شوپیان ضلع میں فورسز چھاپوں کے دوران بارودی مواد ضبط،دو افراد گرفتار:پولیس

سرینگر /پولیس نے سنیچر کو جاری ایک بیان میں کہا کہ مصدقہ اطلاع موصول ہونے کے بعد سیکورٹی فورسز نے جنوبی کشمیر کے شوپیان ضلع میں کئی مقامات پر تلاشی لی جس کے دوران بڑی مقدار میں آئی ای ڈی بنانے کیلئے درکار بارودی مواد برآمد کرکے ضبط کیا گیا۔ بیان کے مطابق پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے ۔  پولیس کے مطابق اس بات کی بھی جانچ ہورہی ہے کہ برآمد شدہ قابلِ اعتراض مواد کہاں سے لایا گیا تھا۔ پولیس بیان میں مزید کہا گیا ہے '' اس سلسلے میں پولیس نے اس دو افراد کی گرفتاری عمل میں لاکر مذکورہ کیس سے جڑے دیگر سازشی عناصر کو پکڑنے کیلئے بھی کارروائی شروع کی ہے''۔  

رامبن میں کار گہری کھائی میں جاگری،ڈرائیور سمیت5جاں بحق،3زخمی

سرینگر/ضلع رامبن میں سنیچر کو سڑک کے ایک دلدوز حادثے میں اُس وقت پانچ افراد جاں بحق اور تین زخمی ہوگئے جب وہ کار، جس میں سوار تھے، سڑک سے لڑھک کر ایک گہری کھائی میں جاگری۔ حکام کے مطابق ایک کار ضلع رامبن کے النباس سے اُکھریل جاتے ہوئے لڑھک کرایک گہری کھائی میں جاگری جس کے نتیجے میں5افراد جاں بحق اور 3زخمی ہوگئے۔  انہوں نے کہا کہ جاں بحق ہونے والوں میں کار کا ڈرائیور بھی شامل ہے۔ مرنے والوں کی شناخت محمد اقبال جارال،جاوید احمد جارال(ڈرائیور)، تاردا دیوی،سانوی دیوی اور نیلو فر بانو کے طور ہوئی ہے۔  

گورنر کے مشیر،کئی سیاست دانوں کی مزار شہداء پر حاضری اور گلباری

سرینگر/ریاستی گورنر کے مشیر خورشید گنائی کے ساتھ ساتھ کئی سیاست دانوں اور ریاستی انتظامیہ کے افسران نے سنیچر کو سرینگر کے نقشبند صاحب  میں واقع 1931کے شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے وہاں فاتحہ پڑھی اور گلباری کی۔ اطلاعات کے مطابق گنائی کے ہمراہ کشمیر کے صوبائی کمشنربصیر احمد خان بھی تھے جنہوں نے آج صبح مزارشہداء پر فاتحہ پڑی۔ جن اور شخصیات نے مزار شہداء پر حاضری دی اُن میں نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبد اللہ،کانگریس کے ریاستی صدر جی اے میر،سی پی آئی (ایم) کے ریاستی سیکریٹری ایم وائی تاریگامی،عوامی اتحاد پارٹی کے صدر انجینئر رشید،غلام حسن میر اورحکیم محمد یاسین شامل تھے۔ جموں کشمیر میں ہر سال13جولائی کو یوم شہداکے طور منایا جاتا ہے۔1931میں آج ہی کے دن ڈوگرہ مہاراجہ کی فورسز نے سرینگر سینٹرل جیل کے باہر شخصی راج کیخلاف مظاہرے کرنے والوں پر گولیاں چلاکرمتعدد افراد کو م

ہندوارہ میں منشیات فروش کے قبضے سے 750گرام ہیروین برآمد:پولیس

 سرینگر/پولیس کی جانب سے سنیچر کو جاری ایک بیان میں بتایا گیا کہ ہندوارہ میں ایک شخص کی گرفتاری عمل میں لا کر اس کے قبضے سے ممنوعہ نشیلی اشیابرآمد کرکے ضبط کی گئی ہے۔ بیان کے مطابق چوگل ہندوارہ کے نزدیک پولیس نے ناکہ چیکنگ کے دوران مشتاق احمد پیر ولد عبدالاحد ساکنہ کالمونہ ہندوارہ کو روک کر اس کی جامہ تلاشی لی جس دوران اس کے قبضے سے سیل شدہ پالتھین لفافہ میں چھپائی گئی 750گرام ہیروین برآمد کرکے ضبط کی گئی۔ پولیس بیان کے مطابق آفیسران نے موقع پرہی منشیات فروش کی گرفتاری عمل میں لا کر ایک سینٹر و کار کو بھی تحویل میں لے لیا ۔  پولیس نے معاملے کی نسبت ایف آئی آر زیر نمبر 188/2019کے تحت پولیس اسٹیشن ہندوارہ میں کیس درج کرکے مزید تحقیقات شروع کی ہے۔  

یوم شہداء کے موقع پرسرینگر کے بعض علاقوں میں پابندیاں عاید

سرینگر/حکام نے سنیچر کو یوم شہدائے کشمیر کے موقع پرپائین شہر کے بعض علاقوں میں علیحدگی پسندوں کی طرف سے ممکنہ مظاہروں کو روکنے کیلئے پابندیاں کی ہیں۔  جموں کشمیر میں ہر سال13جولائی کو یوم شہداکے طور منایا جاتا ہے۔1931میں آج ہی کے دن ڈوگرہ مہاراجہ کی فورسز نے سرینگر سینٹرل جیل کے باہر گولیاں چلاکرمتعدد افراد کو موت کے گھاٹ اُتارا تھا۔ اس دن سرکاری طور تعطیل منائی جاتی ہے اور مزار شہدا ،واقع نقشبند صاحب سرینگر پر جاکر شہدا کی قبروں پر گلباری کی جاتی ہے۔ پولیس ذرائع کے مطابق پرانے شہر کے بعض علاقوں میں ''امن و قانون کی صورتحال بنائے رکھنے کیلئے''لوگوں کی نقل و حمل پر پابندیاں کی گئی ہیں۔ آج صبح مزار شہدا پر سب سے پہلے حاضری دینے والوں میں گورنر کے مشیر خورشید گنائی شامل تھے جنہوں وہاں فاتحہ پڑھی اور پھول نچھاور کئے۔  

گلمرگ میں آگ کی ہولناک واردات ، 15 دکان خاکستر

بارہمولہ/ شمالی کشمیر میں واقع سیاحتی مقام گلمرگ میں سنیچر کو آگ کی ایک ہولناک واردات کے دوران 5 1دکان خاکستر ہوگئے۔ اطلاعات کے مطابق آج صبح چھ بجے پولیس اسٹیشن گلمرگ کے نزدیک ایک پلائی وڈ دکان سے آگ ظاہر ہوئی جس نے آناً فاناً بھیانک رخ اختیار کر کے مزید  14 دکانوں کو اپنی لپیٹ میں لیا۔ اگر چہ لوگوں نے آگ پر قابو پانے کی کوششیں کیں لیکن آگ اس قدر بھیانک تھی کہ کوئی تدبیر کام نہ آسکی جس کے نتیجے میں لاکھوں روپے کا ساز سامان راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگیا۔ مقامی ذرائع کے مطابق جب تک محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی کی گاڑیاں جائے موقع پر پہنچیں تب تک  15دکان خاکستر میں تبدیل ہوگئے تھے تاہم آگ لگنے کی وجہ فوری طور پر معلوم نہ ہوسکی۔ اس سلسلے میں پولیس نے کیس درج کر کے تحقیقات شروع کردی ہے۔    

جموں سے امرناتھ یاتریوں کی روانگی ایک دن کیلئے معطل

سرینگر/حکام نے سنیچر کو جموں سے امرناتھ یاتریوں کی روانگی ایک دن کیلئے معطل کی ہے۔یاترا کی یہ معطلی وادی میں یوم شہدائے کشمیر کے موقع پر کی جانے والی ہڑتال کے پیش نظر عمل میں لائی گئی ہے۔ حکام کے مطابق آج جموں سے کسی بھی امرناتھ یاتری کو وادی کی طرف روانہ ہونے کی اجازت نہیں دی گئی ہے۔ واضح رہے کہ جموں کشمیر میں ہر سال13جولائی کو یوم شہداکے طور منایا جاتا ہے۔1931میں آج ہی کے دن ڈوگرہ مہاراجہ کی فورسز نے سرینگر سینٹرل جیل کے باہر گولیاں چلاکرمتعدد افراد کو موت کے گھاٹ اُتارا تھا۔ اس دن سرکاری طور تعطیل منائی جاتی ہے اور مزار شہدا ،واقع نقشبند صاحب سرینگر پر جاکر شہدا کی قبروں پر گلباری کی جاتی ہے۔ اس سال امرناتھ یاترا یکم جولائی کو شروع ہوئی تھی اور اب تک حکام کے مطابق کم و بیش ڈیڑھ لاکھ یاتریوں نے گپھا میں خصوصی پوجا کی ہے۔امرناتھ یاترا15اگست کو اختتام پذیر ہوگی۔ &nb