وادی میں 3فیصدپولنگ

  سمبل میں سب سے زیادہ اور اننت ناگ میں سب سے کم لوگ ووٹ ڈالنے نکلے   سرینگر//سیکورٹی کے سخت انتظامات اور انتخابی علاقوں میں مکمل ہڑتال کے بیچ بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں49انتخابی وارڈوں میں ووٹ ڈالے گئے،جس کے دوران 148 امیدواروں کی سیاسی تقدیر الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں قید ہوگئی۔ وادی میں مجموعی طور پر ووٹوں کی شرح3فیصدر ہی ،جس کے دوران سب سے زیادہ ووٹنگ کی شرح سمبل میں36 جبکہ سب سے کم اننت ناگ میں ایک فیصد رہی۔سرینگر میں سب سے زیادہ ووٹ لاوئے پورہ میںڈالے گئے جبکہ چھتہ بل وارڈ میں کوئی بھی ووٹ نہیں ڈالا گیا۔ سرینگر  وسطی کشمیر کے بیروہ،چرار شریف اور ماگام میونسپل کمیٹیوں میں اگرچہ انتخابات نہیں ہوئے،اور بیشتر امیدوار بلا مقابلہ کامیاب ہوئے،تاہم کچھ نشستوں پر کوئی بھی امیدوار کھڑا نہیں ہوا تھا۔سرینگر کے19وارڈوں میںبدھ کو بلدیاتی انتخابات ہوئے ،ج

ریاست میں 30 فیصد پولنگ درج:کابرا

سرینگر // ریاست کے چیف الیکٹورل افسر شالین کابرا نے کہا ہے کہ میونسپل انتخابات2018 کے دوسرے مرحلے کے دوران آج30 فیصد پولنگ درج کی گئی۔سی ای او نے کہا کہ صوبہ جموں میں214 وارڈز میں76 فیصد جبکہ صوبہ کشمیر کے49 وارڈوں میں3 فیصد پولنگ درج کی گئی ۔ بانڈی پورہ میں36 فیصد پولنگ درج کی گئی۔جموں صوبہ کے ریاسی ضلع میں84.6 فیصد پولنگ درج کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ پہلے اور دوسرے مرحلے میں جموں صوبہ میں67.3 فیصد ووٹنگ درج کی گئی جبکہ کشمیر صوبہ میں8.34 فیصد ووٹنگ درج کی گئی اور اس طرح ریاست میں دونوں مرحلوں کے انتخابات میں ووٹنگ کی مجموعی شرح46.7 فیصد رہی۔سی ای او نے کہا کہ دوسرے مرحلے کے لئے ریاست بھر میں544 پولنگ سٹیشن قائم کئے گئے تھے جن میں سے صوبہ کشمیر میں270 جبکہ صوبہ جموں کے274 پولنگ سٹیشن شامل تھے۔انہوں نے کہا کہ دوسرے مرحلے کے لئے263 میونسپل وارڈز میں1029 اُمیدوار میدان میں ہیں جن میں سے88

کہیں کال پر،تو کہیں بغیرکال ہڑتال

سرینگر//بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں مزاحمتی قیادت کی طرف سے دی گئی کال کے پیش نظر انتخابات ہونے والے علاقوں میں مکمل ہڑتال کی وجہ سے زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی۔سرینگر کے پائین شہر اور ضلع کولگام میں بغیر کال ہڑتال رہی،جبکہ ریل سروس کو معطل کرنے کے علاوہ انٹرنیٹ کی رفتار کو کم کیا گیا۔سید علی گیلانی،میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مزاحمتی قیادت کی کال پر انتخابی علاقوں میںہمہ گیر ہڑتال رہی ۔جہاں پر انتخابات ہونے تھے وہاں سڑکوں پر ٹریفک کی نقل وحرکت مسدود ہو کر رہ گئی،تاہم نجی گاڑیاں سڑکوں پر چلتی نظر آئیں۔ سرینگر کے شہر خاص میں اگر چہ فتح کدل کو چھوڑ کر دیگر علاقوں میں انتخابات نہیں تھے،تاہم اس کے باوجود بیشتر علاقوںبشمول،نوہٹہ،راجوری کدل،خواجہ بازار،ملارٹہ،بہوری کدل،زینہ کدل،نواب بازار،صراف کدل،حول،خانیار،نالہ مار روڈ سمیت دیگر علاقوں میں بھی بغیر کال ہڑتال رہی۔اس د

انتخابی عمل کی رپورٹ زیر داخلہ کو پیش

نئی دہلی // ریاستی گورنر ستیہ پال ملک نے بدھ کو نئی دلی میںمرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کیساتھ تفصیلی میٹنگ کی جس میں ریاست کی سیاسی اور سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ اس دوران میونسپل انتخابا ت کے حوالے سے ریاستی گورنر نے مرکزی وزیر داخلہ کو مفصل رپورٹ پیش کی ۔ مرکزی وزیر داخلہ نے گورنر ستیہ پال ملک کو یقین دلایا کہ کشمیر میں میونسپل اور پنچائتی انتخابات کا انعقاد ایک چیلنج تھا اور مرکزی حکومت ریاست کی گورنر انتظامیہ کی بھر پور مدد کریگی ۔معلوم ہو اہے کہ مرکزی وزیر داخلہ نے ریاستی گورنر کو یقین دلایا کہ ان کو انتظامی امور چلانے میں بھر پور مدد کی جائیگی اور پر امن انتخابات کیلئے جس طرح کی بھی سیکورٹی درکار ہوگی اسے فراہم کی جائیگی ۔ آدھ گھنٹے جاری رہنے والی میٹنگ میں امن وقانون کی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ مرکزی وزیر داخلہ نے گورنر  کے کل کے بیان پر بھی بات کی ہے ج

طلوع ِ آفتاب سے قبل پولنگ شروع کرنیکی کیا منطق:عمر ،نعیم

 سرینگر// بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں پولنگ کاآغازطلوع آفتاب سے قبل رکھے جانے پرنیشنل کانفرنس اورپی ڈی پی نے حیرانگی ظاہرکرتے ہوئے ناراضگی ظاہرکی ہے ۔ عمرعبداللہ نے سماجی رابطہ گاہ ٹویٹرپر ٹویٹ میں الزام لگایا کہ غالباًپولنگ کی شروعات کاوقت اس بناء پرصبح 6بجے رکھاگیاہے تاکہ میڈیاسے وابستہ افرادیہ نہ دیکھ پائیں کہ ووٹراصلی ہیں یا نقلی ۔عمر نے پولنگ بوتھوں کوعلی الصبح6بجے کھولنے کے فیصلے کوسازش سے تعبیرکرتے ہوئے سوال کیا کہ کشمیرمیں طلوع آفتاب کاوقت تو6بجکر32منٹ ہے اوراس سے آدھ گھنٹہ پہلے پولنگ کاوقت رکھے جانے کی کیامنطق ہوسکتی ہے۔ پی ڈی پی کے سینئرلیڈرنعیم اخترنے کہاکہ جموں وکشمیرکی سیاسی تاریخ میں شایدیہ پہلی مرتبہ ہواہے کہ پولنگ سورج نکلنے سے پہلے ہی شروع کی جارہی ہے ۔سابق وزیرنے ٹویٹرپر ایک ٹویٹ میں الیکشن کمیشن کوہدف تنقیدبناتے ہوئے طنزیہ اندازمیں کہاہے کہ شایدتیسرے

انتخابات سے اظہار لا تعلقی

سرینگر // مشترکہ مزاحمتی قیادت سید علی گیلانی ،میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے کہا ہے کہ کشمیری عوام نے ایک بار پھر بلدیاتی انتخابات سے لا تعلق رہ کر اور بے مثال احتجاجی ہڑتال کے ذریعے اسے مسترد کردیا ہے۔ قائدین نے کہا کہ نام نہاد انتخابات کے نتائج سے پہلے ہی سرینگر شہر کے میئر بنانے کے حوالے سے اعلان ، انتخابات کو صبح 6 بجے سے منعقد کرانا، فوجی جمائو میںمزید تقویت اور انٹرنیٹ پر پابندی اور حریت پسند نوجوانوں کی اندھا دھند گرفتاریوں نے ان نام نہاد انتخابات کی حقیقت عوام کے سامنے کھول کر رکھ دی ہے۔ انہوں نے کہا گذرتے انتخابی مرحلوں کے ساتھ ساتھ ان انتخابات کی حقیقت دنیا کے سامنے بے نقاب ہوتی جا رہی ہے۔قائدین نے کہا کہ در حقیقت ان نام نہاد انتخابات کا مقصد یہاں کی سنگین ،سیاسی اورزمینی صورتحال کو توڑ مروڑ کے دنیا کے سامنے پیش کرنا ہے تاکہ اس بات کا تصور دیا جائے کہ کشمیر میں 

جالندھرسٹی انجینئرنگ کالج ہوسٹل پر چھاپہ

سرینگر//جموں وکشمیر پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ پنجاب پولیس کیساتھ ایک مشترکہ کارروائی عمل میں لائی گئی جس دوران عسکری تنظیم ’انصار غزوۃ الہند‘اور ’جیش محمد ‘سے رابط رکھنے کی پاداش میں 4طالب علموں کو ہتھیار اور گولی بارود سمیت جالندھر پنجاب سے گرفتار کیا گیا ۔جموں وکشمیرپولیس نے پنجاب پولیس کے اشتراک سے بدھ علی الصبح جالندھرکے مضافاتی علاقہ شاہ پور میں واقع ایک نجی انجینئرنگ کالج‘سٹی انسٹی چیوٹ آف انجینئرنگ منیجمنٹ اینڈٹیکنالوجی میں زیرتعلیم ایک کشمیری طالب علم زاہد گلزار ولد گلزار احمد راتھرساکن راجپورہ پلوامہ کے ہوسٹل کمرے میں چھاپہ ڈالا۔بتایاجاتاہے کہ زاہدگلزار،جوکہ یہاں بی ٹیک (سیول) میں سیکنڈسمسٹر کاطالب علم ہے ،کے کمرے کی جب پولیس کی مشترکہ پارٹی نے تلاشی لی تواسوقت کمرے میں مزیدتین کشمیری طالب علم بھی موجودتھے۔ پنجاب پولیس کے سربراہ سریش ارورہ نے ایک

تازہ ترین