تازہ ترین

کتاب و سنت کے حوالے سے مسائل کا حل

   سوال: گذارش یہ ہے کہ قرآن کریم بغیر وضو چھونے کی حدیث نقل فرمایئے۔ یہ حدیث کون کون سی کتاب میں ہے اور یہ بتائیے کہ چاروں اماموں میں سے کس امام نے اس کو جائز کہا ہے کہ قرآن بغیر وضو کے چھونے کی اجازت ہے۔ میں ایک کالج میں لیکچرار ہوں، کبھی کوئی آیت لکھنے کی ضرورت پڑتی ہے تو اس ضمن میں یہ سوال پیدا ہوا ہے۔ امید ہے کہ آپ تفصیلی و تحقیقی جواب سے فیضیاب فرمائیں گے ۔ فاروق احمد قرآن کریم کو بلاوضو چھونے کی اجازت نہیں جواب: بغیر وضو قرآن کریم ہاتھ میںلینا، چھونا،مَس کرنا یقینا ناجائز ہے۔ اس سلسلے میں حدیث ہے۔ حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا قرآن کریم صرف باوضو انسان ہی چھوئے۔ یہ حدیث نسائی، دارمی، دارقطنی، موطا مالک صحیح ابن حبان،مستدرک حاکم اور مصنف عبد الرزاق اور مصنف ابن ابی شمبہ میں موجو د ہے نیز بیہقی اور معرفتہ السنن میں بھی ہے۔

علامہ انور شاہ کشمیری

ارشاد  باری ہے : ترجمہ: بے شک دین اللہ کے نزدیک صرف اسلام ہے اور جو شخص اسلام کے بغیر کوئی اور دین لے کر اللہ کی بارگاہ میں حاضر ہوکر اس سے وہ ہرگز قبول نہیں کیا جائے گا اور وہ آخرت میں نقصان اُٹھانے والوں میں سے ہوگا۔( سورہ آل عمران ۔۔۔آیت ۲۰ ) امام العصر اور محدث کبیر کا ذکر خیر ہو رہا ہو تو لامحالہ زبان پر بے ساختہ یہ شعر آتا ہے   ؎  زباں پہ بار خدایا یہ کس کا نام آیا کہ نطق نے بوسے خود میری زبان کے لئے گوکہ علامہ کشمیری کی بلند پایہ علمی شخصیت اور ذات والاصفات سمیناروںاور مباحثوں سے بہت ہی بلند وبالا تر ہے، تاہم یہ بات عالم اسلام کیلئے بالعموم اور اہل کشمیر کیلئے بالخصوص قابل فخر ہے کہ علامہ انور شاہ کا  وطنی تعلق اسی وادیٔ کشمیر سے ہے ۔ غالباً ساتویں دہائی میں اوقاف اسلامیہ ( مسلم وقف بورڈ )کشمیر کے اہتمام سے سرینگر میں علامہ کے عظ