محکمہ کی رقومات میں خرد بردکاالزام UEED

 پانی اور غلاظت رہائشی مکانوں میں داخل ، مقامی آبادی میں سخت تشویش    ڈوڈہ// قصبہ ڈوڈہ کی گنجان آبادی کے درمیان گذرنے والے 4بڑے نالے یہاں کی مقادی آبادی کے لئے سخت پریشانی کاباعث بنے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے ان نالوں کے ارد گرد ومتصل آبادی سخت تنگ آئی ہوئی ہے۔ قصبہ کے درمیان سے گذرنے والے ان 4نالوں میں شان نالہ دُمڑہ نالہ ، شنال نالہ سمدان پور ،صدیق آباد نالہ اور اکرم آباد نالہ شامل ہیں۔ یہ نالے 4سال قبل گندگی ،کوڑا کرکٹ ، غلاظت ، مٹی ، پالیتھین لفافوں ودیگر طرح کی چیزوں سے بھرے پڑے ہیں جس کی وجہ سے ان نالوں سے گذرنے والا پانی سڑکوں اور شاہراہ عام پر پھیل جاتا ہے اور بارشوں سے ان نالوں کی پانی ان نالوں کی آس پاس رہائش رکھنے والے مکینوں کے گھروں میں چلاجاتا ہے جس سے ایک تو سیلاب اور طغیانی کا ہمیشہ خطرہ رہتاہے اور رہائشی مکانوں کو بھی خطرہ لاحق ہوا ہے ۔4برسوں کے

گول میں بین سکول و کالج کوئز مقابلے کا اہتمام

گول//آئی ٹی آئی گول میں 58آر آر کی جانب سے بین سکول و کالجز کوئز مقابلے کا اہتمام ہوا جس میں گول کے بہت سارے سکولی طلباء نے حصہ لیا ۔ اس موقعہ پر آئی ٹی آئی اور ڈگری کالج کے اسٹاف و طلباء و طالبات نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ۔ اس موقعہ پر نشہ سے پیدا ہونے والی برائیوں اور سماجی برائیوں کو دور کرنے اور عوام کو بہتر جانکاری دینے وغیرہ پر بچوں نے تقاریر کیں ۔بچوں نے سوشل میڈیا پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ جہاں ایک طرف سے یہ لوگوں کو بہترمعلومات فراہم کرنے کا آسان ذریعہ ہے وہیں دوسری جانب سے اس سے کئی برائیوں نے بھی جنم لیا جس سے معاشرے کو بہت نقصان بھی ہوا ہے ۔اس موقعہ پر طالب علموں نے کہا کہ نشہ کی وجہ سے سماج میں غلط سوچ پیدا ہوتی ہے اور طالب علم اس نشہ کے خلاف بہتر کردار ادا کر سکتا ہے ۔ طالب علموں نے اس موقعہ پر نشہ کو جڑ سے ختم کرنے کے لئے بہتر کردار ادا کرنے کی بھی ہامی بھری اور کہا

سروڑی کمشنرسیکریٹری محکمہ پی ایچ ای سے ملاقی

سرینگر//سابق وزیرجی ایم سروٹی نے کمشنرسیکریٹری پی ایچ ای اور چیف انجینئر پی ایچ ای جموں کیساتھ ملاقات کی اور عوام کو درپیش مسائل اُبھارے۔الگ الگ ملاقاتوں کے دوران سروڑی نے محکمہ جات سے متعلق عوام کو درپیش مسائل کے جلد ازالہ کیلئے حکام پرزوردیا۔اُنہوںنے اندروال اسمبلی حلقہ کے مسائل خصوصی طورپراُبھارے۔سروڑی نے چنگام ، دیلیر، سنگھپورہ، اندروال، بٹواری، گورینال، چھاترو، سیگدی، کوچال، ڈیڈپیٹھ، خواجگام، وھید کواٹھ، ہورنا، تگدود، کاکرواگن، کوچھال ، نیچا، رہالتھال، مغل میدان ، منگتھلہ، شنا، کیشوان، ساراون، ٹھاکرائی، سرتھل، سرور، درابشالہ کونتوارہ، بونجواہ، ٹھاٹھری، پھاگسو، کاہراہ، تانتا، ملانو، باٹوگرہ، کانسو، بالگران، چموٹی، جکیاس، چالر، چنیاس ودیگر علاقہ جات میں پینے کے پانی کا مسئلہ اُبھارا۔اُنہوں نے ان علاقوں میں پینے کے پانی کے علاوہ پانی کی پائپوں کی قلت وغیرہ کے مسائل سے حکام کو آگاہ ک

رام بن کے ہسپتالوں میں اینٹی ریبیز انجکشن نایاب

رام بن//ضلع ہسپتال رام بن اور دیگر سب ضلع ہسپتالوں میں ریبیزمخالف ویکسین اور وینوم مخالف انجکشن کی کمی کے باعث لوگوں کو کافی پریشانیوں کا سامنا ہے ۔ذرائع نے بتایا کہ ضلع ہسپتال اور سب ضلع ہسپتالوں گول،بانہال اور دیگر سرکاری ہسپتالوں میں وینوم مخالف اور ریبیز مخالف ویکسین کی سخت کمی ہے جس کی وجہ صوبائی میڈیکل سٹور سے سپلائی کی کمی بتایا جاتا ہے۔ ڈپٹی چیف میڈیکل آفیسر نے بتایا کہ انہوں نے کئی بار اعلیٰ حکام کے نوٹس میں بات لائی لیکن ابھی سپلائی موصول نہیں ہوئی ۔مریضوں نے الزام عائد کیا کہ اعلیٰ حکام ضلع کے سرکاری ہسپتالوں میں سپلائی نہیں دے رہے۔لوگوں نے بتایا کہ اس موسم میں کتوں کے کاٹنے اور سانپوں کے ڈھنسے کے کافی واقعات پیش آتے ہیں لیکن زندگی بچانے والی ویکسین نہیں ملتی۔جب کشمیر عظمیٰ نے ہسپتال انتظامیہ سے بات کی تو انہوں بتایا کہ اس معاملہ میں پہلے ہی سے اعلیٰ حکام کو بتا یا گیا ۔یہ

۔3روزہ تاریخی سرتھل یاترا شروع

 کشتواڑ //کشتواڑ میں تین روزہ تاریخی سرتھل یاترا شروع ہوگئی جس دوران چھڑی مبارک کو سرتھل دیوی مندر لیجایاگیاجہاں خصوصی دعائوں کا اہتمام کیاگیا ۔یہ یاترا گوری شنکر مندر سرکوٹ سے شرو ع ہوئی جس کے بعد چھڑی مبارک سرتھل دیوی مندر کیلئے نکالی گئی ۔پورے راستے کے دوران عقیدتمند نعرے اور بجن گاتے رہے ۔ چھڑی مبارک قافلے میں بزرگ ،خواتین، نوجوان اور بچے سب شامل تھے ۔اس دوران ضلع انتظامیہ کی طرف سے بھرپور انتظامات کئے گئے تھے اور سیکورٹی اہلکار بھی جگہ جگہ تعینات تھے ۔قابل ذکر ہے کہ ڈوگرہ دور حکومت میں اس یاترا کو سرکاری یاترا قرار دیاگیاتھا۔یاتراکے دوران لنگر کا اہتمام بھی کیاگیا۔  

مزید خبرں

کنٹریکٹرس ایسوسی ایشن ضلع کشتواڑکا اجلاس   گورنر سے تعمیراتی کمپنیوں پر نظر رکھنے کیلئے ماہر مشاور تعینات کرنے کا مطالبہ کشتواڑ//چناب ویلی پاور پروجیکٹس پرائیویٹ لمیٹڈ کے زیر تعمیر 1000میگا واٹ پکل ڈول پاور پرو جیکٹ میں کام کر رہی تعمیراتی کمپنیاں جے پرکاش انڈسٹریز اور افکان انفرا لمیٹیڈ کی ناقص کار کردگی اور من مانی نے چناب ویلی پاور پروجیکٹ منیجمنٹ پر سوالیہ نشان کھڑے کر دیئے ہیں۔ان باتوں کا اظہار کنٹریکٹرس ایسوسی ایشن ضلع کشتواڑ کے صدر سید فاروق صدیقی نے کنٹریکٹرس کی ایک میٹنگ میں کیا ۔انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ CVPPانتظامیہ کے تیار کردہ منصوبے کو تعمیراتی کمپنیاں بالخصوص جے پی کمپنی اپنی مرضی سے تبدیل نہ کر دے جس میں اس زیر تعمیر پن بجلی پرو جیکٹ کے کام میں خلل پڑ سکتاہے اور اس اہم ملکی اثاثہ کو اثر انداز ہوناپڑیگا۔انہوں نے گورنر ستیہ پال ملک سے مانگ کرتے ہوئے کہا

تازہ ترین