تازہ ترین

اجتہاد اقبال ؒکی نظر میں

 فکر  اسلامی کا منبع ومصدر قرآن و سنت ہیں ان ہی کی روشنی میں نت نئے مسائل، عصری فلسفہ اور سائنسی رجحانات کو مد نظر رکھتے ہوئے فکر اسلامی کی تشکیل نو کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے ،اس مسئلے کوجن مفکرین نے شدت کے ساتھ محسوس کرکے نمایاں رول ادا کیا ان میںعلامہ اقبال ؒ ((1877-1988کا نام نمایاں و قابل ذکر ہے ۔علامہ اقبال مجتہدانہ دماغ اور فکر کے مالک تھے ۔انھوں نے خود کو پہچانا اور پوری دنیا کو خود شناسی کی دعوت دی ۔اقبال ؒ درخشندہ ستارہ کے مانند تھے اور انھوں نے دنیا کو روشنی عطا کی ۔قدیم علوم پرگہری دست گا ہ حاصل تھی لیکن اس کے ساتھ ساتھ جدید علوم و نظریات پر بھی گہری نظر تھی ۔قدیم و جدید علوم و افکار پر انہیں ید طولیٰ حاصل تھا ۔وہ حقیقی معنوی میں نبض شناس مفکر تھے اور اجتہادی بصیرت سے لیس تھے ۔اسی اجتہادی بصیرت کے سانچے میں امت کو ڈالنا چاہتے تھے۔امت جن مسائل اور امراض میں مبتلا تھ

اسلام علم وآگہی کاعلمبردار

یہ  ایک روشن حقیقت ہے کہ اسلام میں علم کی فضیلت واہمیت، ترغیب و تاکید جس انداز میں پائی جاتی ہے ،اس کی نظیر اور کہیں نہیں ملتی، تعلیم و تربیت، درس وتدریس تو گویا اس دین برحق کا جزولاینفک ہے، کلام پاک کے نزول اور وحی کے آغاز کے وقت سب سے پہلا لفظ جو پروردگار عالم نے رحمت عالمﷺ کے قلب مبارک پر نازل فرمایا، وہ اِقرأ ہے، یعنی پڑھیے، اور قرآن پاک کی آیتوں میں سب سے پہلے جو پانچ آیتیں نازل فرمائی گئیں ،ان سے بھی قلم کی اہمیت اور علم کی عظمت ظاہر ہوتی ہے۔اس امت کے نام اللہ تعالیٰ کا سب سے پہلا پیغام تعلیم حاصل کرنا ہے۔جب حضرت ابراہیم علیہ السلام نے اللہ کے حکم سے کعبہ تعمیرکیا اور وہاں چند لوگ آباد ہوگئے تو دعا فرمائی ’’اے ہمار ے رب!ان میں ان ہی میں سے رسول بھیج جو ان کے پاس تیری آیتیں پڑھے ، انہیں کتاب وحکمت سکھائے اور پاک کرے،یقیناًتو غلبہ والااورحکمت والاہے‘&l

تازہ ترین