سمندری طوفان ’تتلی‘ اڑیسہ کے ساحل سے ٹکراگیا

بھوبنیشور/وشاکھاپٹنم//سمندری طوفان تتلی آج صبح اوڈیشہ کے ساحل سے ٹکراگیا۔اس طوفان کی شدت کافی زیادہ ہے جس کے نتیجہ میں کئی درخت اکھڑگئے اور طیاروں کی آمدورفت بھی متاثر ہوئی ۔محکمہ موسمیات نے کہاکہ جمعرات کی صبح تقریبا5.30بجے یہ طوفان ٹکرایا ۔اس طوفان کے سبب اوڈیشہ کے گنجم اور گجپتی اضلاع میں بجلی کی سپلائی بری طرح متاثر رہی اور سڑکوں سے رابطہ ٹوٹ گیا۔اوڈیشہ اسٹیٹ ایمرجنسی سنٹر کے افسر صورتحال پر نظر بنائے ہوئے ہیں۔اس طوفان کا اثر شمالی آندھراپردیش میں بھی دیکھا گیاجہاں ریاستی حکومت نے 18اضلاع میں ریڈ الرٹ جاری کردیا تھا۔طوفان کے زیراثر سریکاکلم،وجئے نگرم اور وشاکھاپٹنم میں شدید بارش ہورہی ہے جس کے پیش نظر حکومت نے ریڈ الرٹ جاری کردیا ہے ۔کلنگاپٹنم ،بھیمونی پٹنم،وشاکھاپٹنم،گنگاپورم کی بندرگاہ پر خطرہ کا نشان 10لگادیا گیا ہے ۔طوفان کے سبب ساحل سے اونچی لہریں اٹھ رہی ہیں۔طوفان سے خبردار ک

پاکستان نے آئی ایم ایف سے قرض کی باضابطہ درخواست کردی

اسلام آباد //بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کی سربراہ کرسٹین لگارڈ نے کہا ہے کہ پاکستان نے اپنے معاشی مشکلات سے نمٹنے کے لیے عالمی مالیاتی ادارے سے باضابطہ طور پر قرض فراہم کرنے کی درخواست کردی ہے۔کرسٹین لگارڈ نے یہ بات پاکستان کے وزیرِ خزنہ اسد عمر کے قیادت میں پاکستانی وفد سے جمعرات کو انڈونیشا کے جزیرے بالی میں ملاقات کی بعد اپنے ایک بیان میں کہی ہے۔کرسٹین لگارڈ نے کہا ہے کہ انہوں نے پاکستان کے وزیرِ خزانہ، پاکستان کے اسٹیٹ بینک کے گورنر اور ان کی اقتصادی ٹیم سے ملاقات کی جس کے دوران پاکستانی وفد نے پاکستان کو درپیش اقتصادی چیلنجز سے نبرد آزما ہونے کے لیے مالیاتی اعانت کی درخواست کی ہے۔اپنے بیان میں آئی ایم ایف کی سربراہ نے مزید کہا ہے کہ پاکستان کے لیے ممکنہ اقتصادی پیکج پر بات چیت کے لیے آئندہ چند ہفتوں کے دوران آئی ایم ایف کا ایک وفد اسلام آباد کا دورہ کرے گا۔پاکست

سیلنگ کے لئے پیشگی نوٹس ضرور ی نہیں : سپریم کورٹ

نئی دہلی//سپریم کورٹ نے راجدھانی دہلی میں سیلنگ پر کسی طرح کی راحت کا اشارہ دے ئے بغیر کہاکہ غیرقانونی اور ناجائز تعمیرات کی سیلنگ کے لئے پیشگی نوٹس دے ئے جانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ عدالت عظمی نے مرکزی حکومت سے اس اصول کو ختم کئے جانے پر جواب مانگا ہے جس کے حساب سے سیلنگ کرنے کے 48گھنٹے پہلے نوٹس دیا جاناضروری ہے ۔ جج مدن بی لوکر کی صدارت والی بنچ نے 27ہزار سے زیادہ غیرقانونی اور آلودگی پھیلانے والی فیکٹروں کو بند کرنے کا بھی حکم دیا۔ خیال رہے کہ گزشتہ سات ستمبر کو عدالت عظمی نے مرکزی حکومت کے ذریعہ قائم کردہ ایس ٹی ایف کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا تھا کہ لگتا ہے کہ ان پر دباو ہے ، خاص طورپر کاروباریوں کا۔ عدالت نے سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے کہاتھا کہ دہلی سے ممبئی نہیں بلکہ کنیاکماری تک کی دوری کا یہ ناجائز قبضہ ہے ۔ جج لوکر نے حکومت سے یہ یقینی بنانے کیلئے کہا کہ جہاں بھی رہائشی علا

رافیل میں ہوئی ہے دلالی،مودی استعفیٰ دیں :راہل

نئی دہلی//کانگریس صدر راہل گاندھی نے رافیل لڑاکا طیارے سودے کے معاملہ پر وزیر اعظم نریندر مودی پر براہ راست حملہ کرتے ہوئے جمعرات کو کہا کہ ملک کے وزیر اعظم بدعنوان ہیں اور وہ دفاعی سودے میں ہونے والی بدعنوانی میں سیدھے طور پر ملوث ہیں لہذا انہیں استعفی دے دینا چاہئے ۔مسٹر گاندھی نے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں منعقد پریس کانفرنس میں کہا "رافیل خریداری میں بڑا کرپشن ہوا ہے ۔ پارلیمنٹ کی مشترکہ کمیٹی سے اس کی جانچ کرائی جانی چاہئے ۔ تحقیقات سے دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔ اس میں وزیر اعظم نے سیدھے سیدھے بدعنوانی کی ہے اور ان کی بھی جانچ ہونی چاہئے ''۔کانگریس صدر نے کہا کہ رافیل خریداری میں جس طرح سے پبلک سیکٹر کی کمپنی ایچ اے ایل سے ٹھیکہ چھین کر کر صنعتکار انیل امبانی کی کمپنی کو یہ کام دیا گیا ہے اس سے صاف ہے کہ خود کو ملک کا چوکیدار بتانے والے مسٹر مودی انل امبا

پورا گاندھی خاندان بدعنوان

نئی دہلی//بھارتیہ جنتا پارٹی(بی جے پی) نے کانگریس کے صدر راہل گاندھی کے خاندان کو 'میڈل مین'کا خاندان بتاتے ہوئے آج کہا کہ گاندھی خاندان سپریم کورٹ ،فضائیہ کے سربراہ اور ملک کے اداروں پر یقین نہیں کرتا اور جھوٹ کے سہارے اپنی سیاست چمکانے اور ملک کی سکیورٹی کے ساتھ کھلواڑ کرنے میں لگا ہے ۔بی جے پی کے ترجمان ڈاکٹر سمبت پاترا نے یہاں ایک پریس کانفرنس میں مسٹر گاندھی کو 'مسخرا بادشاہ 'کی صفت سے متصف کرتے ہوئے کہا،''بچپن سے مسٹر گاندھی نے 'میڈیل مین' کی ثقافت دیکھی ہے اس لئے وہ اس سے باہرنہیں آپارہے ہیں۔ان کے والد مسٹر راجیو گاندھی 70 کی دہائی میں ایک دفاعی سودے میں سرکاری طورپر 'میڈیل مین'تھے ۔اس لئے وہ 'میڈیل مین شپ'سے واقف ہیں۔اس کے لئے وہ قومی سکیورٹی کے ساتھ کھلواڑ کرتے ہیں۔انہو ں نے مسٹر گاندھی کو چیلنج کیا کہ وہ وزیراعظم نریندرمودی پر

اُردو یونیورسٹی کے تحقیقاتی مجلہ ’’ادب و ثقافت‘‘ کا 7واں شمارہ منظر عام پر

حیدرآباد// مولانا آزاد نیشنل اُردو یونیورسٹی کے ریسرچ اینڈ ریفریڈ جرنل ’’ادب و ثقافت‘‘ کا 7واں شمارہ منظرعام پر آگیا ہے۔ یہ جریدہ یونیورسٹی کے ڈائرکٹوریٹ آف ٹرانسلیشن اینڈ پبلی کیشنز سے ہر6 ماہ پر شائع ہوتا ہے جس کے ایڈیٹر ڈائرکٹوریٹ کے ڈائرکٹر پروفیسر محمد ظفرالدین ہیں۔ آئی ایس ایس این کے حامل اس جریدے کو یونیورسٹی گرانٹس کمیشن کی بھی منظوری حاصل ہے اور ملک کے معتبر ناقدین و محققین اس کے قلمکاروں میں شامل ہیں۔ اب اِس جریدے کے سابقہ شماروں کی سافٹ کاپی اُردو یونیورسٹی ویب سائٹ پر بھی دستیاب ہے۔ جلد ہی تازہ شمارے کو بھی اپ لوڈ کردیا جائے گا۔ ویب سائٹ کا پتہ  http://www.manuu.ac.in/Eng-Php/Adabosaqafat.php ہے۔ ’’ادب و ثقافت‘‘اِس بار بھی مختلف النوع مضامین کے مجموعے کی صورت میں جاری کیا گیا ہے ۔336 صفحات پر مشتمل اِس شمارے میں 16 مضامی

عمران خان نے وزارت خزانہ سے 10 سال کے قرضوں کی تفصیلات طلب کرلیں

 اسلام آباد//وزیراعظم عمران خان نے وزارت خزانہ سے گزشتہ 10 سال کے دوران لیے گئے قرضوں کی تفصیلات طلب کرلیں۔اسلام آباد میں وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں معیشت سمیت مختلف اہم معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس کے دوران وزیراعظم نے وزارت خزانہ سے گزشتہ 10 سال کے قرضوں کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے کہا کہ پچھلی حکومتیں قوم کے اربوں روپے لوٹ کر کھاگئیں، وزارت خزانہ سے 10 سال کے قرضوں کی تفصیلات طلب کی ہیں، تاکہ معلوم ہوسکے کہ گزشتہ حکومتوں نے کیسے ملک پر قرضوں کا بوجھ ڈالا ہے اور قرضوں سے کون سے ڈیم اور بڑے منصوبے بنے۔عمران خان نے کہا کہ پاکستان پر 10 سال میں قرضوں کا بوجھ 6 سے بڑھ کر 30 ہزار ارب ہوگیا ہے، اس کا تفصیلی تخمینہ چاہیے کہ یہ پیسہ کہاں اور کن منصوبوں پر خرچ ہوا، اس کے نتیجے میں موجودہ حکومت 10 بار سوچے گی کہ اگر ہم قرضے لیں تو اس سے اتنا پ

تازہ ترین