کرونا کا قہر : دنیا میں 53179کی موت،متاثرین کی تعداد 1017693ہوگئی

 بیجنگ / جنیوا // دنیا کے بیشتر ممالک میں وبا بن کر قہر برپا نے والے کورونا وائرس (کووڈ 19) کے تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اس وجہ سے دنیا بھر میں اب تک 53179 لوگوں کی موت ہو چکی ہے ، اور 1017693 لوگ اس متاثرہ ہوئے ہیں۔دنیا بھر میں اب تک اس وبا سے 2012072 لوگ ٹھیک ہوئے ہیں۔ یہ اعداد و شمار امریکہ کے جانک ہاپنکس یونیورسٹی کے مطابق ہیں۔دنیا کے سب سے طاقتور ملک امریکہ میں یہ بیماری شدید طور پر پھیل چکی ہے ۔ یہاں پر اب تک 245573 لوگ اس متاثرہ ہوئے ہیں اور اس کی وجہ سے 6088 اموات ہو چکی ہے ۔ وہیں اٹلی بھی اس وبا سے بری طرح متاثر ہے ۔ یہاں پر اس قاتل وائرس کی وجہ سے 13915 اموات ہو چکی ہیں اور 115242 لوگ اس متاثرہ ہوئے ہیں۔اس عالمی وباکے مرکز چین میں اب تک 82،464 لوگ اس متاثرہ ہوئے ہیں اور اس کی وجہ سے 32302 لوگوں کی جان گئی ہے ۔ اس وائرس کو لے کر تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین می

امریکہ میں مرنے والوں کی تعداد 6ہزار سے متجاوز

واشنگٹن//امریکہ میں کورونا وائرس (کووڈ-19)وبا سے اب تک 6088اموات ہو چکی ہیں۔اور 245573 افراد متاثر ہیں۔جمعہ کے روز جانس ہاپکنز یونیورسٹی کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، نیویارک میں اب تک انفیکشن کی وجہ سے اموات کی تعداد سب سے زیادہ ہے ۔اچھی بات یہ ہے کہ اب تک 9228صحت یاب ہوئے ہیں۔امریکہ میں حالیہ دنوں کورونا متاثرین کی تعداد دنیا میں سب سے زیادہ ہے ۔جانس ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق ، اب تک دنیا بھر میں 10 لاکھ سے زائد افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں جبکہ اس وبا سے 53،000 سے زیادہ اپنی جانیں گنوا چکے ہیں۔وائٹ ہاؤس کے ماہرین کا کہنا ہے کہ تقریباً ایک لاکھ سے 2 لاکھ 40 ہزار امریکی اس مرض سے ہلاک ہوسکتے ہیں۔اسی صورتحال کو دیکھتے ہوئے ڈیزاسٹر رسپانس ایجنسی فیما نے امریکی فوج سے لاشوں کو رکھنے کیلئے ایک لاکھ بیگز منگوالیے ہیں۔مزید برآں امریکی میں اس صورتحال کے بعد85 فیصد امریکی کسی نا

ٹرمپ کی دوبارہ جانچ،رپورٹ منفی آئی

واشنگٹن // امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ایک مرتبہ پھر کورونا وائرس ‘ کووڈ 19 ’ کی جانچ کی گئی جس میں وہ کورونا وائرس سے متاثر نہیں پائے گئے ۔ وائٹ ہاؤس کی ترجمان اسٹیفنی گریشم نے ایک بیان جاری کر کے یہ اطلاع دی ۔ وائٹ ہاؤس کے ڈاکٹر شیان کونلے نے روزانہ وائٹ ہاؤس کورونا وائرس ٹاسک فورس کی بریفنگ سے ٹھیک پہلے ایک میمو جاری کر کے کہا‘‘ کل صبح صدر ٹرمپ کی دوبارہ کورونا وائرس کے تعلق سے جا نچ کی گئی اور وہ صحت مند ہیں اور ان میں کورونا وائرس سے متعلق کوئی علامات نہیں پائی گئی ہیں’’ ۔ ٹرمپ کے جمعرات کے روز کورونا وائرس بریفنگ میں سامنے آنے سے پہلے ہی وہاں موجود صحافیوں کو میمو دے دیا گیا تھا جس میں کہا گیا کہ مسٹر ٹرمپ کی دوبارہ جانچ کی گئی تھی اور 15 منٹ بعد جانچ کی رپورٹ ان کے ہاتھ میں تھی ۔ میمو میں کہا گیا کہ مسٹر ٹرمپ نے جانچ کرائی جس کی رپورٹ صرف 15 م

کورونا وائرس:دنیا میں46291ہلاکتیں،9لاکھ سے زائد متاثر

 بیجنگ / جنیوا // دنیا کے بیشتر ممالک میں جان لیوا کورونا وائرس (کووڈ 19) کا پھیلاؤ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اوراس وبا سے دنیا بھر میں اب تک46291 افراد ہلاک اور925132 متاثر ہیں۔کورونا وائرس سے بری طرح متاثر اٹلی میں اس وائرس سے سب سے زیادہ اموات ہوئی ہیں، جہاں مرنے والوں کی تعداد 13،155 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 110،574 لوگ اس سے متاثر ہیں۔اس عالمی وبا کے مرکز چین میں اب تک 81،554 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ 3312 لوگوں کی اس وائرس کے زد میں آنے کے بعد موت ہو چکی ہے۔ اس وائرس کے حوالہ سے تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں موت کے 80 فیصد کیسز 60 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے تھے۔اسپین میں اس وبا سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 9387 ہو گئی ہے۔ تازہ اعداد و شمار کے مطابق اسپین میں کورونا وائرس سے متاثر افراد کی تعداد بڑھ کر 1،04،118 ہو گئی ہے. اس کے علاوہ فرا

اٹلی میں ہلاکتوں کی تعداد سرکاری اعداد و شمار سے زیادہ

واشنگٹن//اٹلی میں کورونا وائرس 'کووڈ -19' سے مرنے والوں کی تعداد رپورٹ کئے جا رہے اعداد و شمار سے کافی زیادہ ہیں۔’وال اسٹریٹ جرنل (ڈبلیو ایس جے) نے اٹلی کے کوکاگلاؤ کے ڈپٹی میئر یوگینی فوساٹی کے حوالے سے یہ اطلاع دیتے ہوئے کہا’’اٹلی میں کورونا وائرس سے حقیقی موت کی تعداد سرکاری طور پر اعلان تعداد سے بہت زیادہ ہے۔ صحیح وقت پر مناسب علاج نہ ملنے کی وجہ سے بہت سے لوگوں کی موت ہو ئی ہے۔ڈبلیو ایس جے نے کہا کہ کورونا وائرس کا ٹسٹ صرف ان ہی لوگوں کا ہو سکا ہے جس میں اس کے علامات دکھائی دیئے۔ اخبار کہتا ہے کہ حقیقت میں اس وائرس سے کئی ملین لوگ متاثر ہوئے ہوں گے۔بریس سیا کے ڈاکٹر ایلونورا یولومبی نے کہا’’کورونا سے متاثر بہت سے مرنے والوں کا پوسٹ مارٹم نہیں ہو پا رہاہے۔ اس وبا سے مرنے والوں میں جن کی جانچ نہیں ہوئی ان میں عمردراز افراد زیادہ ہیں۔ لیکن بہت س

ماحولیاتی تبدیلی پر کو ئی خاص فرق نہیں پڑا:اقوام متحدہ

نیویارک//ماحولیات میں تبدیلی کے حوالہ سے میڈیامیں آنے والی باتوں کے جواب میں اقوام متحدہ کی ایجنسی نے کہا ہے کہ کورونا لاک ڈاؤن کے باعث ماحولیاتی تبدیلی پر کوئی خاص فرق نہیں پڑا۔ فیکٹریاں، جہاز بند ہیں، گاڑیاں بھی کم چل رہی ہیں مگر اس کا اثر عارضی نوعیت کا ہے جس سے ماحولیاتی آلودگی پر کوئی خاص اثر نہیں پڑ رہا۔اقوام متحدہ کی عالمی موسمیاتی تنظیم کے عہدیدار لارس پیٹر نے کہا کہ آلودگی اور کاربن ڈائی آکسائڈ گیسوں کے اخراج میں کمی عارضی طور پر ہوئی ہے، اس کا ماحول پر کوئی خاص اثر نہیں ہوگا۔انہوں نے کہا کہ میڈیا پر بڑی قیاس آرائیاں کی جاری ہیں کہ لاک ڈاؤن سے ماحول پر بڑا فرق پڑ جائے گا، ایسا نہیں ہے کیوں کہ کچھ عرصے میں لاک ڈاؤن ختم اور سرگرمیاں دوبارہ شروع ہو جائیں گی۔یواین آئی  

خا نہ کعبہ میں طواف دوبارہ شروع

مکہ المکرمہ//حرم شریف میں مطاف کے حصے میں طواف کا سلسلہ دوبارہ شروع کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے تاہم اس دوران کم لوگوں کا اجتماع ہی طواف کر سکے گا۔کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے سعودی حکومت نے 23 مارچ سے 21 روز کے لیے جزوی کرفیو کا اعلان کر رکھا ہے۔اس سے قبل حفاظتی اقدامات کے تحت تمام مساجد بشمول مسجد الحرام اور مسجد نبوی کے اندرونی اور بیرونی حصے میں پنجگانہ نماز اور نماز جمعہ کی ادائیگی پر مکمل پابندی عائد کی جا چکی ہے۔سعودی حکام نے اس سے قبل وائرس سے بچائو کے لیے خانہ کعبہ کے اطراف سپرے کے لیے مطاف خالی کرایا تھا اور طواف کے عمل کو روک دیا گیا تھا جب کہ بعد میں مطاف کو زائرین کے لیے کھولا گیا تو انہیں کعبہ کے قریب جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔  

سعودی عرب کی مسلمانوں سے حج کی منصوبہ بندی نہ کرنے کی اپیل

ریاض //سعودی عرب نے دنیا بھر کے مسلمانوں کو صلاح دی ہے کہ وہ فی الحال حج بیت اللہ کی منصوبہ بندی نہ کریں ، کوروناوائرس کے تیزی کے ساتھ پھیلنے کے پیش نظر سعودی حکومت نے اگرچہ فی الحال حج 2020کو موقوف کرنے کا فیصلہ نہیں کیا ہے تاہم دنیا بھر کے مسلمانوں کوسے کہا گیا ہے کہ وہ فی الحال دنیا بھر کی صورتحال واضح ہوجانے تک انتظار کریں ۔ الجزیرہ میں نشر ایک خبر کے مطابق سعودی عرب کی حکومت میں حج اور عمرہ کے وزیر محمد صالح بنٹے نے ایک ٹی وی انٹرویو میں لوگوں سے اس سال حج کے منصوبے ابھی سے نہ بنانے کی اپیل کی ہے۔ اس سے قبل ، یہاں سال بھر چلنے والے عمرہ کو گزشتہ ماہ سے ہی بند کر دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ، دو ہفتہ قبل کورونا کے پیش نظر یہاں مساجد میں نماز ادا کرنے یا دیگر اجتماعی مذہبی پروگراموں پر بھی فی الحال پابندی عائد ہے۔صالح نے سرکاری ٹی وی چینل الخبریہ سے بات چیت میں دعوی کیا کہ سعودی عرب عمر

امریکہ میں2 لاکھ افراد کی موت کا خطرہ :وائٹ ہاؤس

واشنگٹن // امریکہ میں کورونا وائرس (کووڈ -19) سے دو لاکھ افراد کی موت ہو سکتی ہے ۔وائٹ ہاؤس کی فیڈ بیک کوآرڈی نیٹر ڈے بورا بیرکس نے منگل کو پریس کے نمائندوں کو بتایاکہ ہمارے یہاں کورونا وائرس سے مرنے والوں کی اصل تعداد ایک لاکھ سے دولاکھ ہو سکتی ہے ۔ ہمیں لگتا ہے کہ یہ ایک حد ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں واقعی یقین اور امید ہے کہ ہم روزانہ مزید بہتر کرسکتے ہیں۔محترمہ بیرکس نے ایک چارٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں اس وبا سے ایک لاکھ سے دو لاکھ لوگوں کی موت ہو سکتی ہے ۔جان ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق امریکہ میں کورونا وائرس (کووڈ -19) سے 3700 افراد کی موت ہو چکی ہے اور 185000 متاثر ہیں۔دنیا بھر میں کورونا وائرس (کوویڈ ۔19) کے پھیلنے میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔  

کرونا کا عالمی بحران | 41920ہلاکتیں ،متاثرین کی تعداد 852486 ہوگئی

بیجنگ / جنیوا // دنیا کے سب سے زیادہ (اب تک 185) ممالک میں پھیل چکے کورونا وائرس (کووڈ -19) کا قہر تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اس خطرناک وائرس سے دنیا بھر میں اب تک 41920 لوگوں کی موت ہو چکی  ہے جبکہ قریب 852486 لوگ اس سے متاثر ہیں۔ چین میں اب تک 81518 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی ہے اور 3305 لوگوں کی اس وائرس کے زد میں آنے کے بعد موت ہو چکی ہے۔ اس وائرس کو لے کر تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں ہوئی موت کے 80 فیصد معاملات 60 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے تھے۔ کورونا کے سلسلے میں سب سے زیادہ سنگین صورتحال اٹلی اور اسپین کی ہے۔ عالمی وبا کورونا وائرس (کووڈ -19) سے بری طرح متاثر اٹلی میں اس انفیکشن سے مرنے والوں کی تعداد 12 ہزار کا ہندسہ پار کر 12428 پہنچ گئی ہے۔اسپین میں اس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 8464 ہو گئی ہے۔ تازہ اعداد و شمار کے مطابق اسپی

ترکی میں قومی فنڈ کا قیام | طیب اردگان نے7 ماہ کی تنخواہ عطیہ کردی

انقرہ//ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے کورونا وائرس سے نمٹنے اور وبا سے متاثرین افراد کی مدد کے لئے قومی فنڈ کا قیام کرتے ہوئے اپنی 7 ماہ کی تنخواہ فنڈ میں جمع کرادی۔کورونا کے مریض اس وقت اسلامی ممالک میں ایران کے بعد سب سے زیادہ ترکی میں ہیں اور وہاں 31 مارچ کی صبح تک مریضوں کی تعداد 10 ہزار 827 تک جا پہنچی تھی جب کہ وہاں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد بھی بڑھ کر 168 تک جا پہنچی۔کورونا سے نمٹنے کے لیے ترکی نے بھی جزوی لاک ڈاؤن کا نفاذ کر رکھا ہے جب کہ تعلیمی اداروں سمیت کاروباری اداروں کو بند کردیا گیا ہے اور لوگوں کو گھر میں رہنے کی ہدایات کی گئی ہیں۔ترک خبر رساں ایجنسی ‘اناطو’ کے مطابق ترک صدر نے 30 مارچ کو کورونا سے متاثرہ غریب افراد کے لیے قومی فنڈ قائم کرنے کا اعلان کیا اور ساتھ ہی صدر نے اس فنڈ میں اپنی 7 ماہ کی تنخواہ جمع کروانے کا اعلان کردیا۔خبر رساں ایجنسی نے یہ نہیں ب

کوروناوائرس:ٹینس کورٹس عارضی اسپتال میں تبدیل

واشنگٹن//امریکامیں مہلک عالمی وباکوروناوائرس سیمتاثرہ افرادکی بڑھتی تعداداوراسپتالوں میں جگہ نہ ہونیکی وجہ سیاب یوایس اوپن ٹینس کورٹس کوعارضی اسپتال میں تبدیل کردیاگیاہے۔امریکاکیکوئن اسٹیڈیم کورٹس کواب ہنگامی طورپرکوروناکیمریضوں کیلییعارضی گھرکی سہولت دی گئی ہیجہاں میڈیکل اسٹاف کی نگرانی میں انہیں رکھاجاسکیگا۔اگست میں ان کورٹ پریوایس اوپن گرینڈسلم ٹورنامنٹ کیمقابلیہوتیہیں،ٹینس کورٹس کیساتھ واقع ایک کچن میں روزانہ 25 ہزارکھانیکیپیکٹس تیارکییجائیں گے، جن کوشہرمیں خدمات انجام دینیوالے میڈیکل اوردوسریاسٹاف میں تقسیم کیاجائیگا۔  

کرونا وبا میں تیزی کے ساتھ اضافہ | دنیا بھر میں37519ہلاکتیں، 781656متاثرین

بیجنگ// دنیا کے تقریبا بیشتر ممالک میں پھیل چکے کورونا وائرس (کووڈ 19) رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اس خطرناک وائرس سے دنیا بھر میں اب تک 37519 لوگوں کی موت ہو چکی ہے جبکہ تقریبا 781656 افراد اس سے متاثر ہیں۔ ہندوستان میں بھی کورونا وائرس پھیلتا جا رہا ہے اور ملک میں مجموعی کورونا وائرس کے 180 نئے کیس سامنے آنے کے بعد اس کے متاثرین کی تعداد بڑھ کر 1251 ہو گئی ہے جبکہ تین اور مریضوں کی موت ہونے کے بعد مرنے والوں کی تعداد 32 ہو گئی ہے ۔وزارت صحت نے پیر کو بتایا کہ ملک میں کورونا وائرس کے 1251 کیسزکی تصدیق ہو چکی ہے ۔اس عالمی وبا کے مرکز چین میں اب تک 81ہزار518 افراد کے کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی ہے اور 3305 لوگوں کی اس وائرس کی زد میں آنے کے بعد موت ہو چکی ہے ۔اس وائرس کے حوالہ سے تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں ہونے والی ا موات کے 80 فیصد کیسز 60 سال سے زیادہ عمر

ٹرمپ کی پیوتن کے ساتھ ٹیلی فون پر بات

واشنگٹن // امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے عالمی وبا کورونا وائرس اور تیل کی گرتی ہوئی قیمتوں کے بارے میں اپنے روسی ہم منصب ولادی میر پیوتن سے بات چیت کی۔دونوں رہنماؤں نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی شدت پر تشویش کا اظہار کیا اور قریبی تعاون پر بات چیت کی۔امریکی صدر نے اعلان کیا تھا کہ وہ روس اور سعودی عرب کے درمیان جاری قیمتوں کی جنگ کے نتیجے میں تیل کی قیمتوں میں کمی پر کال کے ذریعے اعتراضات اٹھائیں گے جو امریکا کی توانائی کی صنعت کو بہت متاثر کررہی ہے۔روسی صدر سے بات کرنے سے قبل فوکس نیوز کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ’ہم ایک مردہ صنعت نہیں چاہتے، یہ روس اور سعودی عرب کی جنگ ہے اور دونوں پاگل ہیں۔تاہم امریکی صدر نے فوکس نیوز کو دیے انٹرویو میں کہا تھا کہ انہیں توقع ہے کہ ولادی میر پیوٹن اس کال کو روس پر عائد امریکی پابندیاں ہٹانے کے لیے استعمال کریں گے۔امریکی صدر

ایران سے لائے گئے 484 افراد میں سے 6مثبت

جیسلمیر// 30 مارچ (یو این آئی) ایران سے دو ہفتے قبل طیارے سے راجستھان کے جیسلمیر میں لائے گئے 484 ہندوستانی شہریوں میں پیر کے روز جانچ کے بعد چھ شہری کورونا وائرس پازیٹیو پائے گئے ہیں جبکہ دیگر تین لوگوں کے پازیٹیو ہونے کا خدشہ ہے۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ان شہریوں کی طبی ٹیم  دو دنوں سے جانچ کر رہی ہے۔ جانچ میں چھ ہندوستانی شہریوں میں  کرورونا پازیٹیو ہونے کی تصدیق ہوئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ ان کے علاوہ تین اور شہریوں کے بھی پازیٹیو ہونے کی بات سامنے آئی ہے حالانکہ ابھی اس کی تصدیق نہیں ہوئی ہے۔ذرائع نے بتایا کہ ان پازیٹیو معاملوں کو جودھپور ایمس میں بھجوا دیا گیا ہے۔  

کورونا وائرس کا قہر جاری

 اٹلی میں مرنے والوں کی تعداد 9134 پہنچ گئی، 86 ہزار498  کے ٹیسٹ مثبت   بیجنگ / جنیوا / نئی دہلی //دنیاکے بیشتر ممالک میں پھیل چکے کورونا وائرس کووڈ 19' رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اب تک اس خطرناک وائرس سے 26 ہزار934 افراد کی موت ہو چکی ہے جبکہ تقریبا 5لاکھ90ہزار899 افراد اس وبا ء کی زد میں ہیں۔ ہندوستان میں بھی کورونا وائرس پھیلتا جا رہا ہے اور ملک میں اب تک اس سے متاثرین کی تعداد 834 ہو گئی ہے جبکہ اس وبا سے اب تک کل 19 افراد کی موت ہو چکی ہے ۔اس عالمی وباء کے مرکز چین میں 81 ہزار 934 افراد وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور تقریبا 3 ہزار295 افراد اس وائرس کی زد میں آنے سے ہلاک ہوچکے ہیں۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اس بیماری کا سب سے زیادہ اثر اٹلی ہی میں نظر آرہا ہے ۔ یہاں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 9134 ہو گئی ہے، جبکہ اب تک 86 ہزار498 مریض متاثر ہو چکے ہیں۔امر

کورونا وائرس کا قہر جاری

 اٹلی میں مرنے والوں کی تعداد 9134 پہنچ گئی، 86 ہزار498  کے ٹیسٹ مثبت   بیجنگ / جنیوا / نئی دہلی //دنیاکے بیشتر ممالک میں پھیل چکے کورونا وائرس کووڈ 19' رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اب تک اس خطرناک وائرس سے 26 ہزار934 افراد کی موت ہو چکی ہے جبکہ تقریبا 5لاکھ90ہزار899 افراد اس وبا ء کی زد میں ہیں۔ ہندوستان میں بھی کورونا وائرس پھیلتا جا رہا ہے اور ملک میں اب تک اس سے متاثرین کی تعداد 834 ہو گئی ہے جبکہ اس وبا سے اب تک کل 19 افراد کی موت ہو چکی ہے ۔اس عالمی وباء کے مرکز چین میں 81 ہزار 934 افراد وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور تقریبا 3 ہزار295 افراد اس وائرس کی زد میں آنے سے ہلاک ہوچکے ہیں۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اس بیماری کا سب سے زیادہ اثر اٹلی ہی میں نظر آرہا ہے ۔ یہاں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 9134 ہو گئی ہے، جبکہ اب تک 86 ہزار498 مریض متاثر ہو چکے ہیں۔امر

طالبان سے مذاکرات :افغان حکومتی وفد میں 5خواتین بھی شامل

کابل //حکومت افغانستان نے طالبان سے بین فغان مذاکرات کے لئے 5 خواتین سمیت 21 رکنی وفد کو حتمی شکل دی ہے ۔مذاکراتی ٹیم کی قیادت سابق انٹلیجنس چیف معصوم استانک زئی کریں گے جو ایک پشتون کی حیثیت سے طالبان کے ساتھ قبائلی شناخت رکھتے ہیں۔اگرچہ فوری طور پر ابھی تک یہ بات سامنے نہیں آئی کہ سابق چیف ایگزیکٹیوعبداللہ نے اس وفد کی تائید کی ہے یا نہیں تاہم اس وفد میں باتور دوستم بھی شامل ہیں جن کے والد سابق جنگجو عبدالرشید دوستم، عبداللہ عبداللہ کے حلیف تھے ۔دوسری جانب افغانستان کی وزارت امن نے کہا کہ‘ ‘افغانستان صدر اشرف غنی نے وفد کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا اور ان پر زور دیا کہ بات چیت کے تمام مراحل میں ملک کے بہترین مفاد، افغان عوام کی مشترکہ اقدار اور متحدہ افغانستان کے اصولی موقف کو مطمح نظر رکھیں۔وفد میں شامل 5 خواتین میں حکومت کی اعلیٰ امن کونسل کی نائب رہنما حبیبہ سرابی بھ

ماسک بنانے کیلئے 150ملازمین فیکٹری میں ازخود لاک ڈاون

پیرس //دنیا بھر میں کورونا وائرس سے فرنٹ لائن پر لڑنے والے اور مریضوں کے علاج میں مصروف ڈاکٹروں کو خراج تحسین پیش کرنے کا سلسلہ جاری ہے ۔ ان مسیحاوں کیلئے لوگ مختلف طریقے بھی اپنا رہے ہیں۔افریقی ملک تیونسیا کی ایک فیکٹری میں 150 ملازمین نے خود کو لاک ڈائون کر لیا تا کہ مریضوں کے علاج میں مصروف ڈاکٹروں کیلئے زیادہ سے زیادہ ماسک بنائے جاسکیں۔ ان میں ملازمین میں زیادہ تعداد خواتین کی ہے ۔غیرملکی میڈیا کے مطابق فیکٹری میں ملازمین نے خود کو ایک ماہ کے لئے لاک ڈائون کیا ہے اور یہ افراد ایک دن میں 50 ہزار ماسک اور دیگر حفاظتی سامان تیار کر رہے ہیں۔فیکٹری میں کام کرنے والے منیجر کا کہنا ہے کہ ایسا اقدام حب الوطنی کے تحت کیا کیونکہ ملک میں کورونا کے خلاف جنگ جاری ہے ۔تیونسیا میں گزشتہ اتوار سے لاک ڈائون جاری ہے جبکہ یہاں وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 227 اور مرنے والوں کی تعداد 6 ہے ۔(یواین آئ

برطانوی پارلیمنٹ میں کشمیر پر بحث ملتوی

  سرینگر// کورونا وائرس کی عالمی وباء کے پیش نظربرطانوی پارلیمنٹ میںکشمیر کے حوالے سے قائم’ کل جماعتی پارلیمانی گروپ‘ کی طرف سے کشمیر پر بحث ملتوی کر دی گئی ہے۔ پارلیمنٹ نے گروپ کی چیئرپرسن ڈیبی ابراہم کی طرف سے پیش کی گئی تحریک منظور کرتے ہوئے اس پر بحث کیلئے 26مارچ کی تاریخ مقرر کی تھی۔پارلیمنٹری کشمیر گروپ کی چیئرپرسن ایم پی ڈیبی ابراہم اور جموں و کشمیر بین الاقوامی تحریک حق خود ارادیت کے سربراہ راجہ نجابت حسین نے ’ساوتھ ایشین وائر ‘کو بتایا کہ برطانوی پارلیمنٹ کورونا وائرس کے باعث21اپریل تک بند کر دیا گیا ہے جس وجہ سے یہ بحث بھی ملتوی ہو گئی ہے۔برطانوی پارلیمنٹ میں اس سے قبل بھی تین مرتبہ کشمیر کے حوالے سے بحث ہو چکی ہے جن میں کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بند کرنے اور کشمیریوں کو حق خود ارادیت دینے پر زور دیا گیا۔