تازہ ترین

سرینگر سے بارہمولہ تک ہائی وے پابندی ہفتے میں ایک دن تک محدود: حکام

سرینگر/کشمیر شاہراہ پر سرینگر سے بارہمولہ تک سیولین ٹریفک کی نقل و حمل پر پابندی کو ہفتے میں صرف ایک دن، یعنی اتوار تک محدود کیا گیا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق اس فیصلے پر کل یعنی اتوار سے عملدر آمد ہوگا۔ مذکورہ ذرائع نے کہا کہ اب سے بدھ کو شاہراہ پر سرینگر سے بارہمولہ تک سیولین ٹریفک کی نقل و حمل پر کوئی پابندی نہیں ہوگی۔ انہوں نے تاہم وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ البتہ سرینگر سے بارہمولہ تک ہفتے میں دو روزہ پابندی کا سلسلہ جاری رہے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ پابندیوں پر مزید غور کے بعد ان میں مزید نرمی لائی جائے گی۔ سرکاری ذرائع کے مطابق سرینگر سے اُدھمپور تک پابندیوں کے دونوں دنوں، یعنی اتوار اور بدھ اور اتوار کو سرینگر سے بارہمولہ تک مقامی انتظامیہ سیولین ٹریفک کو اُسی طرح چلنے کی اجازت دے گی جس طرح پہلے دی جاتی تھی۔ واضح رہے کہ گذشتہ مہینے کشمیر شاہراہ پر ہر ہفتے دو

سرینگر۔جموں شاہراہ پر پتھر کھسکنے سے مسلسل چوتھے روز ٹریفک متاثر

سرینگر/سرینگر۔جموں شاہراہ پر سنیچر کو مسلسل چوتھے روز پہاڑیوں سے پتھر کھسکنے کی وجہ سے ٹریفک کی نقل و حمل متاثر رہی۔ حکام کے مطابق آج بھی شاہراہ پر کسی جانب سے گاڑیوں کو چلنے کی اجازت نہیں دی گئی ۔ پہلے گذشتہ تین روز سے شاہراہ پر پسیاں گر آنے کی وجہ سے ٹریفک متاثر رہی جبکہ آج پہاڑوں سے پتھر کھسکنے کی وجہ سے گاڑیاں نہیں چلیں۔ انہوں نے کہا کہ شاہراہ پر رامبن ضلع میں انوکھی فال، بیٹری چشمہ اور موکے موڑ پر پہلے پسیاں گر آئی تھیں اور بعد میں پتھر کھسکنے لگے۔ حکام نے مذکورہ شاہراہ کو گذشتہ بدھ سے بند رکھا ہے۔  

راجوری میں دو لڑکوں کی لاشیں لٹکتی حالت میں بر آمد

سرینگر/ضلع راجوری میں سنیچر کو دو لڑکوں کو لٹکتے ہوئے مردہ حالت میں پایا گیا جس کے بعد پولیس نے معاملے کی تحقیقات شروع کی۔ پولیس ذرائع کے مطابق ونی بھالا عرف ونی ساکنہ جواہر نگر راجوری اور سورائو سنگھ ولد رگبھیر سنگھ ساکنہ خدارین، کالا کوٹ کی لاشیں لٹکتی حالت  میں  بر  آمد  کی  گئیں   جس کے بعد معاملے کی تحقیقات کا آغاز کیا گیا ہے۔ پولیس نے کہا کہ لاشوں کو لیکرقانونی لوازمات پوری کی جارہی ہیں ۔  

یاسین ملک تہار جیل میں بھوک ہڑتال پر،علالت کے بعد اسپتال منتقل

سرینگر /لبریشن فرنٹ کے محبوس چیئر مین محمد یاسین ملک کے گھروالوں نے سنیچر کو کہا کہ ملک جیل کے اندر سخت علیل ہوئے ہیں جس کے بعد اُنہیں''نازک حالت'' میں  دلی کے اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ ملک کی والدہ اور ہمشیرہ نے مائسمہ میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ ملک کے وکیل نے اُنہیں مطلع کیا کہ ملک کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ ملک کی ہمشیرہ نے کہا''حکام ملک کے وکیل کو یہ کہنے پرمجبور ہوگئے کہ وہ گذشتہ بارہ روز سے بھوک ہڑتال پر ہیں جس کے دوران اُن کی حالت بہت ہی خراب ہوگئی ہے جس کے بعد اُنہیں اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ ملک اپنی غیر قانونی طور تہار جیل منتقلی کیخلاف احتجاجی بھوک ہڑل پر ہیں۔''۔  انہوں نے مزید کہا کہ ملک کے وکیل کو آج اُن سے ملنے کا پروگرام تھا۔ ملک کی علالت کی خبر پھیلتے ہی سرینگر کے مائسمہ علاقے میں دکانداروں نے اپنی دکانی

کے ای اے چیئر مین یاسین خان دلی میں این آئی اے پوچھ تاچھ کے بعد لوٹ رہے ہیں

سرینگر/کشمیر میں تجارتی انجمنوں کے وفاق، کشمیر اکونومکس الائنس (کے ای اے) کے چیئر مین محمد یاسین خان سنیچر کونئی دلی سے لوٹ رہے ہیں جہاں اُنہیں قومی تحقیقاتی ایجنسی( این آئی اے) نے مبینہ فنڈنگ کیس کے سلسلے میں پوچھ تاچھ کیلئے طلب کیا تھا۔ خان کو قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے) نے18اپریل کو اپنے صدر دفتر واقع نئی دلی طلب کیا تھا۔  یہ خان کی این آئی اے صدر دفتر پر دوسری طلبی تھی۔اس سے قبل ستمبر2017کو بھی خان کو پوچھ تاچھ کیلئے سمن کیا گیا تھا۔اُس وقت خان کی دلی طلبی کیخلاف کشمیر کی تاجر برادری نے احتجاجی ہڑتال کرائی تھی۔ ذرائع کے مطابق این ائی اے نے اسی کیس کے سلسلے میں سینئر علیحدگی پسند لیڈر سید علی گیلانی کے بیٹے، نسیم گیلانی کو بھی22اپریل کو پوچھ کیلئے دلی طلب کیا ہے۔  

پلوامہ کا نوجوان لاپتہ،اقرباء کی بازیابی میں عوام سے تعاون کی اپیل

سرینگر/جنوبی کشمیر میں ضلع پلوامہ کے ترال علاقے میں 10اپریل سے ایک نوجوان لاپتہ ہے۔مذکورہ لاپتہ نوجوان کے گھروالوں نے اُس کی بازیابی کیلئے عوام کا تعاون طلب کیا ہے۔ ریاض احمد شاہ(30) ساکنہ گلاب باغ، ترال10اپریل کو گھر سے نکلنے کے بعد واپس نہیں لوٹا۔ ریاض کے بڑے بھائی نظیر احمد شاہ کے مطابق 10اپریل کو اُس نے ریاض کے ساتھ فون پر بات کی۔ ''اُس نے کہا کہ وہ اونتی پورہ میں ہے''۔ نظیر نے کہا''یہ میری اُس سے آخری بات تھی، جب سے اُس کا فون نیٹ ورک سے باہر آرہا ہے''۔ متاثرہ گھرانے نے متعلقہ پولیس تھانے میں ریاض کے لاپتہ ہونے کی رپورٹ بھی درج کرائی ہے جس کے بعد پولیس نے اُنہیں بتایا کہ ریاض 10اپریل شام چار بجے جموں میں کسی ہوٹل میں تھا۔ نظیر نے کہا''ہمارے ایک جاننے والے نے ریاض کو14اپریل کو ترال بس اسٹینڈ میں دیکھا لیکن وہ ریاض کے ل

کشمیر اور بھارت کے باقی حصوں میں یکساں قوانین ہونے چاہیں: شیو سینا

 سرینگر/شیو سینا کے سربراہ اُدھائو ٹھاکرے نے کہا ہے کہ جموں کشمیر اور بھارت کے باقی ماندہ حصوں میں یکساں قوانین رائج ہونے چاہیں۔ انہوں نے کانگریس پر برستے ہوئے کہا ''کانگریس دفعہ370کا خاتمہ نہیں چاہتی ہے''۔ اورنگ آباد میں ایک عوامی جلسے سے تقریر کرتے ہوئے ٹھاکرے نے کہا''فاروق عبد اللہ اور محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ دفعہ370کے خاتمے کے بعد کشمیر میں ترنگا لہرانے والا کوئی نہیں ہوگا۔کانگریس بھی دفعہ370ختم کرنے کیخلاف ہے۔ ہمارا ماننا ہے کہ پورے بھارت کے اندر یکساں قوانین رائج ہونے چاہیں''۔ ٹھاکرے نے مزید کہا کہ شیو سینا ایسا وزیر اعظم چاہتی تھی جو پاکستان پر حملہ کرے، اسی لئے شیو سینا بھاجپا کی حمایتی بن گئی۔  

ممبئی حملوں کا جواب دیا گیا ہوتا تو پلوامہ حملے کی نوبت نہیں آتی: مودی

سرینگر/وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ اگر2008میں ممبئی حملوں کا جواب دیا گیا ہوتا تو 2019میں پلوامہ حملہ نہیں ہوا ہوتا۔مودی نے یہ بھی کہا کہ بالاکوٹ میں بھارت کی ائیر اسٹرائیک کامیاب تھی اور پاکستان نے چالیس روز تک میڈیا کو بالا کوٹ کے علاقے کا دورہ کرنے کی اجازت نہیں دی۔ مودی نے' ٹائمز نو' کو دئے گئے ایک انٹریو میں کہا کہ کوئی بھی محب وطن بھارتی، پلوامہ حملے میں چالیس سی آر پی ایف اہلکاروں کی ہلاکت کے بعد ہاتھ پہ ہاتھ دھرے نہیں بیٹھ سکتا تھا۔ انہوں نے کہا''اگر ایسے وقت ہم خاموش رہتے تو مجرم سوچتے کہ حکومت مضبوط نہیں ہے اور اُنہیں ایسے حملوں کی عادت ہوجاتی۔اگر 2008میں ممبئی حملوں کا بھر پور جواب دیا گیا ہوتا تو پلوامہ حملے کی نوبت نہیں آتی''۔ مودی نے کہا کہ امریکہ میں 2011حملوں کے بعد کوئی بڑا حملہ نہیں ہوا کیونکہ اُنہوں نے (امریکہ نے) مضبوطی کا