تازہ ترین

تہران سہ فریقی سربراہی اجلاس

تہران//اطلاعات کے مطابق تہران میں روسی صدر ولادیمیر پیوٹن، ترک صدر رجب طیب اردگان اور حسن روحانی کے درمیان ہونے والے سہ فریقی سربراہی اجلاس میں شام کے معاملہ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ایران کے صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ امریکہ فوری طور پر شام میں اپنی غیرقانونی مداخلت اور موجودگی کو ختم کردے ۔ ایرانی صدر نے سربراہی اجلاس میں اپنے خطاب کے دوران سات برس سے جاری شام کے مسئلہ کے حل کے لیے 6 نکات پیش کیے اور کہا کہ یہ عالمی برادری کا فرض ہے کہ وہ اسرائیلی حکومت کے اقدامات کا توڑ کرے ۔ اسرائیل کے خلاف اقدامات پر زور دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عالمی برادری کو اسرائیل کی شام کی سرزمین میں مسلسل قبضے ، شامی حکومت اور قوم کے خلاف بڑھتے ہوئے اقدامات کو روکنا ضروری ہے ۔حسن روحانی نے کہا کہ ''شام کے مسئلے کے لیے کسی بھی سیاسی مذاکرات میں شام کی علاقائی سالمیت اور آزادی کا احترام کرنا ضروری

جینیوا: یمن کیلئے امن مذاکرات، آغاز سے قبل ہی اختتام پذیر

جینیوا// اقوامِ متحدہ کی جانب سے یمن میں امن قائم کرنے کی کوشش کے سلسلے میں کیے جانے والے مذاکرات باقاعدہ آغاز سے قبل ہی اختتام پذیر ہوگئے۔ فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق اقومِ متحدہ کے ایلچی کا کہنا تھا کہ وہ حوثی باغیوں کو جینوا آنے پر رضامند کرنے میں ناکام ہوگئے۔اقوامِ متحدہ کے ایلچی برائے یمن, مارٹن گرفتھ نے صحافیوں سے گفتگو کرتیہوئے بتایا کہ ’ہم صنعا سے یہاں وفد نہیں لاسکے ، ہم یہ نہیں کرسکے‘ مذاکرات کی آئندہ کوششوں کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ ابھی کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہے۔واضح رہے کہ ان کی جانب سے یہ بیان اس وقت سامنے آیا جب یمن میں سعودی اتحاد سے متحارب عسکری گروہوں نے باغیوں کے زیر اثر شہر صنعا سے نکلنے سے پہلے اقوامِ متحدہ سے اپنی شرائط پر عملدرآمد کا مطالبہ کیا۔اس سلسلے میں حوثی باغیوں کی پیش کی جانے والی شرائط میں جینوا تک کا محفوظ سفر اور وہ

شام میں بمباری اور گولہ باری سے 15 افراد ہلاک

دمشق// شام میں روس کے فضائی حملوں کے نتیجے میں 5 جب کہ باغیوں کی گولہ باری کے نتیجے میں 10 افراد جاں بحق ہوگئے۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق شام کے صوبے ادلب پر روسی کی بمباری سے 5 افراد جاں بحق اور 14 زخمی ہوگئے۔ روسی فوج نے شامی باغیوں کی تنظیم احرار الشام کی چوکی کو نشانہ بنانے کا دعویٰ کیا۔ادھر صوبہ حما میں باغیوں نے حکومت کے زیر کنٹرول علاقے مہرادا پر گولہ باری کی جس سے 6 خواتین سمیت 10 افراد ہلاک ہوگئے۔ مہرادا میں مسیحی برادری سے تعلق رکھنے والے افراد کی آبادی زیادہ ہے۔ اس حملے کی ذمہ داری ایک چھوٹے عسکریت پسند گروہ نے قبول کرلی۔شامی حکومت اور روس کی جانب سے ادلب میں نیا فوجی آپریشن شروع کیا جارہا ہے اور بین الاقوامی امدادی تنظیموں نے خبردار کیا ہے کہ ایسی کوئی بھی کارروائی انتہائی تباہ کن ثابت ہوسکتی ہے جس کے نتیجے میں ایک بڑا انسانی المیہ رونما ہوسکتا ہے۔ ایران کے دارا

ملالہ یوسف زئی کی کینیڈین وزیر اعظم سے ملاقات

اوٹاوا//نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی نے کینیڈا کے دورے کے دوران کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو سے ملاقات کی۔ ٹوئٹرپرملالہ یوسف زئی سے ملاقات کی تصویرشیئرکرتے ہوئے کینیڈین وزیراعظم نے کہا کہ ملالہ یوسف زئی سے ملاقات پربہت خوشی ہوئی، ملالہ سے صنفی برابری سے متعلق جی سیون تنظیم کی مشاورتی کونسل کے امور پربات ہوئی۔ ملاقات میں دونوں نے دنیا بھرمیں زیادہ سے زیادہ خواتین اورلڑکیوں کی تعلیم کویقینی بنانے کا عزم کیا۔ دوسری جانب کینیڈین وزیراعظم سے ملاقات کے بعد ملالہ یوسف زئی نے ٹوئٹ کے ذریعہ بچوں کی تعلیم کے پرعزم حوصلے اوروقت دینے پرجسٹن ٹروڈو کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ کینیڈا واپس آکر بہت خوشی ہوئی۔یو این آئی  

بصرہ میں احتجاج و مظاہرہ جاری،کرفیو نافذ

بغداد//بدعنوانی ،مہنگائی اوراشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافہ سے نالاں لوگوں پر احتجاج کے دوران فوج کی فائرنگ سے اموات کے بعد بصرہ میں کشیدگی برقرار ہے ۔مشتعل لوگوں کو فوج اور مقامی پولیس سنبھالنے کی کوشش کررہی ہیں،لیکن تادم تحریر حالات کنٹرول سے باہر ہے ۔ عراقی شہر بصرہ میں کئی دن سے جاری حکومت مخالف مظاہروں کے بعد کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے جبکہ مظاہرین نے ایرانی قونصل خانہ نذرآتش کر دیا ہے ۔ مظاہرین ملک میں بدعنوانی اور بنیادی سہولیات کی عدم فراہمی کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں۔ بصرہ میں روں موسم گرما کے دوران ماحول کشیدہ رہا تاہم رواں ہفتے ہونے والے پرتشدد احتجاجی مظاہروں میں کم از کم سات افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ بصرہ میں شیعہ مسلمان اکثریت میں ہیں اور یہاں پر عراقی تیل کے 70 فیصد ذخائر پائے جاتے ہیں تاہم شہریوں کو شکوہ ہے کہ مرکزی حکومت دہائیوں سے نظر انداز کر رہی ہے ۔ بی بی سی