خون سے مزیّن تحریک کی کامیابی کیلئے استقامت اور یکجہتی لازمی

سرینگر//حریت (گ)،حریت (ع)،لبریشن فرنٹ،مسلم لیگ، دختران ملت ،سالویشن مومنٹ اور اسلامی تنظیم آزادی نے معرکہ کولگام میں جاں بحق ہوئے جنگجوئوں کوخراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ کوئی دن ایسا نہیں گزرتا ہے جب کشمیری نوجوانوں کو بے دردی اور بے رحمی سے قتل نہ کیا جارہا ہو۔ حریت (گ)چیئرمین سید علی گیلانی نے معرکہ کولگام میں جاں بحق ہوئے 5جنگجوئوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ اپنے غصب شدہ حقوق کی بازیابی کی جنگ لڑنے والوں کو دہشت گرد قرار دے کر ریاست کے چپہ چپہ کو لالہ زار بنایا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ کوئی دن ایسا نہیں گزرتا جب جوانوں کو بڑی بے دردی اور بے رحمی سے قتل نہیں کیا جارہا ہو۔انہوں نے کہا کہ خونین تحریک ان بے مثال قربانیوں سے بہت ہی مقدس بن چکی ہے اورہم میں سے کوئی بھی دانستہ یا نادانستہ طور اس کو سبوتاژ کرنے کی معمولی سی لغزش کا بھی متحمل نہیں ہوسکتا۔ حریت رہنما نے کہا کہ بھا

مقبول بٹ اور افضل گورو کو برسیوں پر خراج عقیدت

سرینگر//حریت (گ)،لبریشن فرنٹ، تحریک حریت ، نیشنل فرنٹ،پیپلزپولٹیکل فرنٹ،تحریک استقلال اور جمعیت ہمدنیہ نے محمد مقبول بٹ اور محمد افضل گورو کو خراج عقیدت ادا کیا ہے ۔حریت (گ)چیئرمین سید علی گیلانی نے محمد افضل گورو کی برسی پر کرفیو جیسی پابندیاں عائد کرنے، آزادی پسندوں کے خلاف کریک ڈاؤن ، دعائیہ مجالس پر پابندی اور تحریک آزادی سے وابستہ درجنوں لیڈروں اور کارکنوں کو گھروں اور پولیس تھانوں میںنظربند کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ پابندیاں ہمارے سرفروشوں کی توہین کرنے کے مترادف کارروائی ہے اور حکومت اس طرح کی پالیسی پر عمل کرکے ایک بڑے طوفان کو دعوت دے رہی ہے۔لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نے کشمیریوں سے محمد مقبول بٹ کی برسی کے حوالے سے مشترکہ مزاحمتی قیادت کے پروگرام پر من و عن عمل کرتے ہوئے 11؍ فروری کو مکمل اور ہمہ گیر ہڑتال کرنے نیز مقبول بٹ اور محمد افضل گورو کی باقیات کی

پٹن میں میونسپل کمیٹی کے خلاف احتجاج

بارہمولہ //شمالی قصبہ پٹن میں مقامی لوگوں اور تاجروں نے میونسپل کمیٹی کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا الزام عائد کیا ہے کہ میونسپل کمیٹی نے علاقے کی بیشتر اندرونی سڑکوں خاصکر کالج روڑ اوراسپتال روڑ سے ابھی تک برف نہیں ہٹائی جس کے نتیجے میں مقامی لوگوں کے علاوہ طلاب اور مریضوں کو زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔احتجاجی مظاہرین نے مانگ کی کہ اندرونی سڑکوں سے فوری طور پر برف ہٹا ئی جائے تاکہ لوگوں کو مشکلات کا سانا نہ کرنا پڑے۔اس دوران انتظامیہ کے کچھ افسر موقع پر پہنچ گئے اور مظاہرین کو یقین دلایا کہ وہ اس معاملہ کو حکام تک پہنچائیں گے جس کے بعد مظاہرین پر امن طور منتشر ہوئے۔  

برفباری سے پیرنیا بونیار کا گرڈ اسٹیشن خراب

بارہمولہ//پیرنیا بونیار گرڈ اسٹیشن میں خرابی آنے کی وجہ نصف درجن سے زائد دیہات میں شام ہوتے ہی اندھیرا چھاجاتا ہے ۔مقامی لوگوں نے کے مطابق حالیہ بھاری برف باری سے پیرنیا بونیار مقام میں قائم گرڈ اسٹیشن کو نقصان پہنچا جس کی وجہ سے اس سے منسلک دیہات گانٹہ مولہ بالا و پائین ،کالونی ،منزگام، زہن پورہ اور کچہامہ کے علاوہ دیگر کئی دیہات بجلی سپلائی سے محروم ہوگئے ہیںاور اُنہیں سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ایک مقامی شہری مشتاق احمد نے بتایا کہ اس گرڈ ااسٹیشن کو پچھلے سال ہی عوام کے نام وقف کیاگیا تھا ۔اس سلسلے میں محکمہ بجلی کے ایگزیکٹیو انجینئر بارہمولہ نذیر احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ دراصل گرڈ اسٹیشن کے ٹرانسفارمر میں کچھ خرابی آنے کی وجہ سے علاقے میں بجلی سپلائی کٹ گئی ہے ۔انہوںنے کہا کہ فی الحال متاثرہ علاقوں کو دوسرے گرڈ اسٹیشنوں کے ساتھ جوڑا جائے گا جب تک ٹرانسفارمر کو ٹھی

چار مرتبہ لٹے دوکاندارپھر نقب زنوں کا شکار

 سوپور//شمالی کشمیر کے قصبہ سوپور میں نقب زنی کی وارداتوں کا سلسلہ جاری ہے ۔قصبے میں ایک تازہ واردات کے دوران گزشتہ رات کو چار مرتبہ چوروں کے ہاتھوں تباہ ہوئے ایک دوکان سے پھر سازوسامان اڑالیا گیا۔ چھوٹا بازار میں نصیر احمد غازی ولد محمد یوسف کی دو منزلہ انمول بیوٹی نامی ہوزری دوکان سے نقب زنوں نے دوران شب سارا سازوسامان اڑالیا ۔ دوکان کے مالک نصیر احمد غازی نے بتایا کہ اتوار کی صبح جب وہ دوکان کھولنے کے لئے پہنچا تو انہوں نے اپنی دوکان کو ایک بار پھر لٹتے ہوئے پایا اور دوکان میں موجود لاکھوں روپے کا سازوسامان غائب پایا۔اس سلسلے میں پولیس کی ایک ٹیم موقع واردات پر پہنچی اور کیس درج کر لیا۔ادھر یہ خبر سنتے ہی ٹریڈرس فیڈریشن سوپور کے نائب صدر محمد شفیع چنگال بھی وہاں پہنچ گئے ۔ انہوں نے نقب زنی کی ان وارداتوں پر تشویش کا اظہار کیا ۔ ان کی قیادت میں چھوٹا بازار سوپور کے تمام تاجروں ن

متعدد سڑکیں ہنوز بند،بارہمولہ اور اننت ناگ میںبرف پگھلنے سے گلی کوچے زیر آب

 بارہمولہ+اننت ناگ//شمالی قصبہ بارہمولہ میں حالیہ برف باری کے بعد کھلی دھوپ سے برف پگھلتے ہی بیشتر سڑکوں اورگلی کوچوں میں پانی جمع ہوگیا ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو عبور و مرورمیں مشکلات درپیش ہیں۔ خواجہ باغ ، نانک بھون ،تحصیل روڑ ،مین چوک ،جدید روڑ خانپورہ ،دیوان باغ ،آزاد گنج اور دیگر علاقوں کے لوگوں کا کہنا ہے کہ جمع شدہ پانی کی نکاسی کا کوئی انتظام نہ ہونے کی وجہ سے وہ اپنے گھروں میں محصور ہوکر رہ گئے ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ ضلع انتظامیہ سے گزارشوں کے باوجود ڈرنیج سسٹم نہیں کیا جارہا ہے۔ ادھر سرینگر مظفرآباد شاہرہ کئی جگہوں پر  سڑک کی خستہ حالی کی وجہ سے ناقابل آمدورفت بن گئی ہے جبکہ سنٹ جوزف اسکول سے لیکر خانپورہ تک شاہراہ پر جگہ جگہ گہرے کھڈ بن چکے ہیں جو برف پگھلنے کی وجہ سے جھیل کا منظر پیش کررہے ہیںاورمسافروں وٹرانسپورٹروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔لوگوں نے ض

گورنر انتظامیہ کے فیصلوں پر برہمی کااظہار

سرینگر//ریاست کیخلاف سازشوں کی شروعات9اگست1953سے ہوئی اور ان کے تحت دہلی نے یہاں اپنی من پسند کٹھ پتلی حکومتوں کے ذریعے دفعہ370 اور دفعہ35A کے تحت ریاست کو دی گئی آئینی اور جمہوری حقوق کو آہستہ آہستہ چھینا گیا ۔ان باتوں کااظہار نیشنل کانفرنس کے معاون جنرل سیکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال نے پارٹی کارکنوں اور عہدیداروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ریاست کے موجودہ گورنر نے بغیر کسی اختیار کے ریاست کے لوگوں کے جذبات اور گورنر ہاوس کاتقدس پامال کرنے کی شروعات کیں۔ڈاکٹر کمال نے کہا کہ گورنر کو ایسے فیصلے لینے سے احترازکرنا چاہیے جن کا ان کو اختیار نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ ضلعوں،تحصیلوں ،نیابتوں اور دیگر مقامات کا تعین کرنے کااختیار صرف ریاست کے منتخب اسمبلی نمائندوں کو ہے اور پارلیمنٹ اور وزیراعظم یا صدر ہند بھی ریاست کے آئینی اور جمہوری معاملات میں مداخلت نہیں کرسکتے ۔انہوں ن

مرکزی حکومت ہندوتوا سیاست کو پروان چڑھانے میں مصروف

کپوارہ//پی ڈی پی صدر و سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہا کہ ہندوستا ن میں جہاں مودی سرکار مسلمانوں کے ناموں سے منسوب شہروںاور تاریخی عمارات کے نام تبدیل کرنے پر تلی ہوئی ہے، وہیں دوسری جانب پڑوسی ملک پاکستان میں اقلیتوں کے حوالے سے قابل تعریف اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں۔  پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی(پی ڈی پی)کی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے اتوار کو بتایا کہ پڑوسی ملک پاکستان میں اقلیتوں کے حوالے سے اٹھائے گئے اقدامات قابل تعریف ہیں۔ انہوںنے کہا کہ ہندوستان میں موجود ہ بی جے پی حکومت یہاں مسلمانوں کے ناموں سے منسوب تاریخی مقامات اور عمارتوں کے نام تبدیل کرنے کے ساتھ ساتھ مسجد کی جگہ مندر تعمیر کرنے پر تلی ہوئی ہے ۔محبوبہ مفتی نے ان باتوں کااظہارخبررساں ایجنسی کے این ایس کے مدیر اعلیٰ محمد اسلم بٹ کے والد کی رحلت پر سوگوار کنبے کے ساتھ تعزیت پرسی کے بعد میڈیا نمائندوں کے سوالوں ک

ترال سڑک حادثہ میںشہری زخمی , حالت نازک، سرینگر منتقل

ترال //ترال میں ایک تیز رفتار نا معلوم سومو گاڑی نے ایک 55سالہ شہری کو ٹکر مارکر بری طرح زخمی کردیا ۔اس دوران شہری کو ترال اسپتال منتقل کیا جہاں سے ڈاکٹروں نے بعد میں اسے سرینگر منتقل کیا۔اس حوالے سے پولیس نے ایک کیس درج کر کے تحقیقات شروع کر دی۔ترال میں اتوار صبح سومو گاڑی نے 55سالہ شہری محمد مقبول نائیک ولد غلام محمد نائیک ساکنہ ترال پائین کو ٹکر ما دی جس کے نتیجے میں مذکوہ شہری بری طرح زخمی ہوا ۔ اگر چہ شہری کو مقامی لوگوں نے زخمی حالت میں ایس ڈی ایچ ترال منتقل کیا ،تاہم شہری کے سر میں گہری چوٹ لگنے کی وجہ سے اس سے فوری طور سرینگر منتقل کیا گیا۔بتایا جاتا ہے کہ مذکورہ سومو شہری کو ٹکر مارنے کے بعد جائے ورادات سے فرار ہوئی ۔پولیس نے واقعہ کے حوالے سے ایک کیس درج کر کے مفرور ڈارئیور کی تلاش شروع کر دی ۔    

کرالہ پورہ کپوارہ میں ڈگری کالج کا افتتاح محض ایک مذاق

کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ کے کرالہ پورہ کے لوگ علاقہ میں ڈگری کالج قائم نہ کرنے پر سر اپا احتجاج ہیں ۔کرالہ پورہ کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال اس وقت کی سرکار نے با ضابطہ طور جب نئے ڈگری کالجوں کا اعلان کیا تو کرالہ پورہ میں بھی ڈگری کالج قائم کرنے کو منظوری دی گئی اور سال کے وسط میں کرالہ پورہ کے بائز مڈل سکول میں ڈگری کالج کو قائم کر کے اس کا افتتاح کیا گیا جس پر یہا ں کے لوگو ں نے مسرت کا اظہار کیا ۔لوگو ں کا کہنا ہے کہ حال ہی میں گورنر انتظامیہ کی جانب سے نئے ڈگری کالجو ں کی منظوری میں کرالہ پورہ ڈگری کالج کانام ہی نہیں تھاجو یہا ں کے لوگو ں سے ایک بھونڈا مذاق ہے ۔لوگو ں کا کہنا ہے کرالہ پورہ آ بادی کے لحاظ سے بھی ایک بڑے حصہ پر مشتمل ہے وہیں اس کے ساتھ حدمتارکہ پر واقع کیرن اور بڈنمل ،مارسری ،رنگواڑ ،فرکن اور کاچہامہ جیسے دور دراز علاقے آتے ہیں ۔لوگو ں کا کہنا ہے کہ اگر کرالہ

مڈورہ ترال میں محکمہ تعلیم کے خلاف احتجاج

ترال//ترال کے مڈورہ علاقے میں محکمہ تعلیم کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے لوگوں نے ہائی سکول کا درجہ بڑھانے کا مطالبہ کیا۔ احتجاج میں شامل لوگوں نے بتایا کہ اُن کے گائوں میں قائم ہائی سکول کا درجہ بڑھانے میں ہمیشہ امتیاز برتا گیا۔احتجاج میں بزرگوں ،نوجوانوں اور چھوٹے بچوں نے بھی شرکت کی ۔احتجاج میں شامل لوگوں نے ہاتھوں میں بینر اور پلے کارڈ اٹھارکھے تھے جن پرہماری مانگیں پوری کروجیسے نعرے درج تھے۔احتجاج میں شامل کئی معمر شہریوں نے بتایا کہ 1981میںعلاقے میںقائم مڈل سکول کادرجہ ہائی سکول تک بڑھایا گیا۔انہوں نے بتایاکہ محکمہ تعلیم نے گزشتہ چند سالوں کے دوران کئی علاقوں میں ہائرسیکنڈر ی سکول قائم کئے گئے لیکن  ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی ہونے کے باوجود مڈورہ میں سکول کا درجہ نہیں بڑھایا گیا۔ مدثر احمد نامی ایک نوجوان نے بتایا کہ گائوں میں ہائر سیکنڈری سکول نہ ہونے کی وجہ سے علاقے کے طالب علم

ٹنگمرگ میں آوارہ کتوں کے حملے میں 2افراد زخمی

ٹنگمرگ//ٹنگمرگ میں آوارہ کتوں نے ایک حملے میںدو افراد کو زخمی کردیا۔فجہ پورہ ٹنگمرگ میں اتوار کی صبح اس وقت آوارہ کتوں نے دو افراد کو زخمی کردیا جب شمس الدین ڈارلمبردار حاجی بل اور محمد اسداللہ راتھر ساکنان نمبل نار فجہ پورہ تعزیت کیلئے جارہے تھے اوردونوں زخمیوں کو سب ڈسٹرک اسپتال میں علاج ومعالجہ کے بعد رخصت کیا گیا ۔معلوم ہوا ہے کہ دو روز قبل ہی آوارہ کتوں نے شالہ گام میں دو طالب علموں کو ٹیوشن سے واپس لوٹتے وقت حملہ کرکے شدید زخمی کردیا جنہیں ڈاکٹروں نے پلاسٹک سرجری کرانے کی صلاح دی ہے۔فجہ پورہ کے سماجی کارکن اورسابق اسسٹنٹ ٹورازم جی ایم ڈار نے بتایا کہ علاقہ میں گزشتہ ایک ہفتے کے دوران آوارہ کتوں کی آبادی میں اچانک اضافہ ہونے سے عام لوگ بالخصوص بزرگ اور ٹیوشن جانے والے بچے گھروں سے باہر نکلنے میں خوف محسوس کرتے ہیں۔  

مزید خبریں

    پاکستان کو سفید جھنڈا نہیں دکھائیں گے: راجناتھ سنگھ  سرینگر//مرکزی وزیر داخلہ نے کانگریس سرکار پر برستے ہوئے کہا ہے کہ کانگریس نے نکسلواد اور علیحدگی پسندوں کے خلاف نرم رویہ اختیار کیا ہے جس کی وجہ سے علیحدگی پسندی اور نکسلواد کا رجحان بڑھ گیا ہے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ 3 سے 4 سال کے اندر ہندوستان سے نکسل واد ، علیحدگی پسندی اور انتہاپسندی کا صفایا کر دیا جائے گا۔کانگریس صدر راہل گاندھی کا نام لئے بغیر راج ناتھ سنگھ نے کہا ’’ کانگریس کے لیڈر کہتے ہیں ہماری حکومت آئے گی، تو کسانوں کے قرض معافی کئے جائیںگے‘‘۔ بہار کے سمستی پور ضلع میں منعقد ایک تقریب میں شرکت کرنے پہنچے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے پاکستان کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اب سفید جھنڈا نہیں دکھایا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ہمارا پڑوسی ملک ہے اور پہلی گولی ہماری ط

تازہ ترین