تازہ ترین

گورنرکے مشیروں کے محکموں میں تبدیلی

جموں /گورنر ستیہ پال ملک نے جمعہ کو اپنے مشیروں بی بی ویاس، کے، وجے کمار، خورشید احمد گنائی اور کے۔ کے شرما کو ازسر نو محکمے تفویض کئے۔اس سلسلے میں جی اے ڈی کی طرف سے ایک نوٹیفکیشن کے مطابق منصوبہ بندی، ترقی و نگرانی، دیہی ترقی و پنچائتی راج، لداخ امور، الیکشن ، ڈیزاسٹر منیجمنٹ، ریلیف باز آباد کاری و تعمیر نو، ریونیو، خوراک، سول سپلائیز و امور صارفین، قبائلی امور،اے آر آئی اینڈ ٹرینگز اور زراعت و باغبانی محکمے بی بی ویاس کو سوپنے گئے ہیں۔ داخلہ، جنگلات و ماحولیات، صحت و طبی تعلیم،یوتھ سروسز اینڈ سپورٹس، خاطر تواضع، شہری ہوا بازی، اسٹیٹس، اطلاعات، قانون، انصاف و پارلیمانی امور محکمے کے۔ وجے کمار کے پاس رہیں گے۔ اسی طرح سکولی تعلیم ، اعلیٰ تعلیم، ٹرانسپورٹ، حج و اوقاف، تکنیکی تعلیم، پھولبانی، پشو و بھیڑ پالن، امداد باہمی، سیاحت، کلچر، سماجی بہبود اور محنت و روز گار محکمے خورشید ا

اہم افراد اور تنصیبات کی سلامتی کیلئے چوکسی میں اضافہ کیا جائے: گورنر کی ہدایت

جموں /گورنر ستیہ پال ملک نے جمعہ کو جموں راج بھون میں اعلیٰ سول، پولیس ، سینٹرل آرمڈ پولیس،فوج اور مرکزی سراغرساں ایجنسیوں کے اعلیٰ افسروں کے ساتھ ایک میٹنگ میں سیکورٹی نظامت سے متعلق امور کا تفصیلی جائیزہ لیا۔ میٹنگ میں گورنر کے مشیرکے، وجے کمار، شمالی فوجی کمانڈر لیفٹنٹ جنرل رنبیر سنگھ، چیف سیکرٹری بی وی آر سبرامنیم، ڈی جی پی دلباغ سنگھ، 16 ویں کور کے جی او سی لیفٹنٹ جنرل پرمجیت سنگھ،9 ویں کور کے جی او سی لیفٹنٹ جنرل وائی وی کے موہن، گورنر کے پرنسپل سیکرٹری اُمنگ نرولا، سپیشل ڈی جی پی سی آر پی ایف، وی ایس کے کامودی، اے ڈی جی پی، سی آئی ٹی  بی سری نواس، اے ڈی جی پی سیکورٹی، لاء اینڈ آرڈر منیر خان، اے ڈی جی سی آر پی ایف کمل این چودھری، آئی جی بی ایس ایف، رام اوتار، میجر جنرل ڈیلٹا فورس راجیو نندہ، صوبائی کمشنر جموں سنجیو ورما، آئی جی پی جموں ایس ڈی ایس جموال اور کئی دیگر افسرا

یاسین ملک نے پنچایتی الیکشن بائیکاٹ کی اپیل کی

سرینگر/جموں کشمیر لبریشن فرنٹ چیئر مین محمد یاسین ملک نے جمعہ کو آنے والے پنچایتی الیکشن کے بائیکاٹ کی اپیل دہرائی۔ وہ مسجد بلال واقع بنڈ سرینگر میں نماز جمعہ سے قبل اظہار خیال کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ الیکشن عمل نے ہمیشہ سے کشمیر کاز کو نقصان پہنچایا ہے۔ ملک نے کہا''الیکشنوں نے ہی کشمیر تنازع کو حل سے دور لیجایا ہے۔ اس لئے میری اپیل ہے کہ لوگ آنے والے پنچایتی الیکشنوں کا مکمل بائیکاٹ کریں''۔ ملک کا کہنا تھا '' حالیہ منعقدہ بلدیاتی انتخابات اور گذشتہ سال منعقدہ پارلیمانی الیکشنوں کے بائیکاٹ نے نئی دلی کو فریسٹریٹ کیا ہے''۔ ''حالیہ انتخابات کے دوران خالی پولنگ بوتھ بھارت کی جمہوری شکست تھی۔ اس سے یہی ظاہر ہوتا ہے کہ کشمیر ی عوام بھارت کا حصہ نہیں رہنا چاہتے ہیں''۔ علیحدگی پسندوں کے پلیٹ فارم،مشترکہ مزاحمتی قیادت ،جس کا

ترال جھڑپ میں جنگجو جاں بحق، پولیس اہلکار زخمی

سرینگر/جنوبی کشمیر کے ترال علاقے میں جمعہ کوجنگجوئوں اور سرکاری فورسز کے مابین جاری جھڑپ میں ابھی تک ایک جنگجو جاں بحق جبکہ ایک پولیس اہلکار زخمی ہوگیا۔ ذرائع نے کہا کہ ڈارگنائی گنڈ نامی گائوں میں جاری اس جھڑپ میں ایک جنگجو جاں بحق ہوگیا ہے تاہم اس کی تصدیق ہونا باقی ہے۔ ذرائع کے مطابق ایک پولیس اہلکار بھی جھڑپ کے دوران زخمی ہوگیا ہے۔ اس سے قبل گائوں میں جنگجوئوں اور سرکاری فورسز کے مابین اُس وقت جھڑپ شروع ہوئی جب فورسز نے ضلع پلوامہ کے ڈار گنائی گنڈ نامی گائوں کا محاصرہ کرکے تلاشی آپریشن شروع کیا۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ پولیس، فوج اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ٹیم نے جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد آپریشن شروع کیا۔اس دوران چھپے ہوئے جنگجوئوں اور فورسز کا آمنا سامنا ہوا ،اور طرفین میں گولیوں کا تبادلہ ہوا۔ فورسز نے علاقے کے تمام رابطے فوری طور پر بند کئے تاکہ

طالبان کیساتھ بات چیت میں شامل ہونے پر عمر نے دلی کی خبر لی

سرینگر/نیشنل کانفرنس لیڈر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبد اللہ نے روس میں طالبان کے ساتھ مذاکرات میں شامل ہونے پر نئی دلی سرکار کو یہ کہتے ہوئے شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے کہ بھارت جموں کشمیر میں سٹیک ہولڈرس کے ساتھ مذاکرات نہیں کررہا ہے ۔ عمر نے اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا''اگر مودی سرکار کو طالبان کے ساتھ بات چیت منظور ہے تو جموں کشمیر میں سٹیک ہولڈرس کے ساتھ ڈائیلاگ کیوں نہیں؟کیوں جموں کشمیر کی اٹانومی بحال کرنے کیلئے ڈائیلاگ کا سہارا نہیں لیا جاتاہے''۔  بھارت نے جمعرات کو اس بات کا اعلان کیا تھا کہ وہ افغانستان کے بارے میںماسکو میں منعقد ہونے والے مذاکرات میں ''نان آفیشل'' سطح پر شامل ہوگا جس میں طالبان بھی شامل ہے۔ یہ مذاکرات9نومبر کو منعقد ہونے والے ہیں۔    

ٹریفک نظام کو لیکر آئی جی رتھ اور میئر متو کے مابین ٹویٹر پر ٹکرائو

سرینگر/آئی جی ٹریفک بسنت رتھ اور سرینگر کے نو منتخب میئر جنید متو کے مابین جمعہ کو شہر میں ٹریفک نظام کے موضوع کو لیکر سماجی ویب سائٹ ٹویٹر پر سخت گرم گفتاری ہوئی ہے۔ رتھ نے متو کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جب سرینگر میونسپلٹی کے میئر نے شہر میں  ٹریفک جام کے بارے میں اپنے ٹویٹ میں لکھا کہ اُنہیں شہر کے ''ٹریفک مِس منیجمنٹ'' کے بارے میں کئی شکایات موصول ہوئی ہیں ۔ متو کے ٹویٹ کے جواب میں رتھ نے لکھا'' یہ آپ کا دائرہ کار نہیں ہے۔ جہانگیر چوک میں  ٹریفک ڈائیورشن ایک مجبوری ہے۔اصل میں ٹریفک میس امیرا کدل، ہری سنگھ ہائی سٹریٹ بازار، ایل ڈی اسپتال کے آس پاس ریڈی والوں کی وجہ سے ہورہا ہے اور سرینگر میونسپل کارپوریشن کو یہی میس ٹھیک کرنا چاہئے''۔ گذشتہ روز متو نے لکھا تھا کہ رتھ کی'' طبیعت ٹھیک'' نہیں ہے۔ اس سے قبل رتھ نے م

جنوبی کشمیر کے گائوں میں فوجی آپریشن کے دوران مسلح جھڑپ

سرینگر/جنوبی کشمیر کے ایک گائوں میں جمعہ کو اُس وقت جنگجوئوں اور سرکاری فورسز کے مابین جھڑپ شروع ہوئی جب فورسز نے ضلع پلوامہ میں ڈار گنائی گنڈ نامی گائوں کا محاصرہ کرکے تلاشی آپریشن شروع کیا۔یہ گائوں ضلع کے ترال علاقے میں واقع ہے۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ پولیس، فوج اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ٹیم نے جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد آپریشن شروع کیا۔اس دوران چھپے ہوئے جنگجوئوں اور فورسز کا آمنا سامنا ہوا ،اور طرفین میں گولیوں کا تبادلہ ہوا۔ فورسز نے علاقے کے تمام رابطے بند کئے ہیں تاکہ چھپے جنگجوئوں کے بھاگنے کے امکانات نہ رہیں۔ دریں اثناء حکام نے اونتی پورہ پولیس ڈسٹرکٹ کے تحت آنے والے علاقے میں انٹر نیٹ سروس معطل کردی ہے۔  

ترال کے گائوں میں فوج کا تلاشی آپریشن، انٹرنیٹ سروس معطل

سرینگر/سرکاری فورسز نے جمعہ کو جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں ڈار گنائی گنڈ نامی گائوں کا محاصرہ کرکے تلاشی آپریشن شروع کیا۔یہ گائوں ضلع کے ترال علاقے میں واقع ہے۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ پولیس، فوج اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ٹیم نے جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد آپریشن شروع کیا۔ فورسز نے علاقے کے تمام رابطے بند کئے ہیں تاکہ چھپے جنگجوئوں کے بھاگنے کے امکان نہ رہیں۔ دریں اثناء حکام نے اونتی پورہ پولیس ڈسٹرکٹ کے تحت آنے والے علاقے میں انٹر نیٹ سروس معطل کردی ہے۔ آخری اطلاعات ملنے تک تلاشی آپریشن جاری تھا۔  

آٹھ روز تک بند رہنے کے بعد سرینگر۔کرگل شاہراہ کھل گئی

سرینگر/حکام کا کہنا ہے کہ مسلسل آٹھ روز تک بند رہنے کے بعد سرینگر۔کرگل شاہراہ جمعہ کو یکطرفہ ٹریفک کیلئے کھل رہی ہے۔ مذکورہ شاہراہ کو گذشتہ ہفتے بھاری برفباری کے بعد بند کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں سینکڑوں مسافر شاہراہ کے دونوں طرف درماندہ ہو گئے تھے۔ ایس پی ٹریفک(رورل) مظفر احمد شاہ نے کہا کہ برف ہٹانے کا کام مکمل کیا گیا ہے اور آج سرینگر جانے والی درماندہ گاڑیوں کو منزل کی طرف بڑھنے کی اجازت ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ کل سونہ مرگ سے گاڑیوں کو چلنے کی اجازت ہوگی بشرطیکہ کرگل کی طرف شاہراہ پردرماندہ گاڑیوں کو نکالا جائے۔ آئی جی ٹریفک بسنت رتھ نے شاہراہ پر درماندہ گاڑیوں کو چلنے کی اجازت دینے کی تصدیق میں ٹویٹ کیا۔  

ڈوڈہ سڑک حادثے میں ایس پی او ہلاک، دو بھائی زخمی

سرینگر/ڈوڈہ میں جمعہ کی صبح پولیس کا ایک سپیشل پولیس آفیسر(ایس پی او) اُس وقت ہلاک ہوگیا جب ایک گاڑی، جس میں وہ سوار تھا، بھابور کے مقام پر اُلٹ کر ایک گہری کھائی میں جاگری۔اس حادثے میں دو بھائی بھی شدید زخمی ہوگئے۔ اطلاعات کے مطابق مذکورہ لوڑ کیریئر ڈوڈہ سے بارہ کلو میٹر دورایک موڈ پر ڈرائیور کے قابو سے باہر ہوکرڈیڑھ سوفُٹ گہری کھائی میں جاگرا۔  ایس ایچ او ڈوڈہ، سنیل شرما نے کہا کہ گاڑی میں سوار تینوں افراد کو ڈوڈہ کے ضلع اسپتال منتقل کیا گیا جہاں ایک کو مردہ قرار دیا گیا۔ ہلاک شدہ کی شناخت عرفان احمد ولد نظیر شیخ ساکنہ بھانور کے طور ر ہوئی ہے جو پولیس میں ایس پی او کے بطور تعینات تھا۔  

چاند نظر نہیں آیا، یکم ربیع الاول کا سنیچر کو

اسلام آباد//پاکستان میں ربیع الاوّل کا چاند نظر نہیں آیا۔ پاکستان کی رویت ہلال کمیٹی کے چیئرمین مفتی منیب الرحمٰن کے مطابق یکم ربیع الاوّل ہفتہ10 نومبرجبکہ 12 ربیع الاوّل بدھ 21 نومبر کو ہوگی۔    

میرواعظ بر صغیر کی پانچ با اثر شخصیات کی فہرست میں شامل

سرینگر/حریت کانفرنس (ع) کے چیرمین میرواعظ عمر فاروق کو مسلسل پانچویں سال ''رایل اسلامک سٹریٹیجک سٹیڈیز سینٹر اُردُن''کی جانب سے دنیا کی پانچ سوبااثر مسلم شخصیات اور برصغیر میں منتخب پانچ افراد میں انتہائی بااثر سیاسی و مذہبی شخصیت کی حیثیت سے منتخب کیا گیا ہے۔  سالانہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جموں کشمیر میں موجودہ میرواعظ محمد عمر فاروق کو انکی سماج ، تعلیم ، سیاست، ملی اور سماجی میدانوں میں جو بے لوث اور مخلصانہ خدمات انجام دی ہیں ان کے اعتراف میں اُنہیں  اس عالمی اعزاز سے نوازا جارہا ہے۔  مذکورہ رپورٹ کے مطابق میرواعظ نے اپنی تعلیمی اور منصبی ذمہ داریاں ادا کرنے کے ساتھ ساتھ کشمیری عوام کی حق خودارادیت کی جدوجہد کو عالمی سطح پر متعارف اورمسئلہ کشمیر کی متنازعہ حیثیت کو اجاگر کرانے کیلئے کام کیا ہے۔ حریت کانفرنس (ع) کے ترجمان نے مذکورہ ادارے

سرینگر جموں شاہراہ پر 3افراد کے تودے کے نیچے دفن ہونے کا خدشہ

سرینگر/سرینگر ۔جموں شاہراہ پر ایک بھاری زمینی تودہ گر آنے کے نتیجے میں  پنجاب سے تعلق رکھنے والی ایک ٹرک میں سوار تین افراد کے زندہ دفن ہونے کا خدشہ ہے۔ حکام نے کہا کہ تین افراد ٹرک میں سوار تھے جب وہ رامبن ضلع میں واقع بیٹری چشمہ کے نزدیک ایک بھاری زمینی تودے کی زد میں آگئی۔یہ واقع گذشتہ سوموار کو پیش آیا جبکہ بدھوار کو بچائو کارروائی اُس وقت شروع کی گئی جب لاپتہ افراد کے لواحقین نے حکام کے ساتھ رابطہ قائم کیا اور یہ خدشہ ظاہر کیا کہ اُن کے اقرباء  تودے کے نیچے آگئے ہونگے۔ ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹرس اصغر ملک نے کہا کہ کل لاپتہ افراد کے بارے میں کوئی سراغ نہیں ملا جس کے بعد آج صبح ایک بار پھر تلاشی کارروائی جاری ہے۔ ''ابھی تک تینوں کا کوئی سراغ ہاتھ نہیں لگا ہے۔ یہ ایک بھاری زمینی تودہ تھا اور اس نے بھاری ملبہ پیچھے چھوڑا ہے''، ڈی ایس پی نے کہا۔ اطل

کنگن میں آوارہ کتوں کے حملوں میں 3خواتین سمیت4زخمی

سرینگر/سینٹرل کشمیر کے کنگن علاقے میں جمعرات کو کم سے کم چار افراد اُس وقت زخمی ہوگئے جب اُن پر آوارہ کتوں نے حملے کئے۔ یہ واقعہ ضلع گاندربل کے وانگت نامی گائوں میں پیش آیا۔ محکمہ صحت کے ایک آفیسر نے کہا کہ آوارہ کتوں نے اپنے حملوں میں تین خواتین سمیت چار افراد کو زخمی کردیا۔ زخمیوں کی پہچان شمیمہ بیگم، مسرت بانو، سلیمہ بیگم اور عبد الرشید ساکنان وانگت کے طور پر ہوئی ہے جنہیں کنگن اسپتال میں علاج و معالجہ فراہم کیا گیا ۔ کنگن سب ڈسٹرکٹ اسپتال کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ کے مطابق چاروں کو طبی امداد فراہم کرنے کے بعد رخصت کردیا گیا ۔  

پلوامہ کے گائوں میں فورسز کے تلاشی آپریشن کے دوران جھڑپیں

سرینگر: جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں جمعرات کو سرکاری فورسز کے تلاشی آپریشن کے دوران جھڑپیں ہوئیں جس کے دوران فورسز اہلکاروں نے سنگباری کررہے مظاہرین کیخلاف آنسو گیس کے گولے داغے ۔ ایک پولیس آفیسر نے کہا کہ علی الصبح فوج ، سی آر پی ایف اور پولیس کے اہلکاروں نے آری ہل نامی گائوں کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ یہ آپریشن گائوں میں جنگجوئوں کی موجودگی کے بارے میں اطلاع ملنے کے بعد شروع کیا گیا تھا۔ چونکہ تلاشی آپریشن شروع ہوتے ہی مقامی لوگ، خاص کر نوجوان گھروں سے باہر آکر احتجاج کرنے لگے۔ مظاہرین نے فورسز اہلکاروں پر پتھر مارے جبکہ جواب میں اہلکاروں نے اُن کیخلاف آنسو گیس کا استعمال کیا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق تلاشی آپریشن کو ختم کیا گیا ہے کیونکہ گائوں میں کوئی جنگجو نہیں ملا۔  

وادی اور لداخ شدید سردی کی لپیٹ میں

  سرینگر/اگر چہ کشمیر کے درجہ حرارت میں آسمان ابر آلود رہنے کے نتیجے میں تھوڑی بہت بہتری آگئی ہے تاہم اس کے باوجود وادی اور لداخ خطوں کے اندر سردی کی لہر جاری ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق سردی کی شدت آنے والے تین روز تک جاری رہے گی۔ محکمہ نے 12سے14نومبر تک بارش اور برفباری کی پیش گوئی کی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق سرینگر میں کم سے کم درجہ حرارت منفی0.4ڈگری سیلشیس درج کیا گیا ہے جو گذشتہ بدھ سے بہت حد تک بہتر ہے جب درجہ حرارت منفی2.4 سیلشیس ریکارڈ کیا گیا تھا۔ لداخ خطے کے کرگل اور لیہہ قصبوں میں سردی کی شدید لہر ہے ۔ کرگل میں سب سے یعنی کم منفی 8.6 سیلشیس درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا ہے۔ لیہہ کا نمبر دوسرا ہے جہاں کا درجہ حرارت منفی6.5ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیا گیا۔ ادھر سرمائی دارلحکومت جموں میں رات کے درجہ حرارت میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے جو 11۔5ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیا

شوپیان میں جنگجوئوں کی کمین گاہ تباہ: پولیس

پولیس نے جمعرات کو دعویٰ کیا کہ اُس کے اہلکاروں نے فوج کے ساتھ مل کر جنوبی کشمیر کے شوپیان ضلع میں جنگجوئوں کی ایک کمین گاہ دریافت کرکے اُسے تباہ کردیا۔ پولیس نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ جنگجوئوں کی کمین گاہ رامنگری نامی گائوں میں تباہ کی گئی۔ پولیس کے مطابق مذکورہ کمین گاہ سے بہت سارا قابل اعتراض سامان بر آمد کرکے تحقیقات شروع کی گئی ہے۔ بر آمد شدہ سامان میں دھماکہ خیز اشیا ء بنانے والی چیزیں بھی شامل ہیں۔  

کتابوں کی زیادہ قیمتیں وصول کرنا سنجیدہ معاملہ: خورشید گنائی

جموں/گورنر کے مشیرخورشید احمد گنائی نے سکولی تعلیم کشمیر اور جموں کے ڈائریکٹروں کو ہدایات دی ہیں کہ وہ فوری طور سے ریاست میں کئی پرائیویٹ سکولوں کی طرف سے تدریسی کتابیں اضافی قیمتوں پر فروخت کرنے سے متعلق شکایات کا جائیزہ لے کر ان کتابوں کی قیمتوں کو اعتدال پر رکھنے کے لئے اقدامات تجویز کریں۔ ذرائع ابلاغ کے ایک سیکشن میں شائع رپورٹوں کا نوٹس لیتے ہوئے خورشید گنائی ،جن کے پاس محکمہ تعلیم کا چارج بھی ہے، نے کہا کہ حکومت رہنما  خطوط جاری کرے گی تا کہ ریاست کے پرائیویٹ تعلیمی اداروں میں تدریسی کتابوں اوروردیوں کی قیمتوں کو اعتدال پر رکھا جاسکے جس طرح ان سکولوں کے فیس کے ڈھانچے کو اعتدال میں رکھا گیا ہے۔ مشیر موصوف نے اضافی قیمتوں پر تدریسی کتابیں فروخت کر کے ناجائیز منافع خوری کرنے کے عمل میں ملوث افراد کے خلاف سخت کاروائی کرنے کی یقین دہانی کرائی۔  

گریز۔بانڈی پورہ شاہراہ پر پانچ روز بعد ٹریفک بحال

سرینگر/ حالیہ برفباری سے پانچ روز تک بند رہنے کے بعد گریز۔بانڈی پورہ شاہراہ بدھوار کو گاڑیوں کی نقل و حمل کیلئے کھل گئی۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ گاڑیوں کو چلنے کی اجازت برف ہٹانے کے بعد ہی دیدی گئی ہے۔  84کلو میٹر لمبی گریز۔بانڈی پورہ شاہراہ کو گذشتہ جمعہ کے دن اُس وقت بند کیا گیا تھا جب رازدان پاس پر بھاری برف جمع ہوگئی اور گاڑیوں کی آمد و رفت ناممکن بن گئی۔ ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ، ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری کے مطابق گریز روڑ کھولا گیا ہے۔تراگہ بل تک مذکورہ روڑ دونوں طرف کی ٹریفک کیلئے کھلا ہے جبکہ تراگہ بل سے داﺅر تک گاڑیوں کو یک طرفہ چلنے کی اجازت ہوگی۔    

شوپیان میں بجلی سپلائی آج بحال ہوگی:حکام

سرینگر/جنوبی کشمیر میں  شوپیان ضلع انتظامیہ نے بدھوار کو کہا کہ وہاں بجلی سپلائی آج شام تک بحال کی جائے گی۔قابل ذکر ہے کہ حالیہ برفباری کے بعد سے شوپیان کا علاقہ گھپ اندھیرے میں ڈوبا ہوا ہے کیونکہ بھاری برفباری کی وجہ سے پاﺅر سپلائی نظام کو شدید نقصان پہنچ گیا تھا۔اگر چہ موسم میں نمایاں تبدیلی بھی واقع ہوگئی لیکن حکام کا کہنا ہے کہ کافی محنت کے باوجود ابھی تک وہاں بجلی سپلائی بحال نہیں کی گئی ہے۔ مقامی لوگ الزام عاید کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ محض چند انچ کی برفباری نے انتظامیہ کے دعوﺅں کی قلعی کھول کے رکھ دی ہے۔بعض مقامی لوگوں کا یہ بھی الزام ہے کہ محکمہ بجلی کے ملازمین خرابی ٹھیک کرنے میں دلچسپی کا مظاہرہ نہیں کررہے ہیں۔ تاہم ضلع کے ایڈیشنل کمشنرشبیر احمد نے کہا کہ حالیہ برفباری نے کنی پورہ اور گنوپورہ نامی علاقوں میں واقع بجلی ٹرانسمیشن ٹاﺅرں کو کافی نقصان پہنچایا تھاجس کی و