاڑیوں کی تلاشی کی ۔طلبہ نے الزام لگایا کہ تلاشی کاروائی کے دوران فوجی اہلکارو ں نے کالج کے ایک پروفیسر سے بد کلامی کی جس کے بعد ان کے درمیان گرم گفتاری ہوئی ۔طلبہ نے بتایا کہ فوج نے پروفیسر موصوف کے ساتھ ناشائستہ سلوک کیا اور اس موقعہ پر سیر کیلئے جارہے طلبہ گاڑیوں سے نیچے اتر آئے اور فوج کے خلاف زور دار احتجاجی مظاہرے کئے ۔طلبہ کے احتجاج میں وہ مسافر بھی شامل ہوئے جوکپوارہ سے کرناہ اور کرناہ سے کپوارہ کی طرف جارہے تھے ۔احتجاج میں شامل لوگو ں کا کہنا تھا کہ نستہ چھن گلی پر

اننت ناگ کا ہتھیار بند نوجوان تصویر سوشل میڈیا پر وائرل

اننت ناگ// اننت ناگ کے لاپتہ ہوئے نوجوان کی ہتھیار سمیت تصویر سماجی رابطہ گاہوں پر وائرل ہوئی ہے۔مذکورہ نوجوان کی شناخت زاہد احمد کھانڈے ولد طارق احمد کھانڈے ساکنہ ہوگام سریگفوارہ اننت ناگ کے طور ہوئی ہے ۔تصویرکے مطابق نوجوان گریجویٹ ہے اور وہ 21جون سے گھر سے لاپتہ ہے۔گھر والوں نے گمشدگی کے حوالے سے پولیس میں رپورٹ درج کی تھی۔ پولیس زرائع کے مطابق سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تصویر کی جانچ کی جارہی ہے۔  

خاتون سرحد عبور کرنے میں کامیاب | اوڑی میں ایک ماہ قبل لاپتہ ہوئی تھی ،شوہر کی حکام سے مداخلت کی اپیل

اوڑی//سرحدی قصبہ اوڑی کے نامبلہ نامی گائوں کی 35 سالہ شاہینہ بیگم زوجہ لطیف احمد بٹ نے ایک ماہ قبل اوڑی کنٹرول لائن عبور کرکے رشتے داروں کے پاس اْس پارچلی گئی ہے۔شاہینہ کے شوہر نے حکام سے اہلیہ کو واپس لانے کی اپیل کی ہے۔ شاہینہ کے شوہر لطیف احمد بٹ کے مطابق شاہینہ 25 جون کو لاپتہ ہوئی اور جب شاہینہ کے شوہر اور رشتے دار اْس کی تلاش کرنے لگے تو اوڑی کنٹرول لائن پر واقع  صورہ نامی گائوں میں اے ڈی چوکی پر تعینات فوجیوں نے اْنہیں بتایا کہ شاہینہ یہاں سے یہ کہہ کر گائوں میں داخل ہوئی تھی کہ وہ اپنے ماموں بشیر احمد بٹ کے پاس جا رہی ہے مگر جب شوہر نے ماموں کے گھر پتہ کیا تو وہ وہاں نہیں تھی ۔لطیف نے مزید بتایا کہ انہوں نے پولیس سٹیش اوڑی میں بھی گمشدگی رپوٹ درج کروائی۔انہوںنے کہا کہ شاہینہ کے غائب ہونے کے تین دن بعد 27 جون کو شاہینہ کے پاکستانی زیر انتظام کشمیر میں رہنے والے رشتہ داروں ن

شیوناڈ کوکرناگ میں7بچوں کے والد کی لاش بر آمد

اننت ناگ//کوکرناگ میں 45سالہ شہری کی لاش بر آمد ہونے کے بعدلواحقین نے پولیس اسٹیشن کے سامنے واقع کے خلاف احتجاج کیا ۔45سالہ نظام الدین خان ولد تاج محمد خان ساکنہ چونٹ وارڈ پنزگام کوکرناگ کی لاش شیو ناڈ علاقے میں بر آمد کی گئی  ۔لاش پر تشدد کے واضح نشانات تھے ۔مہلوک 07بچوں کا والد تھا۔پولیس نے لاش کو تحویل میں لے کر قانونی لوازمات پورے کرنے کے بعدورثاء کے حوالے کیا ۔بی ایم او کوکرناگ ڈاکٹر عابد نے کشمیر عظمٰی کو بتایا کہ مہلوک کے سر پر کسی تیز دار والے اَوزار سے کئی بار وار کیا گیا ہے ،جس کے سبب سر پھٹ جانے سے کافی مقدار میں خون بہہ گیا تھا۔اُن کا کہنا تھا کہ  حقائق پوسٹ مارٹم رپورٹ موصول ہونے کے بعد ہی سامنے آئیں گے ۔اس بیچ مہلوک کے رشتہ داروں نے پولیس اسٹیشن کوکرناگ کے سامنے احتجاج کیا اور واقع میں ملوث افراد کو گرفتار کرنے کی مانگ کی ۔مہلوک کو دوپہر بعد آبائی گائوں میں

بجلی کرنٹ لگنے سے 1لقمہ اجل، 5زخمی

پاڈر//ضلع کشتواڑ سے 60 کلومیٹر دور تحصیل پاڈر میںہفتہ کو 2بجے کے قریب بجلی کرنٹ لگنے سے 1 شخص ہلاک جبکہ 5 دیگر شدید طور اس وقت زخمی ہوئے جب لوگ علاقے میں جھالڑ لگارہے تھے۔زخمیوں کو مزید علاج کیلئے ضلع ہسپتال کشتواڑ منتقل کیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق یہ حادثہ دوپہر 2 بجے کے قریب اس وقت  پیش آیا جب علاقے میں بودھ مذہب کے لوگ ان کے مذہبی لیڈر کی علاقے میں آمد کے سلسلے میںعلاقے کو سجانے کیلئے جھالڑ و مالائیں لگا رہے تھے کہ اچانک پائپ ایچ ٹی کی ترسیلی لائنوں کو چھوگئی جس کے سبب کرنٹ پھیل گیا۔اس حادثے میں ہیم راج ولد ہیرا لال ساکنہ کبن کی موقعہ پر ہی موت واقع ہوئی جبکہ پانچ دیگر افراد زخمی ہوئے جن کی شناخت پلما دورجے ولد تاشی ناروپ ، سونم ولد تارا چند ،نوانگ سونم ولد کدشن لال ،ٹینزن سرتپ ولد سجان سنگھ ،سونم تاشی ولد دولت رام ساکنہ کبن کے طور پر ہوئی ہے جنہیں علاج کیلئے کشتواڑ ہسپتال منتق

ڈاکٹر فاروق اورشاہ فیصل کی دربار عالیہ یونسیہ پر حاضری

کپوارہ// نیشنل کانفرنس صدرڈاکٹر فاروق عبداللہ اور جموں کشمیر پیپلز مومنٹ کے سربراہ ڈاکٹر شاہ فیصل نے آئورہ کپوارہ میں دربارِ عالیہ یونسیہ پر حاضری دی۔ڈاکٹر فاروق نے زیارت گاہ پر ملک و ملت کی عزت و آبرو، خوشحالی، ترقی اور امن و امان کیلئے خصوصی دعا کی گئی۔ بعد میں زائرین سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ جب تک مروجہ تعلیم کے ساتھ دینی اور اخلاقی تعلیم کا نظام رائج نہیں ہوگا تب تک روشن مستقبل ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ بچوں کو قرآن و حدیث کی تعلیم سے آراستہ کرنا والدین کی پہلی ذمہ دار ی ہے۔ کشمیر میں منشیات کی بڑھتی ہوئی وباء پرتشویش کا اظہار کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق نے والدین سے اپیل کی کہ وہ اپنے بچوں کی صحیح تعلیم و تربیت کریں۔انہوں نے علمائے کرام،ایمہ مساجد ،اساتذہ ، معزز شہریوں اور انتظامیہ سے اپیل کی کہ اس بڑھتی ہوئی بدعت کا قلع قمع کرنے کیلئے اپنا بھر پور رول نبھائیں۔ اس

مزید خبریں

 سابق وزیر،ممبران اسمبلی،انسپکٹر جنرل سی آر پی ایف ،سیاسی رہنماوتاجر گورنر سے ملاقی سرینگر//سابق وزراء،ممبران اسمبلی ،سیاسی رہنما، سی آر پی ایف انسپکٹر جنرل ، انسپکٹر جنرل آپریشنز اور تاجرانجمنوں کے نمائندے گورنر ستیہ پال ملک سے ملاقی ہوئے۔سابق وزیر حکیم محمد یٰسین نے یہاں راج بھون میںگورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ ملاقات کی۔ انہوں نے خانصاحب حلقہ کے ترقیاتی منظر نامے اور دیگر امور پر گورنر سے تبادلہ خیال کیا۔انہوں نے دودھ پتھری اور توسہ میدان میں سیاحتی گنجائشوں کے بارے میں گورنر سے تبادلہ خیال کرنے کے علاوہ ان مقامات کو اہم سیاحتی مراکز کے طور ترقی دینے سے متعلق اپنی آراء پیش کی۔گورنر نے موصوف کو عوامی بہبود کے لئے کام جاری رکھنے کی تلقین کی۔سابق ممبر اسمبلی پیرزادہ منصور حُسین نے بھی یہاں راج بھون میںگورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ ملاقات کی۔ انہوں نے شانگس حلقہ کے ترقیاتی امور

مزید خبریں

 سابق وزیر،ممبران اسمبلی،انسپکٹر جنرل سی آر پی ایف ،سیاسی رہنماوتاجر گورنر سے ملاقی سرینگر//سابق وزراء،ممبران اسمبلی ،سیاسی رہنما، سی آر پی ایف انسپکٹر جنرل ، انسپکٹر جنرل آپریشنز اور تاجرانجمنوں کے نمائندے گورنر ستیہ پال ملک سے ملاقی ہوئے۔سابق وزیر حکیم محمد یٰسین نے یہاں راج بھون میںگورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ ملاقات کی۔ انہوں نے خانصاحب حلقہ کے ترقیاتی منظر نامے اور دیگر امور پر گورنر سے تبادلہ خیال کیا۔انہوں نے دودھ پتھری اور توسہ میدان میں سیاحتی گنجائشوں کے بارے میں گورنر سے تبادلہ خیال کرنے کے علاوہ ان مقامات کو اہم سیاحتی مراکز کے طور ترقی دینے سے متعلق اپنی آراء پیش کی۔گورنر نے موصوف کو عوامی بہبود کے لئے کام جاری رکھنے کی تلقین کی۔سابق ممبر اسمبلی پیرزادہ منصور حُسین نے بھی یہاں راج بھون میںگورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ ملاقات کی۔ انہوں نے شانگس حلقہ کے ترقیاتی امور