کولکتہ میں ڈاکٹرس پر حملہ،تلنگانہ میں ڈاکٹرس کا احتجاج

حیدرآباد// کولکتہ میں جونیر ڈاکٹرس پر حملوں کے واقعات کے خلاف ملک گیر ہڑتال کی حمایت میں تلنگانہ کی جونیر ڈاکٹرس ایسوسی ایشن (جوڈا)کے ارکان نے مختلف اسپتالوں میں احتجاج کیا۔حیدرآباد کے عثمانیہ جنرل اسپتال میں ڈاکٹرس نے احتجاجی دھرنے دیئے جس میں ڈاکٹرس کی بڑی تعداد نے حصہ لیا۔ڈاکٹرس نے کولکتہ واقعہ اور سرکاری میڈیکل کالجس میں ٹیچنک فیکلٹی کی وظیفہ کی حد عمر میں مجوزہ اضافہ کی حکومت کی تجویز کے خلاف بھی احتجاج اور ہڑتال میں حصہ لیا۔ڈاکٹرس کی بڑی تعداد اسپتال کے اصل باب الداخلہ کے قریب جمع ہوئی جس نے اپنے مطالبہ کی حمایت میں حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔جونیر ڈاکٹرس ایسوسی ایشن کے صدرنشین ڈاکٹر پی ایس وجیندر نے کہاکہ گورنمنٹ میڈیکل کالجس کے ٹیچنگ فیکلٹی کے وظیفہ کی حد عمر میں اضافہ سے ریاست کے پی جی ڈاکٹرس سے شدید ناانصافی ہوگی۔جونیر ڈاکٹرس نے گاندھی اسپتال میں بھی احتجاج کیا اور جونیر ڈاکٹ

سادھوی پرگیہ کو پہلے دن ہی اپوزیشن کی مخالفت جھیلنی پڑی

نئی دہلی//عام انتخابات کے دوران ناتھو رام گوڈسے کے متعلق دئے گئے بیان کی وجہ سے تنازعہ کا شکار بی جے پی کی ممبر پارلیمنٹ سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کو آج لوک سبھا میں پہلے ہی دن اس وقت اپوزیشن کی مخالفت کا سامنا کرنا پڑا جب انہوں نے حلف لیتے وقت اپنے نام کے ساتھ چنمیانند اودھیشانند گری بھی جوڑا۔ دو خواتین مارشلوں کی مدد سے لوک سبھا سکریٹری جنرل کے پاس حلف لینے پہنچیں سادھوی پرگیا نے سنسکرت زبان میں حلف لیتے ہوئے اپنے نام کے ساتھ چنمیانند اودھیشانند گری بھی جوڑا جس کی کانگریسی اراکین نے زبردست مخالفت کی۔ مخالفت کرنے والے اراکین کاکہنا تھاکہ بی جے پی رکن حلف سے متعلق ضابطہ کی خلاف ورزی کرکے اپنی مرضی سے چنمیانند اودھیشانند گری کا نام شامل کررہی ہیں۔ پروٹیم اسپیکر ویریندر کمار نے اس پر سادھوی پرگیہ کی توجہ مبذول کی اورکہا کہ وہ ایشور یا صدق دلی کے نام پر حلف لیں۔ اس پر پہلی مرتبہ پارلیمنٹ پہ

حیدرآباد میٹرو کے لئے مزید کوچس اورٹر ینوں کی فریکینوسی میں ہوگا اضافہ

حیدرآباد //ایک شخص نے تارک راما راو کو ٹوئٹ کرتے ہوئے میٹرو ٹرین خدمات میں اضافہ کی ضرورت سے واقف کروایا تھا۔انہوں نے امیرپیٹ تا ہائی ٹیک سٹی روٹ ہجوم کی تصویر کو بھی اپنے اس ٹوئیٹ کے ساتھ پوسٹ کیا تھا۔انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں کہا تھا کہ ناگول تا ہائی ٹیک سٹی روٹ چار کوچس کی ضرورت ہے۔حیدرآباد میں میٹرو ٹرینوں میں سفر کرنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہوتا جارہا ہے جس کی مناسبت سے کوچس میں اضافہ کی ضرورت ہے۔تلنگانہ کی حکمران جماعت ٹی آرایس کے کارگزار صدر و سابق وزیر تارک راما راو¿ نے عہدیداروں کوحیدرآباد میٹرو ٹرینوں میں کوچس کی تعداد میں اضافہ کے ساتھ ساتھ جلد از جلد ٹرینوں کی فریکینوسی میں اضافہ کرنے کی سفارش کی ہے۔ انہوں نے اس خصوص میں پرنسپال سکریٹری محکمہ بلدی نظم ونسق و شہری ترقی اروند کمار سے خواہیش ظاہرکی ہے کہ وہ خدمات میں اضافہ کے اقدامات کریں۔کے ٹی آر نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا&

بہار میں لو سے مرنے والوں کی تعداد100 سے زائد

پٹنہ//بہار میں سخت گرمی سے آج مزید 17 لوگوںکی موت ہونے سے گذشتہ تین دنوں میں ریاست میں اس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 101 ہوگئی ہے۔ آفات مینجمنٹ محکمہ کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹے میں گیا میں سب سے زیادہ 11 لوگوں کی جبکہ اورنگ آباد میں تین ، جموئی میں دو اور نوادہ میں ایک شخص کی موت ہوئی ہے۔ جس سے گذشتہ تین دنوںمیں لوسے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر اورنگ آباد ضلع میں 32، گیا ضلع میں 31 ، نوادہ ضلع میں 12 ہوگئی ہے۔ اس کے علاوہ پٹنہ ضلع میں 11 بکسر میں سات اور بھوجپور ضلع میں پانچ لوگوں کی سخت گرمی سے موت کی اطلاع ہے۔ حالانکہ پٹنہ ، بکسر اور بھوجپور میں گرمی سے موت کی ابھی سرکاری طور پر تصدیق نہیں ہوئی ہے۔ دریں اثنائ سخت گرمی کو دیکھتے ہوئے نتیش حکومت نے ریاست کے سبھی سرکاری اور پرائیوٹ اسکولوں کو 22 جون تک بند رکھنے کا حکم دیا ہے۔ وہیں گیا ضلع انتظامیہ نے ضلع میں دفعہ 144 نافذکرتے ہوئے دن ک

لو کا قہر جاری:اورنگ آباد، گیا اور نوادہ میں 56افراد کی موت

 پٹنہ//بہار میں پڑ رہی شدید ترین گرمی میں لو لگنے کی وجہ سے اورنگ آباد، گیا اور نواد اضلا ع میں اب تک 56 افراد کی موت ہو چکی ہے ۔ سرکاری ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ ان اضلاع میں گزشتہ روز درجہ حرارت 46 ڈگری سیلسش تک پہنچ گیا تھا۔ اس دوران لو لگنے سے اورنگ آباد کے مختلف بلاکوں کے 30، ضلع گیا میں 19 اور ضلع نوادہ میں سات افراد کی موت ہو چکی ہے ۔ مرنے والوں میں زیادہ تر 60 سال سے زائد عمر کے لوگ شامل ہیں۔اورنگ آباد کے سول سرجن ڈاکٹر سریندر کمار سنگھ نے بتایا کہ شدید گرمی کی وجہ سے ضلع میں لو کا قہر جاری رہا، جس میں الگ الگ بلاکوں کے 30 افراد کی موت ہو گئی ۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع کے مختلف بلاکوں سے لو متاثرین 80 مریضوں کو علاج کے لئے گزشتہ روز صدر اسپتال لایا گیا تھا۔ان میں سے 30 کی موت ہو گئی جبکہ 10 کی حالت نازک تھی۔ لیکن بہتر علاج کے بعد ان میں سے چار کی حالت اب بہتر ہو گئی ہے ۔ تاہم

حج کمیٹی میں سودکی رقم کااستعمال ہوتاہے :چیئرمین ریاستی حج کمیٹی

  ممبئی//مرکزی حج کمیٹی کی جانب سے حجاج کرام کی خدمات کے لئے جورقم خرچ ہوتی ہے وہ سودکی رقم سے حاصل ہوتی ہے اس پرفوری طورپرپابندی عائدکی جانی چاہئے ۔ اس قسم کاسنسنی خیزالزام آج یہاں مہاراشٹرحج کمیٹی کے چیئرمین جمال صدیقی نے عائدکیاہے ۔اورمطالبہ کیاہے کہ اس ضمن میں فوری کارروائی کی جائے ۔ممبئی میں اخبارنویسیوں سے گفتگوکرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ مرکزی حج کمیٹی کا3؍ہزاردوسو کروڑروپیہ مختلف بینکوں میں فکس ڈپازٹ میں رکھاگیاہے اوراس سے جوسالانہ سودکی رقم حاصل ہوتی ہے اس سے حج کمیٹی کاکاروبار چلتاہے ۔جس میں حج کمیٹی کے ملازمین کی تنخواہ اوردیگرچیزیں شامل ہیں۔جمال صدیقی نے کہاکہ مرکزی حج کمیٹی کاسالانہ بجٹ ۷۰؍کروڑ روپیہ ہے اوربینک سے بطورسوداسے ۷۰؍سے ۷۲؍ کروڑروپیہ حاصل ہوتاہے ۔یہ رقوم عازمین حج کی تربیتی کیمپ میں بھی خرچ کیاجاتاہے نیزسرکاری طورپرجوحجاج مقامات مقدسہ کی زیارت کرتے ہیں ان

نئے چہروں کیساتھ پارلیمنٹ میں نئی سوچ آنے سے بنے گا نیا ہندوستان: مودی

  نئی دہلی//وزیر اعظم نریندر مودی نے 17 ویں لوک سبھا کے پہلے سیشن سے قبل شام میں تمام سیاسی پارٹیوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ میں بڑی تعداد میں نئے چہرے آئے ہیں تو اسی کے ساتھ نئی سوچ سے ہی نئے ہندوستان کی تعمیر ہوگی۔مسٹر مودی نے اتوار کو کل جماعتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن میں تمام افراد بہت سے مسائل اور مدعے لے کر گئے تھے ۔ عوام نے ووٹ دیا ہے اور ووٹ ملنے کے بعد ہم تمام نمائندے پورے ملک کے نمائندے ہو جاتے ہیں ۔ ہم چاہتے ہیں کہ نیا ہندوستان نئی سوچ کے ساتھ بنے ۔ پارلیمنٹ کی شروعات اچھے ماحول میں ہونی چاہیے ۔ پارلیمانی امور کے وزیر پرہلاد جوشی نے اجلاس کی اطلاع دیتے ہوئے بتایا کہ وزیر اعظم نے کہا کہ اس بار لوک سبھا میں بہت سے نئے چہرے آئے ہیں۔ نئے چہروں کے ساتھ نئی سوچ بھی آنی چاہیے ۔ ہم سبھی کو گذشتہ لوک سبھا کی مدت کار کے آخری دو سال میں جو ہوا اس پر

جونیئر ڈاکٹروں کی ہڑتال سے مریضوں کی حالت خراب

 کولکاتہ//مغربی بنگال میں این آر ایس اسپتال میں ایک ڈاکٹر کی پٹائی کے بعد مخالفت کی صورت میں ہڑتال پر گئے جونئر ڈاکٹر وں کی ہڑتال کے چھٹے دن مریضوں کی حالت خراب ہے اور وزیراعلی ممتا بینرجی کے بار بار اپیل کرنے کے بعد بھی ڈاکٹرکام پر لوٹنے کے لئے تیار نہیں ہیں۔ریاست میں سبھی سرکاری اسپتالوں میں اوپی ڈی،ریگولر او ٹی اور دیگر خدمات ٹھپ ہیں لیکن ایمرجنسی خدمات پر اس کا کوئی اثر نہیں ہے ۔ان ڈاکٹروں کے غیر انسانی ہونے کا ایک پہلو یہ سبھی سامنے آیا ہے کہ مدنا پور میں ہڑتال کی وجہ سے مناسب علاج نہ مل پانے کی وجہ سے ایک نوزائدہ بچے کی موت ہوگئی ہے ۔اس کے والدین نے بچے کی لاش لے کر ان ڈاکٹروں کے سامنے مظاہرہ کیا لیکن شاید اس کا بھی ان پر کوئی اثر نہیں ہوا۔سب سے افسوس ناک بات یہ ہے کہ دارالحکومت کے ایمس اور صفدر جنگ اور دیگر اسپتالوں کے ڈاکٹر ہڑتال پرگئے ان ڈاکٹروں کے تئیں متحد نظر آرہے ہ

تازہ ترین