اسلام ۔۔۔دین رحمت | ہر ہدایت روشن ہر حکم مبنی بر حکمت

’’بے  شک اللہ تعالیٰ کے ہاں دین اسلام ہی ہے۔‘‘[آل عمران : 19 ] قرآن کریم کی یہ آیت اُن لوگوں کی واضح تردید کر تی ہے جو یہ کہتے ہوئے سنے جارہے ہیں کہ اسلام کی تاریخ ڈیڑھ ہزار سال پرانی ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ اسلام وہی دین ہے جس کی دعوت و تعلیم تمام انبیاء کرام علیہم السلام اپنے اپنے زمانۂ نبوت میں دیتے رہے ہیں۔ اسلام کی کامل ترین شکل وہ ہے جو خاتم النبیین سیدنا محمد رسول اللہ ﷺ نے دنیا کے سامنے پیش فرمائی ۔ تکمیلِ دین کے بارے میں اللہ تعالیٰ ہی نے ارشاد فرمایا:’’آج میں نے تمہارے لئے دین کو کامل کردیا اور تم پر اپنا انعام بھر پور اور تمہارے لئے اسلام کے دین ہونے پر رضا مند ہوگیا۔‘‘[ المائدہ:3 ] اب اس دین اسلام کے سوا کوئی اوردین، کوئی اور نظریہ، کوئی اور فکر (Thougt ) عنداللہ قبول نہیں ہوگا۔ اگر کوئی اختیار کرے گا بھی تو از خود نق

کتاب و سنت کے حوالے سے مسائل کا حل

اعتکاف کے اہم مسائل    اُجرت پر اعتکاف کرانا س:بعض جگہوں پر کسی اجنبی مسافر کو بستی والے اْجرت پر اعتکاف میں بٹھاتے ہیں کیا اس طرح سے یہ مبارک سنت ادا ہوتی ہے؟ ج:         کسی بھی اعتکاف کرنے والے شخص کو اعتکاف کی اْجرت لینا، اور اْسے اعتکاف کی اجرت دینا دونوں حرام ہیں۔ اس سے نہ تو خود اْس شخص کا اعتکاف ادا ہوگا۔ اور نہ اْس محلہ یا بستی کے لوگوں سے اعتکاف کا حکم ساقط ہوگا۔ اعتکاف سنت کفاریہ ہے۔ جس کے معنیٰ یہ ہیں کہ کوئی ایک شخص بھی اگر اخلاص سے ، بلاکسی دنیوی لالچ کے محض اللہ کی رضا کیلئے اعتکاف کرے گا تو یہ سنت سب کی طرف سے ادا ہوجائے گی۔ لیکن جب اْجرت لینے دینے کا معاملہ ہوگا تو اس سے اعتکاف کی سنت ، ادا ہونا توکئی گناہ ہونا بھی یقینی ہے اور اس محلہ پر ترک اعتکاف کا وبال بھی لازمی ہے۔ س: فرصت والے بوڑھے بھی خود اعتکاف میں بیٹھنے کو ع

مقصدِ حیات

اللہ   تعالیٰ ہی ہر شئے کا خالق و مالک ہے ۔ اس نے ہی چھوٹی سے چھوٹی مخلوق کو بھی پیدا کیا اور بڑی سے بڑی مخلوق کو بھی۔ اگر ہاتھی اس نے بنایا ہے اور یہ اس کا کمال ہے تو چیونٹی کو پیدا کرنا بھی کچھ کم کمال نہیں ہے کہ اتنے بڑے ہاتھی میں جتنے اعضاء اس نے بنائے ہیں وہ سارے کے سارے چیونٹی کے اندر بھی موجودہیں ۔ اگر بڑا کارخانہ چھوٹی چیز بنائے تو اس کی توہین سمجھی جاتی ہے مگر اللہ نے جو کچھ بھی بنایا یہ اس کی شان ہے کیونکہ کارخانے میں تیار ہونے والی شئے سے بہتر بھی شئے دوسرے کارخانے میں تیار ہو سکتی ہے مگر سارا جہان اور اس کے سارے کارخانے مل کر بھی اس کے کارخانۂ قدرت میں تیار ہونے والی ادنیٰ سے ادنیٰ شئے سے بہتر تو کیا اس جیسی بھی نہیں بنا سکتے بلکہ مخلوق کی بنائی ہوئی شئے اور اللہ کی بنائی ہوئی شئے میں ایک فرق یہ بھی ہے کہ اللہ کی بنائی ہوئی شئے جیسی کوئی اور نہیں بنا سکتا۔ پھر یہ

یاد آ رہا ہے بدر کا میدان بار بار

عزیز بلگامی…بنگلور،انڈیا 09900222551 رمضاں میں ذکرِ بدر کو لے کر ہوں بے قرار ـ’’یاد آرہا ہے بدر کا میدان  باربار ‘‘ اِسلام وکُفرکا یہ تصادم تھا اوّلیں تھی جنگ ایسی جس پہ تھا خود امن جاں نثار چھوٹی سی فوج کُفر کے لشکر پہ چھا گئی افواجِ کفرو شرک کا دامن تھا تار تار کمزور فتح پاگیے، ہارے قوی ترین سَو اک طرف تھے، مدّ مقابل تھے اک ہزار ایماں ڈٹا تھا ،کفرکی قوت کے سامنے تھا شرک ساز و ساماں کے ہمراہ ، بے قرار بیٹا تھا اک طرف، تو پدردوسری طرف جاری فلک کی آنکھ سے تھی آنسوئوں کی دھار  حضرت عمرؓ نے اپنے  ہی ماموں کی جان لی اْن کو تو رب کے دیں نے دیا تھا یہ اِختیار مسلم ہوئے تو ابن ِابوبکر ؓنے کہا زد میں تھے ،پھر بھی آپ پہ خالی کیاتھا وار کہنے لگے یہ سن کہ ابو بکر ؓدفعتاً ا