شاہراہ کی بحالی کے ساتھ ہی1000مال بردار گاڑیاں کشمیر روانہ

سرینگر // آئی جی پی ٹریفک الوک کمار نے کہا ہے کہ شاہراہ کے جزوری طور بحال ہوتے ہی جموں سے کشمیر کی طرف قریب 1000سے زیادہ گاڑیوں کو روانہ کیا گیا ۔’کشمیر عظمیٰ ‘کے ساتھ خصوصی بات چیت کے دوران الوک کمار نے کہا کہ شاہراہ کو جزوری طور پر بحال کرنے کے بعد درماندہ ہوئے قریب 500ٹینکر گاڑیوں اور 600دیگر مسافر اور مال برداد گاڑیوں کو کشمیر کی طرف روانہ کیا گیا اور یہ گاڑیاں جواہر ٹنل کو کراس کر کے کشمیر کی طرف روانہ تھیں۔ اُنہوں نے کہا کہ محکمہ ٹریفک اُس وقت شاہراہ پر مسلسل ٹریفک کی بحالی میں لگا ہوا ہے اور شام دیر گئے تک یہ گاڑیاں کشمیر کی طرف روانہ تھی ۔انہوں نے کہا کہ مٹی کے تیل ،پٹرول اورڈیزل سے بھرے ساڑھے 4سو ٹینکر ،500مسافر اور لوڈ کیرئر گاڑیوں کے علاوہ مال سے بھرے 100ٹرک کشمیر پہنچائے گے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جموں میں اس وقت بہت سی گاڑیوں پر مال بھرا جا رہا ہے تاکہ وہ کشمیر ک

شاہراہ کی بحالی کے ساتھ ہی1000مال بردار گاڑیاں کشمیر روانہ

سرینگر // آئی جی پی ٹریفک الوک کمار نے کہا ہے کہ شاہراہ کے جزوری طور بحال ہوتے ہی جموں سے کشمیر کی طرف قریب 1000سے زیادہ گاڑیوں کو روانہ کیا گیا ۔’کشمیر عظمیٰ ‘کے ساتھ خصوصی بات چیت کے دوران الوک کمار نے کہا کہ شاہراہ کو جزوری طور پر بحال کرنے کے بعد درماندہ ہوئے قریب 500ٹینکر گاڑیوں اور 600دیگر مسافر اور مال برداد گاڑیوں کو کشمیر کی طرف روانہ کیا گیا اور یہ گاڑیاں جواہر ٹنل کو کراس کر کے کشمیر کی طرف روانہ تھیں۔ اُنہوں نے کہا کہ محکمہ ٹریفک اُس وقت شاہراہ پر مسلسل ٹریفک کی بحالی میں لگا ہوا ہے اور شام دیر گئے تک یہ گاڑیاں کشمیر کی طرف روانہ تھی ۔انہوں نے کہا کہ مٹی کے تیل ،پٹرول اورڈیزل سے بھرے ساڑھے 4سو ٹینکر ،500مسافر اور لوڈ کیرئر گاڑیوں کے علاوہ مال سے بھرے 100ٹرک کشمیر پہنچائے گے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جموں میں اس وقت بہت سی گاڑیوں پر مال بھرا جا رہا ہے تاکہ وہ کشمیر ک

شمالی کشمیر میں دکان کے اندر پر اسرار دھماکہ،15سالہ بچہ جاں بحق

سرینگر/شمالی کشمیر کے ضلع کپوارہ میں منگل کوایک پُر اسرار دھماکے میں ایک پندرہ سالہ بچہ جاں بحق ہوگیا۔ یہ واقعہ ضلع کے درگمولہ علاقے میں واقع اندرہامہ نامی گائوں میں پیش آیا جہاں آج کم و بیش چار بجے ایک دکان کے اندر زور دار دھماکہ ہوا جس نے نہ صرف دکان کو تہس نہس کرکے رکھ دیا بلکہ اس میں موجود سہیل احمد وانی ولد ثنا اللہ وانی نامی بچہ بھی جاں بحق ہوگیا۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق یہ ایک آئی ای ڈی دھماکہ تھا، جو گائوں میں ایک جنرل سٹور میں ہوا جس سے پورے گائوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی۔ جی این ایس کے مطابق پولیس نے اس واقعہ کی تحقیقات کا آغاز کیا ہے۔  

سات روزتک بند رہنے کے بعد سرینگر۔جموں شاہراہ پرٹریفک جزوی طوربحال

سرینگر/سرینگر۔جموں شاہراہ پر درماندہ چھوٹی گاڑیوں اور تیل سے بھرے ٹینکروں کو منگل کے روز وادی کی طرف بڑھنے کی اجازت دیدی گئی جبکہ اس سے قبل شاہراہ سے پسیاں ہٹاکر اس کو جزوی طور ٹریفک کے قابل بنایا گیا۔ رامبن میں مقیم ہائے وے کے ڈی ایس پی ٹی، سریش شرما نے کہا کہ درماندہ ٹینکروں اور چھوٹی گاڑیوں کو سات روز تک درماندہ رہنے کے بعد آج کشمیر کی طرف سفر کی اجازت دیدی گئی۔ حکام کے مطابق جہاں  شاہراہ کو پسیوں سے نقصان پہنچا تھا وہاں اس کو یکطرفہ ٹریفک کے قابل بنایا گیا ہے۔ مذکورہ شاہراہ حالیہ شدید برفباری کے بعد گذشتہ سات روز سے مسلسل بند پڑی ہے جس کے نتیجے میں وادی کے اندر اشیائے ضروریہ کی سنگین کمی واقع ہوئی ہے۔  

پولیس کا احتجاجی این ایچ ایم ملازمین پر لاٹھی چارج

سرینگر/پولیس نے منگل کو سرینگر میں اُن احتجاجی این ایچ ایم ملازمین پر لاٹھی چارج کیا جو اپنے مطالبات کے حق میں راج بھون تک مارچ کی کوشش کررہے تھے۔ عینی شاہدین کے مطابق نیشنل ہیلتھ مشن (این ایچ ایم) کے سینکڑوں ملازمین نے پرتاپ پارک سے گورنر ہائوس تک مارچ کی کوشش کی جس کو ناکام بنایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پولیس نے مظاہرین پر لاٹھی چارج کرکے اُنہیں منتشر کیا۔ پولیس نے مظاہرین پر مرچی گیس بھی پھینکی جس سے بعض مظاہرین بیہوش ہوگئے۔ اس موقع پر کئی احتجاج کرنے والے ملازمین کی گرفتاری بھی عمل میں لائی گئی۔ مذکورہ ملازمین کیخلاف پولیس کارروائی کے نتیجے میں ریذیڈنسی روڑ پر کچھ دیر کیلئے گاڑیوں کی نقل و حمل میں رکائوٹ پیدا ہوئی ۔ این ایچ ایم ملازمین گذشتہ تیس روز سے احتجاج کی راہ پر ہیں اور وہ اپنی مستقلی کا مطالبہ کررہے ہیں۔  

پلوامہ معرکہ میں جاں بحق جنگجو کی آخری رسومات میں ہزاروں شریک

سرینگر/جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع میں منگل کو ہزاروں لوگوں نے شدید سردی کی پرواہ کئے بغیر اُس عسکریت پسند کی آخری رسومات میں حصہ لیا جو آج صبح فورسز کے ساتھ معرکہ آرائی میں جاں بحق ہوا تھا۔ حزب المجاہدین سے تعلق رکھنے والے ہلال احمد راتھر کی نماز جنازہ میں شمولیت کیلئے لوگوں کی ایک بھاری تعداد مرحوم کے آبائی گائوں، بیگم باغ پہنچی تھی، جو رتنی پورہ نامی اُس گائوں سے محض چار کلو میٹر کی دوری پر واقع ہے جہاں وہ فورسز کے ہاتھوں جاں بحق ہوگیا۔ آخری اطلاعات ملنے تک ہلال کی یکے بعد دیگرے دو بار نماز جنازہ پڑھائی گئی تاکہ سبھی لوگوں کو اس میں شامل ہونے کا موقع مل سکے۔   پولیس نے کہا کہ رتنی پورہ میں ہوئی اس معرکہ آرائی میں ایک فوجی اہلکار بھی ہلاک ہوگیا جبکہ دوسرے کو چوٹیں آئیں۔ ذرائع کا تاہم کہنا ہے کہ مرنے والے فوجی اہلکاروں کی تعداد ،دو ہے۔  

دفعہ35اے کیس کی سماعت کیخلاف بدھ اور جمعرات کو ہڑتال: مشترکہ مزاحمتی قیادت

سرینگر/سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل علیحدگی پسندوں کے وفاق مشترکہ مزاحمتی قیادت نے منگل کو اپنے ایک بیان میں عدالت عظمیٰ میں آئین کی دفعہ35اے کی شنوائی کیخلاف بدھ اور جمعرات(13اور14فروری) کو ہڑتال کی اپیل کی۔ بیان میں مذکورہ لیڈران نے کہا کہ وہ بار بار کی ہڑتالوں کے نقصانات سے باخبر ہیں لیکن یہ معاملہ اتنا حساس ہے جس کیخلاف احتجاج ناگزیر ہے۔ لیڈران نے کہا کہ اگر دفعہ35اے کیخلاف فیصلہ آیا تو ریاست بھر میں ٹھیک اُسی وقت سے ایجی ٹیشن کا آغاز کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس کیس کی شنوائی سے متعلق آخری موقع پر تاریخ منظر عام پر لانا اس بات کو ثابت کرتا ہے کہ اس آئینی دفعہ کیخلاف سازشیں رچائی جارہی ہیں۔ واضح رہے کہ آئین کی دفعہ35اے کا تعلق جموں کشمیر کے عوام کی خصوصی شہریت سے ہے اور اس کیخلاف عدالت عظمیٰ میں کئی درخواستیں پیش کی گئی ہیں جن کی

پلوامہ معرکہ میں ایک فوجی ایک جنگجوجاں بحق: پولیس

سرینگر/پولیس نے منگل کو کہا کہ پلوامہ ضلع میں فورسز اور جنگجوئوں کے مابین ہوئی معرکہ آرائی کے نتیجے میں ایک فوجی اہلکار اور ایک جنگجو جاں بحق ہوگئے۔ پولیس نے جاں بحق فوجی کی شناخت بلجیت سنگھ کے طور کی۔ پولیس نے کہا کہ اس معرکہ آرائی میں  دوسرا فوجی اہلکار زخمی ہوگیا ۔  پلوامہ کے رتنی پورہ گائوں میں جنگجوئوں اور فورسز کے درمیان معرکہ آرائی آج صبح شروع ہوئی تھی جو ختم ہوگئی۔ اس سے قبل خبر ساں ایجنسی جی این ایس نے اطلاع دی تھی کہ اس معرکہ آرائی میں  2فوجی اہلکار اور ایک عسکریت پسند جاں بحق اور ایک فوجی اہلکار زخمی  ہوگیا ۔  ذرائع کے مطابق فوج، سی آر پی ایف اور ایس او جی اہلکاروں نے پلوامہ میں رتنی پورہ گائوں کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن کا آغاز کیا جس کے دوران جنگجوئوں اور فورسز کے مابین گولیوں کا تبادلہ ہوا۔  

پلوامہ معرکہ میں جاں بحق جنگجو کی شناخت ہوگئی

سرینگر/جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع میں منگل کو فورسز کے ساتھ معرکہ آرائی کے دوران جاں بحق جنگجو کی شناخت بیگم باغ پلوامہ کے ہلال احمد کے طور ہوئی ہے جس کا تعلق حزب المجاہدین کے ساتھ تھا۔ اس سے قبل پلوامہ کے رتنی پورہ گائوں میں جنگجوئوں اور فورسز کے درمیان خونین معرکہ آرائی میں 2فوجی اہلکار اور ایک عسکریت پسند جاں بحق ہوگئے۔ اس جھڑپ میں ایک فوجی اہلکار زخمی بھی ہوگیا ۔  ذرائع کے مطابق فوج، سی آر پی ایف اور ایس او جی اہلکاروں نے پلوامہ میں رتنی پورہ گائوں کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن کا آغاز کیا جس کے دوران جنگجوئوں اور فورسز کے مابین گولیوں کا تبادلہ ہوا۔ گولیوں کے اس ابتدائی تبادلے میں خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق ایک کمانڈو سمیت تین فوجی اہلکار زخمی ہوگئے جنہیں سرینگر میں قائم فوجی اسپتال منتقل کیا گیا جہاں دو اہلکار زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ بیٹھے۔ ہلاک

پلوامہ میں خونین معرکہ،2فوجی ،جنگجو جاں بحق، آپریشن جاری

سرینگر/  جنوبی کشمیر کے پلوامہ ضلع میں منگل کو جنگجوئوں اور فورسز کے درمیان جاری  خونین معرکہ آرائی میں 2فوجی اہلکار اور ایک عسکریت پسند جاں بحق ہوگئے۔ اس جھڑپ میں ایک فوجی اہلکار زخمی بھی ہوگیا جبکہ جنگجوئوں کیخلاف فورسز آپریشن جاری ہے۔ پولیس ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے خبر رساں ایجنسی جی این ایس نے اطلاع دی ہے کہ فوج، سی آر پی ایف اور ایس او جی اہلکاروں نے پلوامہ میں رتنی پورہ گائوں کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن کا آغاز کیا جس کے دوران جنگجوئوں اور فورسز کے مابین گولیوں کا تبادلہ ہوا۔ گولیوں کے اس ابتدائی تبادلے میں ایک کمانڈو سمیت تین فوجی اہلکار زخمی ہوگئے جنہیں سرینگر میں قائم فوجی اسپتال منتقل کیا گیا جہاں دو اہلکار زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ بیٹھے۔ ہلاک شدہ اہلکاروں کی شناخت سپاہی بلجیت سنگھ اور نائیک سنید جبکہ زخمی اہلکار کی شناخت حوالدار چندر پال کے طور ہ

سرینگر۔جموں شاہراہ مسلسل ساتویں روز بند

سرینگر/سرینگر۔جموں شاہراہ منگل کو مسلسل ساتویں روز بھی بند ہے۔ حکام کے مطابق شاہراہ سے پسیاں ہٹانے کا کام شد و مد سے جاری ہے۔ انہوں نے اُمید ظاہر کی کہ آج شاہراہ کھلنے کے امکانات ہیں۔ تاہم حکام کا کہنا ہے کہ جب تک شاہراہ کھلنے کے سلسلے میں باضابطہ اعلان نہیں ہوتا ، مسافروں کو اس پر سفر نہیں کرنا چاہئے۔ قابل ذکر ہے کہ وادی کو شاہراہ کے مسلسل بند رہنے کی وجہ سے ضروری اشیاء کی سنگین کمی کا سامنا ہے۔ اس دوران ناجائز منافع خور اور ذخیرہ اندوز بھی عوام کیلئے سوہان روح بنے ہوئے ہیں۔  

ریاست کے مفتی اعظم مفتی بشیر الدین نہ رہے

سرینگر/ریاست جموں کشمیر کے مفتی اعظم، مفتی بشیر الدین احمد فاروقی منگل کو انتقال کرگئے۔ ذرائع کے مطابق مفتی بشیر الدین کو دوران شب علالت کی وجہ سے میڈیکل انسٹی چیوٹ صورہ لیجایا گیا، جہاں اُنہوں نے آخری سانس لی۔ اطلاعات کے مطابق مفتی اعظم کی نماز جنازہ دن کے ساڑھے تین بجے خانقاہ معلیٰ میں ادا کی جائے گی۔