تازہ ترین

پلوامہ اور شوپیان میں خونین معرکے، 5جنگجو،2فوجی اور 2شہری جاں بحق

 پلوامہ میں کرفیو نافذ،دونوں اضلاع میں انٹر نیٹ بند،پلوامہ کے شہری اور 2جنگجوئوں کی نمازِ جنازہ میں لوگوں کی بھاری شرکت   پلوامہ +شوپیان //ڈلی پورہ پلوامہ اور ہنڈیو شوپیان میں دو مسلح تصادم آرائیوں کے دوران جیش کمانڈر سمیت 5جنگجو اور 2شہری جاں بحق جبکہ فائرنگ کے تبادلے میں 2 فوجی اہلکار ہلاک اور دو دیگر زخمی ہوئے ،نیز مارے گئے پلوامہ کے شہری کا بھائی بھی زخمی ہوا۔ہنڈیو شوپیان کے شہری کی ہلاکت کے بارے میں پولیس کا دعویٰ ہے کہ وہ جنگجو تھا اور اُس کیخلاف کیس بھی درج تھا جبکہ اہل خانہ کا کہنا ہے کہ وہ عام نوجوان تھا۔ اس دوران ضلع انتظامیہ نے پلوامہ میں کرفیو نافذ کردیا جبکہ ضلع میں مکمل ہڑتال کی گئی۔ اس دوران پلوامہ کے دو مقامی جنگجوئوں اور شہری کو سپرد خاک کیا گیا جنکی نماز جنازہ میں ہزاروں شریک ہوئے۔دونوں اضلاع میں انٹر نیٹ سروس بند کردی گئی۔ پلوامہ  پلوا

شہری ہلاکتیں نا قابل برداشت

سرینگر //مشترکہ مزاحمتی قیادت نیفورسزکے علاوہ دیگر ایجنسیوں کے ہاتھوں معصوم اور بے گناہ لوگوں کو قتل کرنے کی گھناؤنی کارروائیوں کے خلاف آج  یعنی 17مئی بروز جمعہ ریاست گیر ہڑتال کے ذریعے ایک پُرامن احتجاج کرنے کی اپیل کی ہے۔ قائدین نے ارشد احمد ڈار پٹن، رئیس احمد ڈار پلوامہ اور نعیم احمد شاہ بھدرواہ جیسے عام شہریوں کو رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں فورسز کی طرف سے قتل کرنے کی کارروائیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارت نے ریاست جموں کشمیر کو اپنی جنگی مشقوں کے لیے ایک ایسا میدان کارزار بنادیا ہے جہاں عام لوگوں کو اپنی عزیز جانیں، عزت وقار اور قیمتی جائیدادوں کے حوالے سے عدم تحفظ اور سنگین خوف وحراس میں مبتلا کیا گیا ہے۔ پُرامن عوامی احتجاجی جلوسوں پر براہِ راست نشانہ ساز گولی باری کرکے قتل کرنے کی کھلی چھوٹ دی گئی ہے اور مختلف ایجنسیوں کو ہتھیار فراہم کرکے ایک بدتری

بھدرواہ میں مبینہ گائو رکھشکوں کی فائرنگ، 50سالہ شخص ہلاک

بھدرواہ //جمعرات کی علی الصبح مبینہ گائو رکھشکوں کے ہاتھوں ایک شخص کی ہلاکت کے بعد انتظامیہ نے کرفیو نافذ کر دیا۔قصبہ میں کشیدگی پائی جارہی ہے۔مقامی لوگوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ  بدھ اورجمعرات کی درمیانی شب 2بجے کے قریب 3افراد اپنے مویشی لے کر آبائی گھر قلعہ محلہ کی طرف جا رہے تھے ، تو نالٹھی کے قریب گائو رکھشکوں نے ان پر گولی چلا دی جو  50سالہ نعیم احمد شاہ کو لگی اوراس کی موقعہ پر ہی موت واقع ہوئی  جبکہ، اس کے ساتھی معمولی زخموں کے ساتھ جان بچا کر وہاں سے بھاگ نکلے ۔ اس واقعہ کی اطلاع پھیلتے ہی لوگوں نے احتجاج کرنا شروع کر دیا ۔ وہ مجرموں کو گرفتار کرنے کی مانگ کر رہے تھے۔ پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ کاٹھی نالٹھی علاقہ سے 8مشکوک افراد کو حراست میں لیا گیاتاہم اصل مجرم ابھی تک پولیس کی گرفت میں نہیں آسکا ہے ۔ مظاہرین نے پولیس تھانہ کے باہر احتجاج کیا جس دوران پتھرائو

سرینگر میں آج سکول بند ،یونیورسٹی امتحانات ملتوی

سرینگر// حکام نے جمعہ کو سرینگر میں تعلیمی اداروں میں درس و تدریس کا کام بند رکھنے کا فیصلہ کیاہے،جبکہ کشمیر یونیورسٹی نے بھی17مئی کو پوسٹ گریجویشن کے داخلی امتحانات موخر کرنے کا اعلان کیا ہے۔ پلوامہ اور پٹن میں شہری ہلاکتوں کے خلاف مشترکہ مزاحمتی قیادت کی طرف سے ہڑتال کال کے پیش نظر حکام نے سرینگر میں جمعہ کو تعلیمی ادارے بند رکھنے کا فیصلہ لیا ہے۔کشمیر یونیورسٹی کے داخلہ و مقابلہ جاتی امتحانات شعبے کے ڈائریکٹوریٹ کی طرف سے جاری کی گئی نوٹفکیشن میں کہا گیا کہ17مئی کو لئے جانے والے داخلی امتحانات کو موخر کیا گیا اور اب یہ امتحانات23مئی کو لئے  جائیں گے۔ تاہم امتحانات کے مکان و زماں میں کوئی بھی تبدیلی نہیں لائی گئی ہے۔

زینہ پورہ کا زخی پی ڈی پی ورکر

 شوپیان // زینہ پورہ میں  8روز قبل پولنگ کے دوسرے روز مشتبہ جنگجوئوں کی فائرنگ سے زخمی پی ڈی پی ورکر صورہ اپتال میں دم توڑ بیٹھا۔زینہ پورہ میں 8مئی کو مقامی اسپتال کے بالکل قریب دو ادویات فروشوں کو مشتبہ جنگجوئوں نے اغوا کر کے وڈر زینہ پورہ علاقے میں لیا، جہاں ان پر فائرنگ کی گئی۔ بعد میں پولیس نے دونوں زخمی ادویات فروشوںعرفان احمد شیخ ولد عبدالحمید اورمظفر احمد بٹ نازک حالت میں سرینگر منتقل کردیا جہاں عرفان احمد 8روز کی کشمکش کے بعد چل بسا۔اسکی لاش جب اسکے آبائی گائوں لائی گئی تو یہاں کہرام مچ گیا۔بتایا جاتا ہے کہ دونوں پی ڈی پی کے حمایتی تھے۔پولیس نے اس ضمن میں کیس زیر نمبر25/2019درج کر کے تحقیقات شروع کردی ہے۔  

پلوامہ کے 2نوجوان

 سرینگر // پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے اہل خانہ کی مدد سے پلوامہ کے مزید دو نوجوانوں کو جنگجوئوں کی صف میں شامل کرنے سے روکا۔تاہم پولیس نے کہا کہ انکی سلامتی کے پیش نظر انکے نام ظاہر نہیں کئے جارہے ہیں۔پولیس نے آفیشل ٹویٹر اکونٹ پر ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ پلوامہ کے دو نوجوان جو جنگجوئوں کی صف میں شامل ہونے جارہے تھے، کو اہل خانہ کی مدد سے روکا گیا۔پولیس نے بتایا ہے کہ دونوں کو انکے والدین کے حوالے کیا گیا۔  

چینہ بل کا نوجوان سپرد خاک

  بارہمولہ //شمالی قصبہ پٹن کے چینہ بل علاقے میںزخمی نوجوان ارشد احمد ڈار کے جاں بحق  ہونے کے بعد جمعرات کوپٹن کے کئی  حساس علاقوں میں کرفیو جیسی بندشیں عائدکرنے کیساتھ ساتھ سڑکوں کوسیل کردیا گیا،اورکسی بھی صورتحال سے نمٹنے کیلئے پولیس وفورسزکے اضافی دستے تعینات کردئیے گئے ۔ جبکہ حکام نے  امن و امان برقرار رکھنے کیلئے ضلع بارہمولہ میں انٹر نیٹ خدمات کو بھی معطل کردیا ۔ اس بیچ نوجوان کی نماز جنازہ میں کثیر تعداد میں لوگوں نے شرکت کی جس دوران رقعت آمیز مناظر دیکھنے کوملے۔ سمبل بانڈ ی پورہ میں 8 مئی کو مبینہ طور تین سالہ بچے کے ساتھ جنسی زیادتی کے خلاف  پر تشدد احتجاج کے دوران ارشد احمد زخمی ہوا تھا جو صورہ میں بدھ کی رات دم توڑ بیٹھا تھا۔نوجوان کی لاش بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب ہی لواحقین کے حوالے کی گئی تھی ۔ جمعرات کی صبح نوجوان کی نماز جنازہ  ادا کی گئ