تازہ ترین

کورونا وائرس کے پھیلائو میں مزید تیزی آگئی

 متاثرین تعداد 4لاکھ جاپہنچی ،اٹلی کے بعد سپین نیا مرکز  بیجنگ/جنیوا/نئی دہلی//دنیا کے بیشترممالک میں پھیل چکے کوروناوائرس۔کووڈ 19 کا پھیلاؤ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اب تک اس خطرناک وائرس سے 16 ہزار462 افراد کی موت ہو چکی ہے جبکہ تقریبا 3 لاکھ 75 ہزار643 لوگ اس سے متاثرہ ہوئے ہیں۔ سب سے زیادہ متاثر چین کے لئے راحت کی بات یہ ہے کہ ووہان میں گزشتہ تین دن سے کوئی معاملہ سامنے نہیں آیا ہیتاہم ملک بھر میں چوبیس گھنٹوں کے دوران مزید 78کیس سامنے آئے ہیں جن میں سے 74بیرون ممالک سے واپس لوٹے ۔چین میں 81,093 افرادکورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی ہے اورتقریباتین ہزار دوسو ستّرافراد کی اس وائرس کی زد میں آنے سے موت ہو چکی ہے ۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے حوالہ سے سب سے زیادہ سنگین صورتحال اسپین کی ہے ۔اسپین میں اس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر2311 ہو گئی ہے

ملکہ برطانیہ وشہزادہ چارلس قرنطینہ میں

لندن//ملکہ برطانیہ اور ان کے بیٹے شہزادہ چارلس کورونا وائرس کی وباسے بچنے کیلئے شاہی محل چھوڑ کر محفوظ جگہ منتقلی کے باعث قوی امکان ہے کہ جلد ہی شہزادہ ولیم عارضی طورپربادشاہت کے فرائض سرانجام دیں گے۔ چوں کہ برطانوی وزارت صحت نے پہلے سے ہی اعلان کر رکھا ہے کہ جن افراد کی عمر 70سال سے زائد ہے وہ کورونا وائرس کاشکارنہ ہونے کے باوجود خودکوقرنطینہ کردیں۔ملکہ برطانیہ اور شہزادہ چارلس قرنطینہ رہتے ہیں تو شہزادہ ولیم ہی آخری امید ہوں گے اور انہیں عارضی طور بادشاہ کی ذمہ داریاں نبھانا پڑیں گی۔

جنگ چھوڑکر بیماری کا مقابلہ کریں

نیویارک//اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوئٹرس نے دنیا بھر میں جنگ بندی کا مطالبہ کردیا۔سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ نے ایک بیان میں کہا کورونا وائرس کی وبا کا دنیا کو سامنا ہے، وقت آگیا ہے کہ جنگ و جدل کو چھوڑیں اور بیماری کا مقابلہ کریں گے جس سے ہماری دنیا گزر رہی ہے۔انتونیو گوئٹرس نے کہا کہ دنیا بھر میں لڑائیاں بند کی جائیں، بنی نوع انسان کو امن کی اب کہیں زیادہ ضرورت ہے، کورونا وائرس کا غصہ جنگ کی حماقت کو بیان کر رہا ہے، کورونا وائرس قومیت یا نسل، گروہ یا عقیدہ نہیں دیکھتا، یہ بلا مبالغہ سب پر حملہ آور ہے۔