تازہ ترین

رفیع آبادمیں ژالہ باری سے نقصان | وکیل نے متاثرین کیلئے معاوضہ کا مطالبہ کیا

سرینگر//پیپلز کانفرنس کے سینئر نائب صدر عبد الغنی وکیل نے رفیع آباد میں ژالہ باری سے ہوئے نقصانات کا جائیزہ لیا ۔انہوںنے کہا کہ ژالہ باری کے نتیجے میں میوہ باغات مالکان کو کافی نقصان پہنچ گیا ہے اور انہیںکروڑوں روپے کا نقصان ہو گیا ہے ۔ جس کے باعث فروٹ گرورس کی حالت انتہائی ابتر ہو چکی ہے اور آنے والے وقت میں انہیں کسمپری کی زندگی گزارنے کیلئے مجبور ہونا پڑے گا ۔ وکیل نے ریاستی سرکار خاص کر گورنر ستیہ پال ملک سے اپیل کی کہ متاثرین کو فوری طور معاوضہ فراہم کیا جائے۔       

عارضی ملازمین کی برخواستگی کا معاملہ | گورنر انتظامیہ فیصلے پر نظرثانی کرے : این سی ،پی ڈی پی

سرینگر //گورنرانتظامیہ کی جانب سے مختلف سرکاری محکموں میں سال2010کے بعدتعینات کئے گئے سبھی عارضی ملازمین بشمول ڈیلی ویجروں،کیجول لیبروں ،کنسالڈیٹیڈ،کنٹریکچول اورایڈہاک ملازمین کونکال باہرکئے جانے یاان سبھی عارضی ملازمین کی برخواستگی عمل میں لائے جانے سے متعلق حکمنامہ نے جہاں سینکڑوں ایسے محنت کشوں کے مستقبل پرسوالیہ نشان لگادیاہے ،وہیں گورنرانتظامیہ کے اس حکمنامے پرمین اسٹریم جماعتوں میں بھی تشویش پائی جاتی ہے ۔نیشنل کانفرنس اورپی ڈی پی نے گورنرستیہ پال ملک پرزوردیاکہ وہ اس فیصلے پرنظرثانی کریں ۔ نیشنل کانفرنس کے جنرل سیکرٹری علی محمدساگرنے کہاکہ یہ بات بڑی تشویشناک ہے کہ گورنرانتظامیہ نے ایسے تمام عارضی ملازمین کونکال باہرکرنے کافیصلہ لیاہے جن کوسال2010اور 2015کے بعدمختلف سرکاری محکموں میںتعینات کرکے عارضی ملازمت فراہم کی گئی ۔انہوں نے کہاکہ غریب ملازمین اورمحنت کشوں سے روزی روٹی کاذر

ریلائنس نے آمدنی میں انڈین آئل کو پیچھے چھوڑا

نئی دہلی//مکیش امبانی کی تیل ومواصلات کی کمپنی ریلائنس انڈسٹری نے آمدنی کے لحاظ سے ملک کی سب سے بڑی کمپنی بن گئی ہے۔ اس سے قبل انڈین آئل کارپوریشن آمدن کے لحاظ سے ملک کی سب سے بڑی کمپنی تھی۔31مارچ کواختتام پزید ہوئے مالی سال2018-19کے دوران ریلائنس نے 6.23لاکھ کروڑ روپے کا منافع کمایاجبکہ اسی مدت کے دوران انڈین آئل کارپوریشن کو 6.17لاکھ کروڑ روپے کا منافع حاصل ہوا۔یہ ملک کی سب سے زیادہ منافع کمانے والی کمپنی بھی تھی اور مالی سال 2019 کے دوران اس کا خالص منافع انڈین آئل کارپوریشن نے دوگنا سے بھی زیادہ تھا۔ ریلائنس کو دس سال قبل انڈین آئل کاررپوریشن کے حجم کے نصف کے برابر تھی ،لیکن صارفین کی تجارت جیسے مواصلات ،ڈجٹل خدمات وغیرہ میں پائوں رکھتے ہی اس کے خالص منافع 39,588کروڑتک مالی سال 2019میں پہنچ گیاجبکہ انڈین آئل کارپوریشن کا خالص منافع17274کروڑ رہا۔انڈین آئل گزشتہ برس تک پبلک س

گاندربل میں بجلی کی عدم دستیابی سے عوام پریشان

گاندربل//گاندربل کے کئی علاقوں میں افطار اور سحری کے اوقات کے دوران برقی رو غائب ہوجاتی ہے جس کی وجہ سے عوام میںمحکمہ بجلی کے تئیں ناراضگی پائی جارہی ہے۔دودرہامہ،سالورہ،بی ہامہ،بملورہ،ریشی پورہ،فتع پورہ،گنگر ہامہ،وحید پورہ،لار،چونٹھ ولی وار ،چانتھن گلاب پورہ ریپورہ سمیت دیگرکئی علاقوں میں افطار اور سحری کے وقت بجلی کی آنکھ مچولی شروع ہوجاتی ہے۔مقامی لوگوں نے مطالبہ کیا کہ بجلی سپلائی میں معقولیت لائی جائے ورنہ وہ سڑکوں پر نکلنے کیلئے مجبورہونگے۔     

بلیوارڑ پر سیاحوں کیلئے واک وے کی تعمیر | صوبائی کمشنر نے چیمبر کی طرف سے ابھارے گئے معاملات کا جائزہ لیا

سرینگر//صوبائی کمشنر کشمیر بصیر احمدخان نے ایک میٹنگ کے دوران کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹریز کی طرف سے اُبھارے گئے معاملات کاجائزہ لیا۔کے سی سی آئی نے صوبائی کمشنر کی طرف سے سنیچر کے روز قومی شاہراہ پر لازمی اشیاء سے بھرے تین ہزار ٹرکوںکی وادی روانگی کو یقینی بنانے کے لئے اُن کی پہل اور کوششونںکی سراہنا کی۔کے سی سی آئی کے ممبران نے صوبائی کمشنر کے سامنے کئی دیگر معاملات بھی رکھے۔وادی کے لئے بلا خلل زمینی رابطے کے سلسلے میں صوبائی کمشنر نے ممبران کو یقین دہانی کرائی کہ قومی شاہراہ کو ایک ہفتے کے اندر اندر مکمل طور بحال کیا جائے گا جس کے بعد دونوں طرف سے ٹریفک کی آمدورفت ممکن بن سکتی ہے۔صوبائی کمشنر نے ممبران کو بتایا کہ راجدھانی شہر میں سمارٹ سٹی پروجیکٹ کا پہلے ہی آغاز کیا گیا ہے۔جس کے تحت بلیوارڈ روڈ پر سیاحوں کے لئے واک وے تعمیر کیا جارہا ہے ۔اس کے علاوہ 6مقامات پر کثیر سطحی

کشمیر ہوٹل ایسو سی ایشن وفد گورنر سے ملاقی

سرینگر//کشمیر ہوٹل ایسو سی ایشن کا ایک وفد صدر مشتاق چایہ کی قیادت میں راج بھون میں گورنر ستیہ پال ملک سے ملاقی ہوا ۔مشتاق چایہ نے گورنر کو کشمیرمیں ہوٹل مالکان کو درپیش معاملات سے آگاہ کیا اور ہوٹل مالکان کو مالی دشواریوں سے باہر نکالنے کے لئے ایک مناسب پیکیج، صنعتی سیکٹر کے برابر بجلی فیس وصول کرنے اور جی ایس ٹی میں رعایات فراہم کرنے کی درخواست کی ۔گورنر نے پرنسپل سیکرٹری خزانہ ارون کمار مہتہ کو ہدایت دی کہ وہ ایسو سی ایشن کی طرف سے پیش کئے گئے مطالبات پر غور کریں۔  

خورشید گنائی سے چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری وفد ملا

سری نگر//چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ایک وفد گورنر کے مشیر خورشید احمد گنائی کے ساتھ ملاقات کی ۔میٹنگ کے دوران وفد نے تجارت اور صنعت کاری سے جڑے متعدد معاملات مشیر کی نوٹس میں لائے۔ انہوں نے سرینگر۔ جموں قومی شاہراہ پر ٹرکوں کی آمدورفت میں معقولیت لانے کا بھی مطالبہ کیا۔مشیرنے وفد کو یقین دلایا کہ اُن کی طرف سے اُجاگر کئے گئے معاملات پر ہمدردانہ غور کیا جائے گا۔ انہوں نے چیمبر پر زور دیا کہ وہ خواتین کارخانہ داری کو فروغ دیں خاص طور سے باغبانی اور پھولبانی شعبوں کی طرف بھرپور توجہ دی جانی چاہئے اور اُبھرتے ہوئے کارخانہ داروں کی رہنمائی کے لئے جے اینڈ کے ای ڈی آئی کی راحت رسانی حاصل کی جانی چاہئے۔وفد میں صدر سی سی آئی غلام محی الدین خان، صدر گُڈس اینڈ ٹرانسپورٹ کمپنی ایسوسی ایشن محمد صدیق رونگہ اور کئی دیگر زعماء بھی شامل تھے۔دریں اثناء وادی کے ہول سیل و پرچون ڈیلروں کے ایک وفد ن

چیئر مین جے کے بنک سمیت کئی وفود شرما سے ملاقی

   سری نگر//جموں کشمیر بنک کے چئیر مین پرویز احمد نے گورنر کے صلاحکار کے کے شرما کے ساتھ ملاقات کر کے ریاست کے فائنانشل منظر نامے سے متعلق کئی امور پر تبادلہ خیال کیا ۔ صلاحکار نے کہا کہ بنک نے ریاست کی اقتصادی ترقی میں اہم رول ادا کیا ہے اور بنک نے بے روز گاری کے مسئلے سے نمٹنے کیلئے بھی اہم کام کرتے ہوئے ریاست کے ہزاروں نوجوانوں کو روز گار فراہم کیا ہے ۔ میٹنگ کے دوران چئیر مین موصوف نے مختلف معاملات ابھارے جن پر غور کرنے کی صلاحکار نے یقین دہانی کرائی ۔ دریں اثنا سابق اراکین قانون سازیہ یاور دلاور میر اور اشرف میر نے بھی صلاحکار سے ملاقات کر کے اپنے اسمبلی حلقوں سے متعلق کئی مسائل صلاحکار کی نوٹس میں لائے ۔ صلاحکار نے ان معاملات پر غور کرنے کی یقین دہانی کرائی ۔ علاوہ ازیں وادی کے مختلف علاقوں سے آئے ہوئے کئی عوامی وفود نے بھی صلاحکار سے ملاقات کر کے اپنے مطالبات اُن کے س

جیو کو تین ممتاز ایوارڑ زسے نوازا گیا

نئی دہلی//  موبائل خدمات فراہم کرنے والی ریلائنس جیو انفوکوم لمیٹڈ کو ممتاز گولڈن گلوب ٹائیگرس ایوارڈ۔2019سے نوازا گیا ہے ۔ ریلائنس جیو کو موبائل خدمات فراہم کرانے میں سرفہرست رہنے ، انڈیا کا اسمارٹ فون اور گیمنگ پلیٹ فارم جیو کرکٹ پلے ایلانگ جیو کے لئے یہ ایوارڈ دیئے گئے ہیں۔ جیوڈیجیٹل سروس کو ‘ہر جگہ ہرشخص’ کو جوڑنے کے اس کے مشن کے پیش نظر یہ تین ایوارڈ دیئے گئے ہیں۔ ریلائنس جیوانفوکوم لمیٹڈ دنیا کی سب سے بڑی موبائل نیٹورک فراہم کرنے والی کمپنی ہے ۔ یہ ہندستان کی سب سے بڑی وائرلیس براڈبینڈ سروس فراہم کرنے والی کمپنی ہے ۔ جیو کرکٹ پلے ایلانگ (جے سی پی اے ) کو بہترین مہم۔ ایڈورٹائزنگ ان موبائل گیمنگ اینوائرنمنٹ ایوارڈ دیا گیا ہے ۔ جیو کرکٹ پلے ایلانگ کے ذریعہ لوگ اپنے موبائل اسکرین کو ٹیلی ویزن کی لائیو نشریات سے جوڑ سکتے ہیں۔ جیو فون کو انڈیا کا اسمارٹ فون ایوارڈ بھی

جنوبی کشمیر میں ریل اور انٹر نیٹ بند

سرینگر// اننت ناگ پارلیمانی نشست کے دوسر ے مرحلے کی پولنگ کے پیش نظر ضلع کولگام کے ساتھ ساتھ پورے جنوبی کشمیر میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات مکمل طور پر معطل رکھی گئیں تاہم جنوبی کشمیر کے کچھ حصوں میں سست رفتار والی ٹو جی موبائیل انٹرنیٹ خدمات کو چالو رکھا گیا ۔ادھر بارہمولہ اور جموں خطہ کے بانہال کے درمیان چلنے والی ریل خدمات پیر کو معطل رکھی گئیں۔ اننت ناگ پارلیمانی حلقہ کے لئے تین مرحلوں پر مبنی اِنتخابات کے دوسرے مرحلے کے تحت کولگام میں ہونے والی ووٹنگ کے پیش نظر پورے جنوبی کشمیر میں دوران شب ہی موبائیل انٹرنیٹ خدمات مکمل طور پر منقطع رکھی گئیں جبکہ جنوبی کشمیر کے کچھ مقامات پرٹو جی خدمات کو بحال رکھا گیا تھا۔انٹر نیٹ سروس بند رکھنے کے نتیجے میں کولگام میں پیشہ وارانہ زمہ داری انجام دینے والے صحا فیوں کے ساتھ ساتھ سماج کے مختلف طبقوں اور تجارتی اداروں کو سخت مشکلات کا سامنا کر نا پڑا۔ ا

۔1865 سے2019سے شالباف تحریک اور موجودہ جی ایس ٹی نظام

سرینگر// شہر خاص کے زالڈگر علاقے میںزائد از150برس قبل داغ شالوں پر اضافی ٹیکس کے اطلاق نے شالبافوں کی ایک منظم تحریک کو جنم دیا اور ڈوگرہ فوج کی فائرنگ سے28افراد جان بحق ہوئے،وہی ڈیڑ صدی گزر جانے کے بعد اس کاروبار سے جڑے لوگوں کا کہنا ہے کہ اشیاء و خدمات ٹیکس کے زمرے میں لانے سے اس صنعت کا آج بھی وہی حال ہے۔وادی میں ڈوگرہ فوج اگر چہ موجود نہیں ہے،تاہم انکے ساتھ جڑی ہوئی تلخ یادیں آج بھی موجود ہیں،کم از کم شہر خاص کے زالڈگر علاقے کے قلوب اور اذہان میں یہ یادیں آج بھی موجود ہیں۔1865میں ذالڈگر میں ڈوگرہ فوج کے ظلم و جبر کی داستان اس وقت بھی ان لوگوں کے قلب و جگر میں تازہ ہے،جب دن دھاڈے28شالبافوں کو گولیوں سے بھون ڈالا گیا۔ اس تحریک میں جان بحق شالبافوں اور جلائے وطن کئے گئے دستکاروں کو انکی154ویں برسی پر یاد کرتے ہوئے۔ کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹرئز نے شالباف تحریک کو موجودہ جی ای

کھنموہ صنعتی علاقے میں اچار بنانے والا یونٹ سربمہر

سرینگر// ڈرگس اینڈ فوڈ کنٹرول محکمہ نے کھنموہ صنعتی علاقے میںکئی فوڈ مینو فیکچرنگ یونٹوں کا معائنہ کیا۔جس دوران ایک اچاربنانے والے یونٹ کو سربمہر کیا گیا ۔قصورواریونٹ کو اچار کی زائد المیعاد بوتلوں پر تازہ لیبل چسپاں کرنے میں ملوث پایا گیا۔یونٹ سے ضبط کئے نمونوں کو سانٹیفک ٹیسٹنگ کے لئے بھیج دیا گیا ہے۔معائنے کے ٹیم کی قیادت اسسٹنٹ کمشنر فوڈ سیفٹی کررہے تھے ۔    

شاہراہ قدغن سے تاجروں کو شدید نقصانات | لائیو سٹاک اور اشیائے خوردنی کی سپلائی بحال رکھی جائے:شاہ فیصل

سرینگر// جموں وکشمیر پیپلز مومنٹ کے چیئرمین شاہ فیصل نے کہاہے کہ شاہراہ پر دو روزہ پابندی کے دوران کم سے کم لائیو سٹاک ،سبزیوں اور دودھ وغیرہ جیسی اشیاء کو مستثنی رکھا جائے تاکہ اس مال کو نقصان نہ ہو اور لوگوں کو روز مرہ کی ضروریات کی قلت کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔شاہ فیصل نے کہاکہ انہیں ہائے وے سے ایک کال موصول ہوئی جس میں کہا گیا کہ بھیڑ اور دیگر لایو سٹاک سے بھری ٹرک چار روز سے درماندہ ہے اور اب ان کے پاس مویشیوں کو کھلانے کیلئے چارہ بھی نہیں بچا ہے جس کے سبب لائیو سٹاک کو شدید نقصان ہورہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ ہائے واے قدغن سے چھوٹے تاجروں کو زیادہ نقصان کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔انہوں نے حکومت سے اپیل کی کہ کم سے کم لائیو سٹاک اور تازہ سبزیوں اور دودھ کی سپلائی کو بحال رکھا جائے تاکہ لوگوں کو مشکلات سے چھٹکارا دلایا جاسکے ۔  

جموں۔سرینگر شاہراہ تجارت و سیاحت کیلئے سوہان روح

سرینگر//کشمیراکنامک الائنس کے چیئرمین محمدیاسین خان نے سرینگرجموں شاہراہ کے بندرہنے پر تشویش کااظہار کیا۔ایک بیان میں خان جوکشمیرٹریڈرس اینڈ مینوفیکچررس فیڈریشن کے صدربھی ہیں،نے کہا کہ پچھلے ایک ہفتہ سے زیادہ ایک بھی مال بردارگاڑی کشمیر ہیں پہنچ پائی جس کی وجہ سے کشمیر میں ہاہاکار مچی ہے۔انہوں نے کہا کہ غلط طریقے سے شاہراہ کو توسیع دینے کی وجہ سے یہ متعدد روز بندرہی اورحکومت اس طرف توجہ دینے میں ناکام رہی اور رہی سہی کسراس شاہراہ پر دوروزسول ٹریفک کے چلنے پر پابندی نے پوری کردی۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی یہ ہے کہ چیف سیکریٹری کی اپیلوں کے باوجود حکومت شاہراہ کی توسیع کے کام کو جوابدہ بنانے میں بے دل ہے۔خان نے بیان میں کہا کہ خراب موسم نہیں بلکہ غیرموزوں طور سڑک کو توسیع دینے کی وجہ سے ہی یہ شاہراہ باربار بند ہوتی ہے اورحکومت اس پرخاموش ہے اورکشمیر میں اس پر جو ہاہاکارمچی ہے وہ جیسے حکومت

بنکوں کے غیر پیشہ وارانہ رویے کیخلاف 1,63,000شکایات درج :ریزرو بینک

ممبئی//ریزرو بنک آف انڈیا کے مطابق بنکوں کے خلاف لوگوں کی شکایات کا تسلسل متواتر بڑھ رہا ہے اور جون 2018تک بنک ثالث کے پاس درج شکایات کی تعداد1.63لاکھ تک پہنچ گئی ہیں ۔ان شکایات میں بیشتر کا تعلق بنکوں کے غیر پیشہ وارانہ طرز عمل سے ہے ۔ملک کے سب سے بڑے بنک ایس بی آئی کے خلاف47000شکایات جبکہ ایچ ڈی ایف سی بنک کے خلاف12000شکایات درج کی گئی ہیں ۔سٹی بنک کے خلاف1450شکایات درج کی جاچکی ہیں ۔آر بی آئی نے رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہاہے کہ 21برانچ آفسس نے1,63590شکایات وصول کی ہیں جوکہ سابقہ برس کے مقابلے میں24.9فیصد اضافہ ہے ۔    

اننت نا گ پارلیمانی نشست کی پولنگ | انٹرنیٹ معطل رکھنے سے صحا فیوں اور عوام کو مشکلات

سرینگر // اننت ناگ پارلیمانی نشست کی پولنگ کے پیش نظر جنوبی کشمیر کے بیشتر علاقوں میں منگل کوانٹرنیٹ خدمات معطل رکھی گئیں جس کے باعث صحافیوں اور عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔سی این ایس کے مطابق اننت ناگ پارلیمانی نشست کی پولنگ کے پہلے مرحلکے پیش نظر جنوبی کشمیر کے پلوامہ ش شوپیان، اننت نا گ اور کولگام میں منگل کو انٹرنیٹ خدمات کہیں مکمل تو کہیں جزوی طور پر منقطع رکھی گئیں۔ انٹر نیٹ سروس بند رکھنے کے نتیجے میں الیکشن کی کوریج کرنے والے صحا فیوں کے ساتھ ساتھ سماج کے مختلف طبقوں اور تجارتی اداروں کو سخت مشکلات کا سامنا کر نا پڑا ۔  

آ ر پار تجارت بند کرنا نامعقول فیصلہ:سوز

سرینگر//سابق مرکزی وزیر اور کانگریس لیڈر پروفیسر سیف الدین سوز نے کہاہے کہ آج کل ہندوستان میں ہر چیز پی ایم او کے اشارے پر ہی چلتی ہے ،اس لئے سرینگر ۔مظفر آباد کنٹرول لائن کے آر پار تجارت کو اچانک بند کر کے مودی حکومت نے دونوں طرف تجارت سے وابستہ لوگوں کیلئے مصیبت پیدا کی ہیں۔انہوں نے کہاکہ چونکہ آج کل پی ایم مودی کو 2019ء؁ کے انتخابات پر نظر مرکوز ہے، اس لئے کنٹرول لائن کے آر پار تجارت بند کرنے کے پیچھے اُس کی یہی سوچ کار فرما ہے۔سوز کے مطابق انہوں نے مرکز ی سرکار کے اچانک کنٹرول لائن کے آر پار یہ تجارت بند کرنے کے فیصلے سے پیدا ہونے والی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے اس تجارت سے وابستہ انجمنوں سے اس سلسلے میں بات چیت کی اور حقائق جاننے کی کوشش کی۔کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینوفیکچررس فیڈریشن اور سلام آباد کراس کنٹرول لائن ٹریدرس یونین کے ذمہ دار لوگوں سے پیدا شدہ صورت حال کو سمجھنے کی ک

کاچہامہ میلیال میں ژالہ بار ی ،فصلو ں کو نقصان

کپوارہ//کرالہ پورہ کے کا چہامہ میلیال علاقے میں قہر انگیز ژالہ باری کی وجہ سے فصلو ں کو زبردست نقصان پہنچا ہے ۔منگلوار کو اگرچہ دھوپ بھی تھی تاہم بعد دوپہر موسم نے کرو ٹ لی اور کرالہ پورہ علاقہ میں ہلکی بارشو ں کا سلسلہ شروع ہوا جبکہ کاچہامہ ،میلیال ،آوتھ کل ،بیرن بوٹھ اور دیگر علاقوں میں قہر انگیز ژالہ باری نے تباہی مچادی ۔کاچہامہ کے لوگو ں نے کہا کہ ژالہ باری کی وجہ سے فصلو ں کو زبردست نقصان پہنچ چکا ہے ۔مقامی لوگو ں نے کہا کہ گزشتہ سال بھی کاچہامہ میں زبردست ژالہ باری ہوئی اور انتظامیہ نے نقصان کا تخمینہ لگانے کے لئے ایک سروے بھی کی لیکن آج تک متاثرین کو کوئی معاوضہ نہیں دیا گیا ۔  

آر پار تجارت کی معطلی دم توڑتی معیشت کیلئے زہر ہلاہل

سرینگر// آر پار تجارت کوغیر معینہ عرصے تک معطل کرنے کے فیصلے کو معیشت کی قبر کھودنے کے مترادف قرار دیتے ہوئے تجارتی اتحاد کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینوفیکچررس فیڈریشن نے کہا کہ سابق وزیر اعظم ہند اٹل بہاری واجپائی کے باہمی اعتماد سازی کے اقدامات کو بھی ٹھنڈے بستے کی نذر کیا جا رہا ہے۔کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینو فیکچررس فیڈریشن کے صدر حاجی محمد صادق بقال نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ اچانک اور غیر متوقع طور پر آر پار تجارت کو بند کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ بہتر اور موثر طریقہ کار کے خلاف کوئی بھی تاجر نہیں ہے،تاہم تاجروں کو پہلے سے انتباہ کیا جانا چاہے تھاتاکہ انہیں نقصانات کا سامنا نہ کرنا پڑتا۔بقال نے کہا کہ جہاں سینکڑوں تاجروں کا روزگار براہ راست آر پار تجارت سے جڑا ہوا ہے وہیں ان سے منسلک ٹرک مالکان،ڈرائیوروں،مزدوروں اور تجارتی عملہ بھی متاثر ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ آر پار تجارت سابق وزیر

آر پار تجارت کی معطلی کے فیصلے پر نظر ثانی کی مانگ

سرینگر// عوامی کانفرنس کے چیر مین عبدالرشید شاہین نے سرینگر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مانگ کی کہ آر پار تجارت کی معطلی کے فیصلے پر نظر ثانی کی جائے۔ انہوںنے بتایاکہ قریب360تاجروں کے علاوہ تین سوٹرک اورسومزدور بھی اسکے ساتھ منسلک ہیں اور تجارت بند ہونے سے ان کا روزگار براہ راست متاثر ہوا ہے ۔انہوں نے کہا کہ باہمی اعتماد سازی کے تحت 2008میں یہ تجارت شروع ہونے کے بعد اب تک6900کروڑ روپے کی تجارت ہوئی ہے۔انہوںنے کہا کہ ابتدائی دور میں اس تجارت سے646 تاجر جڑے ہوئے تھے،تاہم بعد میں انکی تعداد کم ہوئی اور فی الوقت280تاجر سرکار کی طرف سے تسلیم شدہ ہیں۔انہوں نے بتایاکہ تاجر برادی آرپارتجارت کیلئے ایک موثراورفعال میکانزم بنانے کے حق میں ہیں لیکن تجارتی سرگرمیوں کومعطل کئے جانے سے پہلے متعلقہ تاجران کویہ موقعہ فراہم کیاجاناچاہئے تھاکہ وہ نقصان سے بچ سکیں۔انہوںنے بتایاکہ تاجروںنے اس