حد متارکہ کے قریبی گاؤں سیال کی 3کلو میٹر سڑک خستہ حالی کا شکار

  تعمیر 2002میں شروع ہوئی، 17سال بیت جانے کے بعد بھی نامکمل    منڈی//سرحدی ضلع پونچھ کے حدمتارکہ کے قریبی گاؤں کھڑی سیال کی سڑک کا کام سدبھاونا اسکیم کے تحت فوج نے 2002 میں شروع کروایا تھالیکن ابھی تک تعمیر مکمل نہ ہونے کی وجہ سے مقامی لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑا ۔مقامی لوگوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ سڑک کی کٹائی کے بعد اس طرف کو ئی دھیان نہیں دیا گیا جس کی وجہ سے مذکورہ سڑک پر گاڑیوں کا چلنا بھی مشکل ہو گیا ہے ۔مقامی لو گوں نے کہاکہ 2005میں انتظامیہ کی جانب سے مذکورہ سڑک کی تعمیر کا کام محکمہ تعمیر ات عامہ کے سپرد کیا گیاجس پر ابھی تک کوئی بھی تعمیرات نہیں کی گئی اور نہ ہی اس پر تارکول بچھائی گئی جس کی وجہ سے آج اس سڑک کی حالت انتہائی خستہ ہو چکی ہے ۔ کھڑی کرماڑہ مین سڑک سے سیال تک محض 3 کلو میٹر سڑک کی تعمیر کا کام 17 سال کے طویل عرصہ کے گزر جا

سب سنٹر ناڑ بالاکوٹ 2011سے زیر تعمیر

  مینڈھر//بالاکوٹ بلاک کی ناڑ پنچائت میں 8برسوں سے ایک ہیلتھ سب سنٹر زیر تعمیر ہے تاہم متعلقہ محکمہ کی لاپرواہی کی وجہ سے مذکورہ عمارت کو ابھی تک مکمل نہیں کیاجاسکا جس کی وجہ سے مقامی لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ پر الزام عائد کرتے ہو ئے کہاکہ عمارت مکمل نہ ہونے کی وجہ سے محکمہ ہیلتھ کی جانب سے علا قہ میں اپنا ہسپتال ایک کرائے کے کمرے میں رکھا ہو ا ہے ۔انہوں نے کہا کہ علاقہ میں محکمہ صحت کے غیر معیاری نظام کی وجہ سے مقامی لوگوں کو کسی بھی مشکل وقت میں کئی کلو میٹر مسافت طے کر کے راجوری یا سرنکوٹ علاج معالجہ کیلئے جا نا پڑتا ہے ۔اس ہسپتال کی تعمیر 2011میں شروع کی گئی تھی جبکہ ابھی تک اس عمارت پر مجموعی طور پر 32لاکھ روپے سے زائد رقم خرچ ہو نے کا تخمینہ ہے تاہم عمارت کو پوری طرح سے مکمل نہیں کیا جا سکا ہے ۔پنچایت ناڑ کے یوتھ لیڈر احسان

راجوری اور نوشہرہ میں بھیم رائو امبیڈکر کو خراج عقیدت پیش

  راجوری //سرحد ی ضلع راجوری میں بھیم رائو امبیڈاکر کا 128ویں برسی منائی گئی ۔اس موقعہ پر راجوری اور نوشہرہ میں تقریب کا اہتمام کیا گیا تھاجس کے دوران ضلع انتظامیہ کیساتھ ساتھ معززین نے ماہر قانون کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ۔ضلع ہیڈ کوارٹر راجوری میں اس سلسلہ میں گورو روی داس سبھا کی جانب سے امبیڈاکر پارک راجوری میں ایک تقریب کا اہتمام کیا گیا جس کے دوران ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری محمود اعجاز اسد بطور مہمان خصوصی شامل ہوئے ۔اپنے خطاب میں ڈی سی راجوری نے ڈاکٹر بی آر امبیڈاکر کو خراج عقیدت پیش کرتے ہو ئے کہا کہ وہ ملکی جمہوریت کے ایک اہم ستون ہیں ۔انہوں نے کہاکہ مرحوم کے پیغام کو عام کرنے او ر سماجی میں برابری کیساتھ ساتھ پسماندہ طبقہ کی فلاح و بہبود کیلئے ہرایک فردکو اپنا رول ادا کر نا چاہیے ۔اس موقعہ پر پہاڑی ایڈوئزری بورڈ کے سابقہ چیئر مین کلدیپ راج گپتا ،ڈا

امام بارگاہ سلواہ بنولہ میں یوم حسین ؑ کی تقریب

  پونچھ//امام بارگاہ سلواہ بنولہ میں انجمن حسینی کے زیر اہتمام یوم حسین ؑ کے عنوان سے ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا، جس میں کشمیر کے راجوری اور پونچھ اضلاع سے عاشقان محمد و آل محمد ﷺ نے شرکت کی۔دوران محفل مقامی شعرائے کرام اور دیگر ثناخواں نے منقبت ، سلام و نوحہ کا نذرانہ پیش کیا۔ اس موقعہ پر خصوصی خطاب میں  عالمی شہرت یافتہ خطیب مولانا شیخ غلام رسول نوری نے کہا کہ اللہ نے ہمیں سب سے بڑی نعمت حیات دی  ہے۔انہوں نے کہا یہ عظیم نعمت اللہ نے عطا کی ہے اور وہی اللہ قرآن میں کہہ رہا ہے کہ’’ دوڑ کر جائونبیؐ کے پاس وہ تمہیں زندگی دے گا‘‘ انہوں نے کہا ہے کہ حسینؑ کو پہچاننے کے لئے مقام محمدی ؐ کو پہچاننا ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک دفعہ کاذکر ہے کہ ایک اصحاب رسول نماز پڑھ رہے تھے کہ رسول اکرمؐ نے انھیں آواز دی تو صحابی نے نماز ختم کی اور نبی کے پاس

پونچھ میں بیساکھی کا تہوار روایتی جوش و خروش سے منایا گیا

 پونچھ//ریاست کے دیگر حصوں کی طرح سرحدی ضلع پونچھ میں بھی بیساکھی کاتہوار روایتی جوش وخروش کے ساتھ منایاگیا۔اس موقعہ پر گورودواروں میں خصوصی تقاریب کا اہتمام کیا گیا تھا ۔ضلع میں سب سے بڑی تقریب سنت پورہ ڈھیرہ ننگالی صاحب میں منعقد کی گئی جس میں سکھ طبقہ کے لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔بیساکھی کے تہوار کے سلسلہ میںضلع بھر میں لوگوں میں جوش و جذبہ نظر آیا جبکہ سنت پورہ ڈھیرہ ننگالی صاحب میں منعقدہ تقریب کے دوران سکھ برادری سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی بڑی تعداد ماتھا ٹیکنے کے لئے آئی جن میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے۔اس دوران پونچھ کی عوام نے ایک بار پھراپنے روایتی بھائی چارے کو قائم رکھتے ہوئے بھرپور شرکت کرکے اپنے سکھ بھائیوں کے تہوار میں ان کا ساتھ دیا جبکہ انتظامیہ کی جانب سے وہاں پر مختلف قسم کے اسٹال لگائے گئے تھے جن میں سرکاری سکیموں کے ساتھ ساتھ لوگوں کے تحفظ اور حف

مندر گالہ ۔ دھار ساکری 8کلو میٹر سڑک

  کوٹرنکہ //کوٹرنکہ کے مندر گالہ تا دہار ساکری 8کلو میٹر سڑک گزشتہ 8برسوں سے مکمل نہیں کی جاسکی جس کی وجہ سے مقامی لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں کے مطابق 2011میں مذکورہ سڑک کی تعمیر کاکام محکمہ پی ڈبلیو ڈی کی جانب سے شروع کیا گیا تھا تاہم 2013میں انتظامیہ کی جانب سے اس سڑک کی تعمیر کا کام محکمہ پی ایم جی ایس وائی کے تحت لایا گیا لیکن اس کے باوجود بھی مقامی لوگوں کو سہولیات دستیاب نہیں کی گئی ۔مقامی لوگوں کے مطابق مذکورہ سڑ ک کو ساکری سے تین شاخوں میں تبدیل کیا گیا ہے جوکہ درہال کیساتھ ساتھ پیڑی ،پروڑی ،گجراں ودیگر علا قوں کی عوام کو سہولیات فراہم کرنے کیلئے تعمیر کی گئی تھی ۔اس سڑک کو ابھی بھی کچھ ایک حصہ محکمہ پی ڈبلیوڈی کے زیر تحت ہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ ان کی زمینوں کی کٹائی کے بعد سڑک کو آمد و رفت کے قابل بن

مزید خبریں

تھنہ منڈی میں مویشی اسمگلنگ کوشش ناکام طارق شال    تھنہ منڈی//تھنہ منڈی پولیس نے مویشی اسمگلنگ کی ایک کوشش ناکام بناتے ہوئے 7مویشی باز یاب کرواتے ہو ئے ایک ٹا ٹا موبائل گاڑی کو بھی ضبط کرلیا ۔پولیس ذرائع کے مطابقتھنہ منڈی پولیس کی جانب سے یک ناکے کے دورا ن ایک ٹاٹا موبائل گاڑی زیر نمبر JK11A-0307کو روک کر تلاشی لی گئی جس کے دوران مذکورہ گاڑی میں اسمگل کئے جارہے مویشیوں کو بازیاب کروالیا گیا ۔پولیس نے مذکورہ گاڑی کو ضبط کرتے ہوئے 3افراد کو بھی گرفتار کر لیا جن کی شناخت محمد عارف ،نائر حسین اور دانش خان کے طور پر ہوئی ہے ۔پولیس نے اسلسلہ میں ایک مقدمہ زیر ایف آئی آر نمبر 36/2019 درج کر تے ہوئے مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں۔   نریگا مزدوروں کی اجرت واگزار کرنیکی اپیل   جاوید اقبال    مینڈھر//لیبر یونین مینڈھر نے ضلع انتظام