تازہ ترین

رام بن حادثہ:5رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل

 سری نگر// سرکار نے6ستمبرکو ہوئے رام بن حادثے کی باریک بینی سے تحقیقات اور متعلقہ محکمو ں کو جواب دہ بنانے کے لئے ا یک5رکنی تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی ہے جو شاہرہ پر طبی سہولیات کو یقینی بنانے کے علاوہ آنے والے موسم سرما میںسرینگر جموں شاہرہ پر بلا روک ٹریفک کی نقل حمل کو جاری رکھنے کے لئے اقدامات کئے جائیں گے ۔ جس دوران کمیٹی کو اپنی مفصل رپورٹ سات دن کے اندر اندر سرکار کو پیش کرنے کے لئے گیا گیاہے ۔ خطہ چناب کے رام بن کیل مورہ کے مقام پر 6ستمبر کو ہوئے حادثے میں جس میں22افراد کے جاں بحق ہونے پر سرکارنے واقعے کی پہلی بارسنجیدہ نوٹس لیتے ہوئے حادثے کی بڑے پیمانے پر تحقیقات شروع کی ہے جس 2دپٹی کمشنروں سمیت پانچ اعلی سرکاری افسران پر ایک 5رکنی ٹیم کو تشکیل دیا گیا ہے جو مذکورہ حادثے کے تمام پہلو کا باریک بینی سے جائزہ لے گی اور سڑک پر بہتر طبی سہولیات کے علاوہ آنے والے موسم سرما کے دور

سرینگر جموں شاہراہ پر اوور ٹیکنگ کا قہر

بانہال /محمد تسکین / ڈرائیورں کوجموں سرینگرشاہراہ پر اورٹیکنگ سے باز رکھنے کیلئے سول سوسائٹی بانہال کی طرف سے ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں ڈرائیوروں کو تیزرفتاری سے گاڑی چلانے اور سرینگر جموں شاہراہ پر گاڑیوں کی اورٹیکنگ کے نقصانات کی جانکاری دی گئی۔ اس موقع پر سوشل ورکر شبیر احمد میر اور مختار نبی نے مختلف پمفلٹ شائع کئے تھے جن میں گاڑی چلانے والوں سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ شاہراہ پر بانہال کے علاقے میں گاڑیوں کی اور ٹیکنگ نہ کریں، تاکہ قیمتی انسانی جانوں اور قیمتی وقت کو بچایا جا سکے۔ اس اقدام کی لوگوں نے سراہنا کی ہے۔