تازہ ترین

گور نمنٹ مڈل سکول منگناڑ بنیادی سہولیات سے محروم

 منجا کوٹ //تحصیل منجاکوٹ کا گور نمنٹ مڈل سکول منگناڑ خستہ حالی کا شکا ر ہو چکا ہے جبکہ مذکورہ سکول میں تعلیم عملے کی قلت کی وجہ سے بچوں کی پڑھائی بُری طرح سے متاثر ہورہی ہے ۔مقامی لوگوں کے مطابق مڈل سکول کی عمارت اس وقت خستہ حالی کی شکار ہوچکی ہے جس کی وجہ سے بچوں کو پڑھائی جاری رکھنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ سکول میں سائنس ،ریاضی شعبوں کا کوئی بھی ٹیچر تعینات نہیں کیا گیا ہے جس کی وجہ سے سکول میں زیر تعلیم 80سے زائد بچوں کو دقتوں کا سامنا ہے ،اسی طرح سکول میں ہیڈ ماسٹر کی کرسی بھی گزشتہ دو برسوں سے خالی پڑی ہوئی ہے جبکہ کمپیوٹر لیبارٹری ودیگر سہولیات بھی میسر نہیں کی گئی ہیں ۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے ہے سکول کی عمارت کے سلسلہ میں مقامی لوگوں کی جانب سے کئی مرتبہ اعلیٰ انتظامیہ سے اپیل بھی کی گئی تاہم اس کے باوجود بھی اس وقت عمارت میں بچوں کے بیٹھنے ک

آجوٹ میں زمینوں کی آبپاشی نہر عرصہ دراز سے بند

پونچھ// آبی زمینوں کی سینچائی کے لئے اگر چہ سرکار کی جانب سے محکمہ آبپاشی تشکیل دیا گیا ہے لیکن ضلع پونچھ میں زمینی سطح پر مذکورہ محکمہ کی کارکردگی برائے نام ہی ہے جس کی وجہ سے متعلقہ محکمہ کے زیر تحت آنے والی اکثر نہریں خشک اور خستہ حال ہو چکی ہیں ۔ حلقہ پنچایت اجوٹ میں محکمہ آبپاشی کی جانب سے زمینوں کی سینچائی کے لیے جو نہر بنائی گئی ہے وہ لگ بھگ بند ہی ہو چکی ہے۔ اس نہر کی خستہ حالت ہے کی وجہ سے وہاں کی آبی زمینی بنجر ہوتی جارہی ہیں ۔مقامی لوگوں نے متعلقہ محکمہ اور ضلع انتظامیہ کیخلاف احتجاج کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ مذکورہ نہر کی جانب کوئی توجہ نہیں دی جاتی جس کی وجہ سے ان کی زمین خشک ہو چکی ہیں ۔کسانوں نے بتایا کہ اس سلسلہ میں انہوں نے کئی مرتبہ انتظامیہ کے اعلیٰ افسران سے رجوع کیا ہے لیکن اس کے باوجود بھی اس طرف کوئی توجہ نہیں دی گئی ۔اس موقعہ پر نائب سرپنچ سنیل کمار نے بت

مینڈھر میں شیئرمارکیٹ فراڈ معاملہ

مینڈھر //مینڈھر میں شیئر مارکیٹ کے نام پر جعلی طریقہ سے لوگوں سے پیسے جمع کررو پوش ہو نے والوں کیخلاف پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔شیئر مارکیٹ کے نام پرپیسہ جمع کر وانے والے تین افراد کی شکایت پر مینڈھر پولیس اسٹیشن میں ایک کیس درج کیا گیا ہے ۔اس سلسلہ میں پولیس کو ملی ایک شکایت کے بعد پولیس نے طارق چوہدری ،امتیاز چوہدری اور مکھنہ چوہدری کیخلا ف مقدمہ درج کر تے ہو ئے مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں ۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ لیٹروں کی جانب سے مینڈھر میں ایک شیئر مارکیٹ کے نام پر ایک جعلی بینک کھولا گیا تھا لیکن پیسہ جمع کر نے کے بعد وہ فرار ہو گئے تھے ۔اس معاملے پر مقامی لوگوں نے انتظامیہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ انہوں نے مبینہ طور پر لیٹروں کا ساتھ دیاجس کی وجہ سے جعلی بینک میں کچھ ہی دنوں میں اربوں روپے جمع کئے گئے اور بعد میں لیٹرے فرار ہو گئے تاہ

ڈگری کالج مینڈھر میں سٹاف کی قلت

مینڈھر//گورنمنٹ ڈگری کالج مینڈھر میں کئی اسامیاں خالی پڑی ہوئی ہیں جس کی وجہ سے بچوں کی پڑھائی متاثر ہو رہی ہے ۔ڈگری کالج میں تعلیم سرگرمیوں کو معیاری بنانے کیلئے لیکچراروں کی 26اسامیاں منظور کی گئی ہیں جبکہ اس وقت صرف 17لیکچرار ہی تعینات کئے گئے ہیں اسی طرح نان ٹیچنگ سٹاف کی بھی قلت پائی جارہی ہے ۔کالج پرنسپل ڈاکٹر عبدالروف نے بتایا کہ کالج میں ٹیچنگ او ر نان ٹیچنگ سٹاف ممبران کی قلت پائی جارہی ہے جس کی وجہ سے پورا تعلیمی نظام متاثر ہو رہاہے ۔انہوں نے بتایا کہ اس وقت کالج میں نان ٹیچنگ ،درجہ چہارم کی مجموعی طورپر 18پوسٹ منظور کی گئی ہیں جن میں سے صرف 9ہی تعینات ملازمین ہیں ۔مقامی لوگوں نے ریاستی انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ مینڈھر کالج میں سٹاف کی قلت کی وجہ سے بچوں کی پڑھائی متا ثر ہو رہی ہے لیکن انتظامیہ کی جانب سے اس طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے ۔تعظیم حسین شاہ نام

گھوڑانک کی عوام گزشتہ تین ماہ سے پانی سے محروم

منڈی//تحصیل منڈی کے علاقہ گھوڑانک کی عوام گزشتہ تین ماہ سے پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں جس کی وجہ سے وہ کئی کلو میٹر کی پیدل مسافت طے کر کے پینے کا صاف پانی لانے پر مجبور ہو چکے ہیں ۔ تحصیل صدر مقام منڈی سے دس کلو میٹر دوری پر واقع گھوڑانک کی عوام گزشتہ تیں ماہ سے پینے کے پانی کے لیے ترس رہے ہیں ایک ہزار سے زائد نفوس پر مشتمل اس گاوں کے زن و مرد کو چار کلو میٹر پیدل سفر کر کے اپنے گھروں کے لئے پینے کا پانی جمع کر نا پڑتا ہے ۔گھوڑا نک علاقہ پنچایت پلیرہ اے کے تحت پڑتا ہے۔ سرپنچ گھوڑانک اعجاز احمد تانترے نے کشمیر عظمی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کی پنچایت پلیرہ اے میں پڑنے والا علاقہ گھوڑانک کی عوام کو پانی نہ ہونے کی وجہ سے کافی مشکلات کا سامناکرنا پڑ رہا ہے ان کا کہنا تھا کہ اس سلسلہ میں انہوں نے متعلقہ محکمہ کے اعلی آفسران سے بھی رجوع کیا تاہم اس سلسلہ میں کوئی بھی مثبت جواب نہیں ملا

اسسٹنٹ لیبر کمشنر پونچھ کا دورہ سرنکوٹ

سرنکوٹ//اسسٹنٹ لیبر کمشنر پونچھ نے سرنکوٹ کا دورہ کر کے نجی سکولوں کا معائینہ کیا ۔اس دوران انہوں نے نجی سکولوں میں تعینات عملے کو فراہم کردہ اجرت کے سلسلہ میں بھی جانکاری حاصل کی ۔ان سکولوں میں درجہ چہارم کے ملازمین کی اجرت کم ہو نے پر انہوں نے سکول انتظامیہ کو انتباہ دیتے ہوئے کہاکہ درجہ چہارم میں کام کر رہے عملے کو معیاری اجرت دی جائے ۔اس کے علا وہ انہوں نے میڈیکل سٹوروں کے سی فارم ودیگر کاغذات کا معائینہ کرتے ہو ئے تلقین کی کہ وہ اپنے کا غذات مکمل رکھیں ۔اسسٹنٹ لیبر کمشنر پونچھ جہا نگیر خان نے بتایا کہ انہوں نے اس دورے کے دوران نجی سکولوں میں عملے کو درپیش مسائل کے علا وہ پرنائی پروجیکٹ میں کام کر رہے ملازمین کے مطالبات بھی سننے ،انہوں نے کہاکہ پٹیل کمپنی کیخلاف کافی شکایت تھیں جس کے چلتے مذکورہ کمپنی کو نوٹس جاری کیا گیا ہے ۔  

یوتھ کانگریس لیڈر نے پہاڑی ہوسٹل کے بچوں میں کتابیں تقسیم کیں

راجوری//انڈین یوتھ کانگریس کے نیشنل کو آرڈینٹر اور اتر پردیش جنوب کے انچارج افتخاری احمد نے پہاڑی ہوسٹل راجوری کے بچوں میں کتابیں تقسیم کیں ۔اس دوران یوتھ کانگریس لیڈر کی جانب سے 9ویں اور 10جماعت کے 50سے زائد بچوں میں کتابیں تقسیم کیں ۔اس موقعہ پر ہوسٹل کے اراکین کیساتھ ساتھ متعدد پارٹی کارکن بھی مو جودتھے ۔اس موقعہ پر بولتے ہوئے انڈین یوتھ کانگر یس لیڈر نے کہاکہ ریاست میں پہاڑی ایڈ وائزری بورڈ خستہ حالی کا شکار ہو چکا ہے جس کی وجہ سے ہوسٹلوں میں رہنے والے بچوں کو شدید مشکلات کا سا منا کرنا پڑرہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ 8ویں 9ویں اور 10ویں جماعت کے 60طلباء کو مفت کوچنگ فراہم کرنے کا بند و بست کیا جائے گا ۔انہوں نے راجوری سیول سوسائٹی کے اراکین سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ غریب طبقہ کے طلباء کی مدد کیلئے اپنا رول ادا کریں ۔اس موقعہ پر وارڈن پہاڑی ہوسٹل راجوری کیساتھ ساتھ اسسٹنٹ وارڈن اور یوتھ

مزید خبرں

سوشل میڈیا پر حساس تبصرہ  سرپنچ سمیت 3افرد کیخلاف مقدمہ درج  سمت بھارگو    راجوری //سرحدی ضلع راجوری میں سوشل میڈیا پر احساس تبصرہ کر نے کے سلسلہ میں سرپنچ سمت 3افراد کیخلاف مقدمہ درج کر لیا ۔ایس ایس پی راجوری یگل منہاس نے بتایا کہ سرپنچ لیاقت علی نے سوشل میڈیا پر ایسا مٹریل شائع کیا جس کی وجہ سے امن و امان کی صورتحال خراب ہو سکتی تھی تاہم اس پر دیگر دو افراد نے احساس تبصرہ کیا جس پر کارروائی عمل میں لائی گئی ۔انہوں نے کہاکہ اس سلسلہ میں پولیس کی جانب سے سرپنچ فتح پور ڈانہ لیاقت علی ،شوکت بہتاب اور چوہدری نصیر احمد کیخلاف ایک مقدمہ زیر ایف آئی آر نمبر 281/2019پو لیس اسٹیشن راجوری میں درج کر کے مزید تحقیقات شروع کی گئی ہیں۔    سرمائی زون کے تعلیمی اداروں میں اوقات کار کی تبدیلی کا مطالبہ محمد بشارت    کوٹرنکہ