تازہ ترین

اپوزیشن کے ہنگامے کے باعث راجیہ سبھا کی کارروائی بدھ تک ملتوی

نئی دہلی// رافیل اور روسٹر جیسے معاملے پر اپوزیشن کے ہنگامے کی وجہ سے مسلسل دسویں دن راجیہ سبھا ٹھپ رہی اور سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے سربراہ اکھلیش کو حراست میں لئے جانے کی مخالفت میں پارٹی اراکین نے منگل کو زبردست ہنگامہ کیا جس سے ایوان کی کارروائی دو بار ملتوی ہونے کے بعد بعد دن بھر کے لئے ملتوی کردی گئی تھی۔کل بجٹ سیشن کا آخری دن ہے اور ایوان میں نہ ہی صدارتی خطاب پر شکریہ کی تحریک شروع ہوئی اور نہ ہی بجٹ پر۔ایک بار ملتوی ہونے کے بعد جب وقفہ طعام کے بعد ایوان کی کارروائی شروع ہوئی تو ایس پی اور ترنمول کے رکن حکومت کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے چیئرمین کی کرسی کے پاس پہنچ گئے ۔ڈپٹی اسپیکر ہری ونش نے ممبران سے بار بار خاموش رہنے کی درخواست کی لیکن ارکان خاموش نہیں ہوئے ۔ اسی دوران شور شرابے میں ہی مسٹر ہری ونش نے مرکزی وزیر مملکت برائے خزانہ شیو پرتاپ شکلا کو بین الاقوامی مالیاتی سروس

کانگریس رافیل پر عوام کو گمراہ کررہی ہے :راجناتھ

نئی دہلی، 12 فروری (یو این آئی) وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے اپوزیشن کانگریس پر رافیل طیارہ سودہ کے معاملہ پر عوام کو گمراہ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے اس پر بحث کی اس کی مانگ ٹھکرادی جس پر کانگریس نے ایوان سے واک آوٹ کیا۔مسٹر سنگھ نے ایوان میں کانگریس کے لیڈر ملک ارجن کھڑگے کے یہ معاملہ اٹھائے جانے پر کہاکہ رافیل پر لوک سبھامیں بحث ہوچکی ہے ۔ سپریم کورٹ نے بھی اس پر اپنا فیصلہ دے دیا ہے ۔ اس لئے اس پر پھر سے بحث کی ضرورت نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کے اراکین بار بار جھوٹ بول کر اسے سچ ثابت کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ وہ عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ سیاست عوام کی آنکھوں میں دھول جھونک کر نہیں ، عوام کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر ہوتی ہے ۔ان کے جواب سے نامطمئن مسٹر کھڑگے نے کہاکہ آپ کے وزیراعظم میں ہمت نہیں ہے ۔ انہوں نے اس پر ایوان میں بیان بھی نہیں دیا ہے ۔ اس لئے ہم واک آوٹ کررہے

دہلی کے ارپت ہوٹل میں آگ کی واردات

نئی دہلی// قومی راجددھانی دہلی کے قرول باغ میں واقع ہوٹل ارپت پیلیس میں منگل کی صبح آگ لگ جانے سے تین خواتین اور ایک بچہ سمیت 17 لوگوں کی موت اور تین دیگر جھلس گئے جبکہ 25لوگوں کو بحفاظت باہر نکال لیا گیا۔مرنے والوں میں سے 13لوگوں کی لاشیں رام منوہر لوہیا اسپتال میں رکھی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ دو لوگوں کی لاشیں لیڈی ہارڈنگ اسپتال میں اور باقی دو لوگوں کی لاشیں بی ایل کپور اسپتال میں ہیں۔ زخمیوں میں ایک خاتون بھی شامل ہے جن کا علاج چل رہا ہے ۔فائر بریگیڈ کے افسر نے بتایا کہ آج صبح 4,35بجے ہوٹل ارپت پیلیس میں آگ لگنے کی اطلاع ملی۔ آگ کی اطلاع ملتے ہی فوری طورپر فائر بریگیڈ کی گاڑیوں کو موقع پر بھیجا گیا۔ راحت اور بچاو مہم ختم ہوگئی ہے ۔ مدیران یہاں سے سابقہ سلسلہ جوڑ لیں۔    

مرکزی حکومت پھوٹ ڈالو حکومت کرو پر عمل کر رہی ہے :چندرا بابو

نئی دہلی// آندھراپردیش کے وزیراعلی وتلگودیشم پارٹی کے سربراہ این چندرابابونائیڈو نے الزام لگایا کہ مرکزی حکومت پھوٹ ڈالو حکومت کرو پر عمل کر رہی ہے ۔مودی سیاسی جماعتوں کے لیڈروں کو بھی نشانہ بنارہے ہیں اورملک کو شدید نقصان پہنچا رہے ہیں۔جب کبھی حقیقی مطالبات کی طرف توجہ دلائی جاتی ہے تو وہ انٹلی جنس ،سی بی آئی،ای ڈی جیسی سرکاری ایجنسیوں کا استعمال کرتے ہیں تاکہ قیادت کا خاتمہ کیاجاسکے ۔آیا وہ بیورو کریسی ہو،میڈیا ہو ،سیاسی جماعتیں ہوں وہ قیادت کا خاتمہ کر رہے ہیں۔ہندوستان میں قیاد ت کے خاتمہ کا ان کو کوئی حق نہیں ہے ۔ان کے پاس کوئی قائدانہ صلاحیت او ر مناسب تعلیم بھی نہیں ہے ۔نہ ہی وہ کوئی ترقی کا ایجنڈہ رکھتے ہیں۔چندرابابونائیڈو جنہوں نے گزشتہ روز آندھراپردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے کا مطالبہ اور اے پی تنظیم نو قانون میں کئے گئے تمام وعدوں کو پوراکرنے پرزور دیتے ہوئے قومی دارالحکو

خورشید گنائی مرکزی وزیر سیاحت سے ملاقی

نئی دلی//گورنر کے مشیر خورشید احمد گنائی نے جو ریاستی حکومت کے محکمہ سیاحت کے انچارج بھی ہیں، نے یہاں مرکزی وزیر سیاحت کے۔جے۔الفونز کے ساتھ ملاقات کی اور ریاست میں سیاحتی سرگرمیوں اور اُنہیں فروغ دینے سے متعلق معاملات پر تبادلہ خیال کیا۔مشیر موصوف نے مرکزی وزیر کوریاست کے تینوں خطوں میں سیاحتی ڈھانچے کو ترقی دینے کے سلسلے میں کئے جارہے اقدامات کے بارے میں جانکاری دی۔مشیر موصوف نے وزیر موصوف سے درخواست کی کہ وہ ریاست جموں و کشمیر میں سیاحت کے فروغ یقینی بنانے میں اپنا تعاون پیش کریں اور وزارت برائے بین الاقوامی سیاحت بالخصوص ساوتھ ایسٹ ایشین ممالک جہاں سے سیاح بڑی تعدادمیں ریاست میں وارد ہوتے ہیں کے سلسلے میں ریاستی حکومت کو امداد فراہم کریں۔مشیر نے جموں ۔ کٹرہ سرکٹ میں پلگرم ٹوراِزم کو فروغ دینے کی ضرورت اُجاگر کی۔ اُنہوں نے پی ایم ڈی پی کے تحت پہلے سے ہی پیش کئے گئے پروجیکٹوں کی منظور