تازہ ترین

کولگام ہلاکتوں کیخلاف احتجاجی مارچ

سرینگر//کولگام شہری ہلاکتوں کے خلاف مشترکہ مزاحمتی جماعتوں نے سوموار کو احتجاجی مارچ کیاتاہم پولیس نے مظاہرین کی لالچوک کی طرف پیشقدمی ناکام بناتے ہوئے کئی لیڈران کو حراست میں لیا۔ مشترکہ مزاحمتی لیڈرشپ کی ہدایت پرحریت کے دونوں دھڑوں اورلبریشن فرنٹ سے وابستہ لیڈراورکارکن سوموارکوآبی گزرمیں جمع ہوئے اور شہری ہلاکتوں ،این آئی اے کی مہم اورزیادتیوں وپکڑدھکڑکیخلاف جلوس نکالنے کی کوشش کی ۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں تختیاں اٹھا رکھی تھی،جن پر ’’معصوموں کا قتل عام بند کرئو،شہری ہلاکتوں کو بند کرئو‘‘ کے نعرے درج تھے۔مظاہرین نے بشری حقوق کی تنظیموں سے درخواست کی کہ وہ وادی میں شہری ہلاکتوں پر قدغن لگانے کیلئے اپنا موثر کردار ادا کریں۔انہوں نے محمد یاسین ملک کی مسلسل نظر بندی اور سید علی شاہ گیلانی ،میرواعظ محمد عمر فاروق اور محمد اشرف صحرائی کی مسلسل خانہ نظر بندی اور شوکت

پریس کالونی میں برزلہ کی خواتین کا احتجاج

سرینگر//کپوارہ کے کیرن سیکٹر میں29جون کو فوج کے ساتھ جھڑپ میں جان بحق جنگجو کی میت کی واپسی کا مطالبہ کرتے ہوئے برزلہ کی خواتین نے پریس کالونی میں احتجاجی مظاہرہ کیا اور الزام لگایا کہ انتظامیہ و پولیس مدثر احمد کی نعش کو سپرد کرنے میں پس وپیش کر رہی ہے۔ پریس کالونی میں پیر کو اس وقت رقعت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے جب برزلہ علاقے سے آئی ہوئی بیسوں خواتین نے احتجاج کرتے ہوئے کیرن سیکٹر میں جان بحق ہوئے نوجوان کی نعش کا مطالبہ کیا۔مقامی لوگوں کے مطابق مدثر احمد بٹ ولد غلام محمد بٹ نامی یہ نوجوان2سال قبل تک عیدگاہ برزلہ کے نزدیک کریانہ کی ایک دکان چلا رہا تھا،جس کے بعد سے وہ لاپتہ ہوا۔احتجاجی خواتین کافی دیر تک روتی بلکتی رہیں،جس کی وجہ سے رقعت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے۔احتجاجی خواتین میں مدثر احمد کی بہنیں اور قریبی رشتہ دار بھی تھے،جنہوں نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ2سال قبل مدثر لاپتہ ہوا

شبانہ چھاپوں کے دوران4نوجوان گرفتار

سرینگر//حیدر پورہ میں 4نو جوانوں کی گرفتاری کے خلاف لوگوں نے سڑک پر نکل کر زور دار احتجاجی دھر نا دیا جس کے نتیجے میں سرینگر ہو ائی اڈے کی جانب جانے والی سڑک پر شدید ٹریفک جام کی صورتحال پیش آئی ۔درجنوں خواتین نے حیدر پورہ جامع مسجد کے نزدیک دھر نا دیکرگر فتار کئے گئے 4نو جوانوں کی فوری رہائی کی مانگ کی جنہیں فورسز نے سنیچر اوراتوار کی در میانی رات کو گرفتار کیا تھا ۔احتجاج کر رہی خواتین نے بتایا کہ جب سنیچر وار کو حیدر پورہ کے نزدیک گرنیڈ دھماکہ ہوا اسوقت یہ بچے کھیل کے ایک میدان میں مو جود تھے ۔انہوں نے بتایا کہ ان نو جوانوں کو فورسز نے دوران شب گرفتار کر لیا ۔انہوں نے کہا کہ یہ چاروں نو جوان معصوم ہیں اور ان کا دھماکے کے ساتھ کودور کا بھی واسطہ نہیں ہے ۔ نو جوانوں کے اہلخانہ اور رشتہ داروں نے حیدر پورہ جامع مسجد کے نزدیک ان کی گر فتاری کو لے کر احتجاج کیا جس کے نتیجے میں سرینگر انٹ

شہر کے کئی علاقوں میں آج پانی کی سپلائی متاثر رہے گی

سرینگر//ایکزیکٹو انجینئر واٹر ورکس ڈویژن سرینگر کی ایک اطلاع کے مطابق دودھ گنگا واٹر ٹرٹمنٹ پلانٹ کے احاظہ میں 2250000گیلن گنجائش والے سروس ریزوائر کی صفائی کے پیش نظر آج یعنی10جولائی کو کرالہ پورہ ،موچھو ،باغ مہتاب ،چھانہ پورہ ،نٹی پورہ ،وانہ بل ،راولپورہ ،صنعت نگر ،باغات ،برزلہ ،رام باغ ،ہفتہ چنار ،مگھرمل باغ اور ملحقہ علاقوں میں آج صبح10بجے سے شام 8بجے تک پانی کی فراہمی متاثر رہے گی۔محکمہ نے لوگوں سے کہا کہ کہ وہ قبل از وقت پانی کا مناسب ذخیرہ کرکے محکمہ سے تعاون کریں ۔پانی کی اشد ضرورت پڑنے پر محکمہ کے ٹول فری نمبر18001807027پر رابطہ قائم کیا جاسکتا ہے ۔  

شہر میں صحت شعبے کے7بڑے پروجیکٹ تکمیل کے مرحلے میں

سرینگر//ضلع ترقیاتی کمشنر سرینگر ڈاکٹر سید عابد رشید شاہ نے کل ضلع میں وزیراعظم ترقیاتی پروگرام (پی ایم ڈی پی) کے تحت منظور کئے گئے پروجیکٹوں کی پیش رفت کاجائزہ لیا۔اس سلسلے میں منعقدہ میٹنگ کے دوران بتایا گیا کہ ضلع میں صحت شعبے کے تحت کم سے کم سات بڑے پروجیکٹوں کی تکمیل کا کام جاری ہے جن میں بمنہ میں 70کروڑ روپے کی لاگت والے دو سو بستروں کا میٹرنٹی پیٹریا ٹک ہسپتال ،بٹہ مالو میں 10کروڑ روپے کی لاگت والا پرائمری ہیلتھ سینٹر ،بمنہ میں 9کروڑ روپے کی لاگت والا ڈرگ وارے ہائوس ،بمنہ میں 12کروڑ روپے لاگت والا سواستھ بھون ،چندہ پورہ میں 15.40کروڑ روپے کی لاگت والا 50بستروں کا پی ایچ سی ،زکورہ میں 13کروڑ روپے کی لاگت والا منی میٹرنٹی سینٹر اورجے ایل این ایم رعناواری میں 19کروڑ روپے کی لاگت والا اضافی بلاک شامل ہے۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ ان پروجیکٹوں کی تکمیل 2019ء کے وسط میں یقینی ہے ۔ترقیاتی

ایس پی او نے دیانتداری کی مثال قائم کی

سرینگر//قمر واری میں ایک ایس پی او نے ایمانداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے شہری کو 90ہزار روپے سے بھرا بیگ واپس لوٹا دیا ۔پولیس ترجمان کے مطابق سوموار کو قمر واری میں پولیس نے معمول کے مطابق ناکہ لگایا تھا جس دوران ایس پی او عمر مشتاق بیلٹ نمبر/ایس پی او نے وہاں ایک بیگ پایا جس میں 90ہزار روپے کیس تھے ۔مذکورہ اہلکار نے فوری طور پر ڈیوٹی آفیسر کو اس کی اطلاع دی اورآفیسر نے انچارچ پولیس پوسٹ قمرواری کو مطلع کیا ۔اسی دوران پولیس پوسٹ قمرواری میں عبدالعزیز ملا ساکن نیو کالونی پالہ پورہ نے پیسوں سے بھرے بیگ کے گم ہونے کی رپورٹ درج کرائی ۔اس کے بعد پولیس نیتمام طرح کے قانونی لوازمات پورے کرنے کے بعد بیگ کو مالک کے حوالے کیا گیا۔ یاد رہے کہ حال ہی میں مذکورہ شخص سرینگر میونسپل کارپوریشن سے ریٹائرڈ ہو گیا تھا اور یہ90ہزار روپیہ پنشن کی رقم تھی ۔ مذکورہ شخص نے پولیس کارروائی کو خوب سراہا ہے۔ عوامی ح

پروفیسر چترالیکھازتشی کی کتاب کی رسم اجرائی

سرینگر// سنٹرل یونیورسٹی میں کل سیاست اور گورننس سیکشن کے اہتمام سے ایک کتاب کی رسم اجرائی اور کشمیر کی تاریخ ،سیاست اور نمائندگی پر مباحثہ ہوا ۔پروفیسر چترالیکھا زتشی کی طرف سے ترتیب کردہ کتاب ’’کشمیر ‘‘کی اجرائی کے موقعہ پر  سیاست اور گورننس سیکشن کے فیکلٹی ممبران اور دیگر سیکشنوں کے نمائدے موجود تھے ۔پروفیسر چترا لیکھا زتشی کالج آف ولیم اینڈ میری، ولیمز برگ، ورجینیا میں تاریخ کے جیمز پنکنی ہریسن پروفیسر ہیں ۔ پروفیسر نور احمد بابا نے اس تقریب کی صدارت کی جس میں شعبہ پولٹیکس اور گورننس اور دوسرے محکموں کے تمام فیکلٹی ممبران شامل تھے۔ پروفیسر این اے بابا نے خطاب کرتے ہوئے کشمیر سے متعلق بہت سے موضوعات جیسا کہ نیا کشمیر اور پاکستان کے زیر انتظام کشمیر جس کے لئے ابھی تک تیار مواد دستیاب نہیں ہے کے لئے اس کو بروقت معلومات قرار دیتے ہوئے اس کام کو کافی سراہا۔