تازہ ترین

جنوبی کشمیر کے اننت ناگ میں نوجوان کرکٹ میچ کے دوران گیند لگنے سے فوت

سرینگر/جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں جمعرات کو کرکٹ میچ کھیلتے ہوئے ایک نوجوان گیند لگنے سے فوت ہوگیا۔ حکام کے مطابق جہانگیر احمد وار ،ساکنہ گوشہ بگ پٹن کی گردن پر نانل اننت ناگ میں میچ کے دوران گیند لگ گئی۔ جہانگیر کو فوری طور مٹن اسپتال پہنچایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اُسے مردہ قرار دیا۔ حکام نے مزید کہا کہ جہانگیر بیٹنگ میں مصروف تھا جس کے دوران ایک شارٹ کھیلتے ہوئے گیند اُس کی گردن پر جالگی جو اُس کی موت کا سبب بنی۔ اس میچ کا انعقاد یوتھ سروسز اینڈ سپورٹس محکمہ کی طرف سے بڈگام اور بارہمولہ کی ٹیموں کے درمیان کیا جارہا تھا۔  

گلمرگ میں خاتون سیاح حرکت قلب بند ہونے سے فوت

بارہمولہ/ ضلع بارہمولہ کے سیاحتی مقام گلمرگ میں جمعرات کو ایک خاتون سیاح حرکت قلب بند ہونے کے نتیجے میں لقمہ اجل بن گئی ۔  تفصیلات کے مطابق پلوی کھو کلے زوجہ پرکاش کھوکلے ساکنہ رائی پورہ چھتیس گڑھ سیر کیلئے گلمرگ آ ئی تھی جہاں وہ آج دل کا دورہ پڑنے سے فوت ہوگئی۔  پلوی نے اچانک سینے میں درد کی شکایت کی جس کے بعد اُسے فوری طور پرائمری ہیلتھ سینٹر گلمرگ پہنچایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے مذکورہ خاتون کا طبی معائنہ کرنے کے بعد اسے مردہ قرار دیا۔  پولیس نے مذکورہ خاتون سیاح کی نعش تحویل میں لیکر اس کا سب ضلع ہسپتال گلمرگ میں پوسٹ مارٹم کرایا اور قانونی اور طبی لوازمات پوری کرنے کے بعد نعش کو لواحقین کے سپرد کر دیا۔  

کشمیر میں سکولوں کی گرمائی تعطیلات15 سے24جولائی تک

 سرینگر/حکومت جموں کشمیرنے جمعرات کو اعلان کیا کہ وادی کشمیر اور جموں کے سرمائی زون میں قائم ہائیر سیکنڈری سطح تک کے سبھی تعلیمی ادارے گرمائی تعطیلات کے سلسلے میں15سے24جولائی تک بند رہیں گے۔ اس سلسلے میں محکمہ سکول ایجو کیشن کی طرف سے جاری ایک آرڈر میں بتایا گیا ہے کہ ہائیر سیکنڈری سطح تک کے سبھی سرکاری ونجی سکول گرمائی چھٹیوں کیلئے 15جولائی سے بند رہیں گے۔  صوبہ جموں میں سرمائی زون کے سکول بھی 15جولائی سے24جولائی تک بند رہیں گے۔  

اوڑی میں کنٹرول لائن کے نزدیک آگ کی واردات، رہائشی مکان خاکستر

اوڑی/ شمالی کشمیر کی اوڑی میں کنٹرول لائن کے نزدیک واقع موٹھل نامی گاوں میں گزشتہ شب آگ کی ایک واردات میں ایک دومنزلہ رہائشی مکان خاکستر  ہو گیا۔ مقامی ذرائع کے مطابق رات قریب 10 بجے شوکت احمد ولد سردار محمد ٹھکری کے رہائشی مکان سے اچانک آگ نمودار ہوئی اور چند ہی منٹوں میں اُس نے پورے مکان کو اپنی لپیٹ میں لیکراس کو خاکستر میں تبدیل کیا۔بتایا جاتا ہے کہ مکان میں موجود تمام سامان راکھ میں تبدیل ہو گیا۔ مقامی ذرائع نے کہا کہ مکان میں آگ لگنے کے وقت اہل خانہ کسی رشتہ دار کے ہاں شادی میں گئے ہوئے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سڑک سے دور ہونے کی وجہ سے وہا ں فائر اینڈ ایمرجنسی سروسزکی بچاو کاروائی بھی ممکن نہ ہوسکی۔    

ڈوڈہ میں نایاب جڑی بوٹی'زخم حیات' سمگل کرنے کی کوشش ناکام

سرینگر/فاریسٹ حکام نے جمعرات کو ضلع ڈوڈہ میں ادویات میں کام آنے والی ایک نایاب جڑی بوٹی 'زخم حیات' کے24بیگ ضبط کرکے اس کے اسمگل کرنے کی کوشش کو ناکام بنادیا۔ حکام کے مطابق 650کلو گرام کی یہ جڑی بوٹیاں ڈوڈہ سے اسمگل کرنے کیلئے ہماچل پردیش کے ساتھ ملانے والے بھدرواہ۔چھمبا روڑ پر چھپائی گئی تھی جہاں فاریسٹ اہلکاروں نے اس کو ضبط کرلیا۔ ضبط شدہ 'زخم حیات ' نامی جڑی بوٹیوں کی مالیت ساڑھے پانچ لاکھ روپے بتائی جاتی ہے۔ واضح رہے کہ 30جون کو بھی اسی علاقے میں اہلکاروں نے'زخم حیات' کے500کلو گرام ضبط کئے تھے۔  

اوڑی میں پاگل کتے کے حملوں میں نصب درجن افراد زخمی، علاقے میں خوف

بارہمولہ/ شمالی قصبہ اوڑی کے دواراں گنگل علاقے میں جمعرات کو اُس وقت خوف و دہشت کا ماحول پیدا ہوا جب ایک پاگل کتے نے لوگوں پر حملے کرکے نصب درجن افراد کو زخمی کردیا جنہیں فوری طورضلع اسپتال پہنچا یا گیا ۔  مقامی لوگوں کے مطابق پاگل کتے نے دواراں، اوڑی میں کئی جگہوں پر اچانک لوگوں پر حملے کرکے اُنہیں کاٹ کھایا جس کے نتیجے میں ایک 70  سالہ بزرگ سمیت6افراد زخمی ہوگئے ۔ ذرائع کے مطابق متاثرین میں کسی کی ٹانگ زخمی ہے اور کسی کی بازو اور اُنہیںفوری طورپرنزدیکی اسپتال پہنچایا گیا۔  مقامی لوگوں نے کہا کہ علاقے میںموجود سینکڑوں کتوں نے لوگوں کا جینا محال بنا رکھا ہے اور لوگ راستوں پر چلتے ہوئے ڈر محسوس کرتے ہیں۔  

کشمیر ایک سیاسی مسئلہ، حل کرنا ضروری: فاروق عبد اللہ

سرینگر/جموں کشمیر نیشنل کانفرنس کے سرپرست اور سابق وزیر اعلیٰ ڈاکٹر فاروق عبد اللہ نے جمعرات کو کہا کہ کشمیر ایک سیاسی نوعیت کا مسئلہ ہے جس کو اس طرح حل کیا جانا ضروری ہے تاکہ اس مسئلے کاہر فریق راضی ہو۔   اپنی والدہ،بیگم اکبر جہاں کی19ویں برسی کے سلسلے میں منعقدہ ایک تقریب کے حاشیوں پر نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے فاروق نے کہا''ہر سیاسی مسئلے کا ایک سیاسی حل چاہئے، کشمیر بھی ایک سیاسی مسئلہ ہے جس کا حل ناگزیر ہے''۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر مسئلے کا ایک ایسا حل ضروری ہے جس سے اس کا ہر فریق بشمول بھارت اور پاکستان راضی ہوں۔ فاروق نے مزید کہا''اُس سیاسی حل کو ریاست کے تینوں خطوں یعنی جموں، لداخ اور کشمیر کی حمایت حاصل ہونی چاہئے''۔ فاروق نے پارٹی کے سینئر ممبران کے ہمراہ اپنی مرحوم والدہ کی قبر پر جاکر دعا کی۔  

زائد ازپانچ ہزار یاتری جموں سے گپھا کیلئے روانہ

سرینگر/ریاست کی سرمائی دارلحکومت جموں سے جمعرات کی صبح 5486یاتری امرناتھ گپھا کی طرف روانہ ہوگئے۔ یکم جولائی سے اب تک حکام کے مطابق ایک لاکھ30ہزار یاتریوں نے امرناتھ گپھا میں درشن کئے ہیں۔ حکام نے کہا کہ آج صبح پانچ ہزار سے زیادہ یاتریوں کو ایک کانوائی کی صورت میں وادی کی طرف روانہ کیا گیا۔