تازہ ترین

کشمیر میں سکول اور کالیج سنیچر کو بھی بند رہیں گے:انتظامیہ

سرینگر/صوبائی انتظامیہ نے کل یعنی سنیچر کو وادی کشمیر کے سبھی سکول اور کالیج پھر بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ جمعہ کو جاری حکمنامے میں بتایا گیا کہ وادی کشمیر کے سبھی سکول اور کالیج 25مئی کو بند رہیں گے۔ صوبائی کمشنر بصیر احمد خان نے کہا کہ تعلیمی ادارے بند رکھنے کا فیصلہ احتیاط طور لیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ گذشتہ روز شام دیر گئے فورسز کے ساتھ معرکہ آرائی میں  جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کی ہلاکت کے بعد آج وادی کے تعلیمی ادارے بند رکھے گئے تھے۔    

سبھی سٹیک ہولڈر کشمیر میں جاری خون خرابہ روکنے کیلئے آگے آٴئیں: میرواعظ

سرینگر/حریت کانفرنس (ع) کے چیئر مین میرواعظ عمر فاروق نے جمعہ کو سبھی سٹیک ہولڈرس پر زور دیا کہ وہ آگے آکر کشمیر میں جاری خون خرابہ اور روزانہ بنیادوں پر ہونے والی ہلاکتوں کو روکنے کے اقدامات کریں۔ میرواعظ نے ایک ٹویٹ میں لکھا''سبھی سٹیک ہولڈر روں کو چاہئے کہ آگر بڑھ کر کشمیر تنازع کو حل کریں تاکہ تشدد کے ذریعے روزانہ بنیادوں پر ہونے والی ہلاکتوں کو روکا جاسکے''۔ میرواعظ نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ کشمیری لوگوں کو ہر روز کسی نہ کسی بہانے مارڈالا جارہا ہے۔  

شمالی کشمیر کے سوپور میں جھڑپوں کے دوران نوجوان زخمی

سرینگر/شمالی کشمیر کے سوپور میں جمعہ کو نماز کے بعد فورسز اور مظاہرین کے درمیان جھڑپوں کے دوران ایک نوجوان زخمی ہوگیا۔ اطلاعات کے مطابق سوپور میں نماز جمعہ کے بعد نوجوان سڑکوں پر آئے اور تعینات فورسز اہلکاروں پر سنگباری کرنے لگے۔ فورسز نے جوابی کارروائی عمل میں لاتے ہوئے ٹیر گیس کے گولے داغے جس کے دوران عرفان احمد نامی ایک نوجوان زخمی ہوگیا۔ عرفان کو سوپور اسپتال سے سرینگر کے صدر اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ حکام نے کشمیر میں جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کو جاں بحق کئے جانے کے دوسرے روز آج پابندیاں عاید کی ہیں۔ ذاکر کو فورسز نے گذشتہ شام دیر گئے ضلع پلوامہ کے ترال میں ڈاڈہ سرہ نامی علاقے میں معرکہ آرائی کے دوران جاں بحق کیا۔  

مودی دفعہ370اور35اے کو نہیں ہٹاسکتے:فاروق عبد اللہ

سرینگر/نیشنل کانفرنس کے صدر اور نو منتخب پارلیمنٹ ممبر فاروق عبد اللہ نے جمعہ کو کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی آئین کی دفعہ370اور 35اے کو نہیں ہٹا سکتے ہیں۔ جموں پہنچنے پر نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرتے ہوئے فاروق نے کہا''وزیر اعظم نریندر مودی بہت طاقتور بن گئے ہیں لیکن وہ دفعہ370اوردفعہ35اے کو نہیں ہٹاسکتے ہیں۔'' کانگریس کی زبردست شکست پر تبصرہ کرتے ہوئے فاروق نے کہا''ہار اور جیت تو زندگی کا حصہ ہے۔راہل پانچ سال بعد واپسی کرے گا اور مجھے نہیں لگتا کہ امیٹھی کے لوگ اُسے بھولیں گے''۔  

بانہال میں ذاکر موسیٰ کو جاں بحق کئے جانے کیخلاف ہڑتال سے معمولات متاثر

سرینگر/ضلع رامبن کے بانہال علاقے میں جمعہ کو جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کو جاں بحق کئے جانے کیخلاف مکمل ہڑتال کی جارہی ہے۔ ذاکر کو گذشتہ شام ڈاڈہ سرہ ترال میں فورسز نے معرکہ آرائی کے دوران جاں بحق کیا۔ عینی شاہدین کے مطابق بانہال میں سبھی دکان اور کاروباری ادارے بند ہیں جبکہ سکولوں میں بھی تدریسی عمل معطل رکھا گیا ہے۔ حکام نے '' امن و امان قائم رکھنے کیلئے'' قصبے میں پولیس وفورسز کی اضافی تعیناتی عمل میں لائی ہے۔ ادھر وادی کشمیر میں ذاکر کو جاں بحق کئے جانے کے بعد سخت کرفیو نافذ کیا گیا ہے ۔ حکام نے سبھی تعلیمی ادارے بھی بند رکھنے کے احکامات صادر کئے ہیں جبکہ یونیورسٹی امتحامات بھی معطل کئے گئے ہیں۔ دریں  اثناء  حکام  نے  بھدرواہ  میں  بھی  تعلمی  ادارے  بند  رکھنے  کے  احکامات  صادر&n

آبائی گائوں میں ذاکر موسیٰ کی آخری رسومات میں ہزاروں کی شرکت

سرینگر/جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کی آخری رسومات میں جمعہ کو ہزاروں لوگوں نے شرکت کی جو سخت پابندیوں کے باجود ذاکر کے آبائی گائوں ،نور پورہ ،ترال پہنچنے میں کامیاب ہوئے تھے۔ ذاکر کو گذشتہ شام فورسز نے جنوبی کشمیر میں ترال کے ڈاڈہ سرہ علاقے میں ایک معرکہ آرائی کے دوران جاں بحق کیا۔ عینی شاہدین نے کہا کہ لوگوں کی ایک بھاری تعداد نے نور پورہ پہنچنے کیلئے پولیس و فورسز کی نظروں سے بچنے کیلئے کھیت کھلیانوں کی راہ اختیار کی تھی کیونکہ حکام  نے علاقے میں سخت پابندیاں عاید کرکھی ہیں۔   حکام نے سرینگر سمیت وادی کے دوسرے علاقوں میں بھی سخت پابندیاں عاید کررکھی ہیں تاکہ ذاکر کو جاں بحق کئے جانے کیخلاف ممکنہ مظاہروں کو روکا جاسکے۔  

جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کی ہلاکت کے دوسرے روزکرفیو کا نفاذ

سرینگر/گرمائی دارالحکومت سرینگر میں جمعہ کو کرفیو جیسی پابندیاں عاید کی گئی ہیں تاکہ جنگجو کمانڈر ذاکر موسیٰ کو جاں بحق کئے جانے کیخلاف ممکنہ احتجاجی مظاہروں کو رکا جاسکے۔ ذاکر کو گذشتہ شام فورسز نے جنوبی کشمیر میں ترال کے ڈاڈہ سرہ علاقے میں ایک معرکہ آرائی کے دوران جاں بحق کیا۔ عینی شاہدین کے مطابق پولیس اور فورسز کی بھاری تعیناتی عمل میں لاکر پورے شہر سرینگر میں سخت پابندیاں عاید کی گئی ہیں۔فورسز نے جگہ جگہ رکاوٹیں کھڑی کرکے لوگوں کی نقل و حمل محدود بنائی ہے جبکہ اکا دُکا پیدل چلنے والوں سے بھی پوچھ تاچھ کی جارہی ہے۔ دوسرے عینی شاہد کے مطابق مائسمہ علاقے میں اعلانیہ کرفیو نافذ کیا گیا ہے۔ حکام نے پوری وادی کے اندر سبھی قسم کے تعلیمی ادارے بند رکھنے کے احکامات صادر کررکھے ہیں جبکہ کشمیر یونیورسٹی اور اسلامک یونیورسٹی نے اپنے اپنے سبھی امتحامات کو ملتوی کیا ہے۔ ادھر