تازہ ترین

عطیہ کی فراہمی کیلئے چین کے ساتھ لگنے والی سرحد ایک دن کیلئے کھول دی جائے

بیجنگ کا اسلام آباد سے مطالبہ،پاک وزارت خارجہ کے نام مکتوب روانہ

27 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

مانیٹرنگ ڈیسک
سرینگر//چین نے پاکستان سے کہا ہے کہ وہ جمعہ کے دن ایک روز کیلئے اُس کے ساتھ لگنے والی سرحد کو کھول دے تاکہ کورونا وائرس کے پھیلائو کی وجہ سے پیدا صورتحال کا مقابلہ کرنے کیلئے ضروری عطیات پاکستانی علاقہ تک پہنچائی جاسکیں۔اطلاعات کے مطابق دونوں ممالک کی سرحد پر واقع کھونجیرب درہ عام طور پر یکم اپریل کو کھولا جاتا ہے جب مذکورہ درے سے برف پوری طرح پگھل جاتی ہے، تاہم اس سال مذکورہ سرحد کو کورو ناوائرس کے پھیلائو سے پیدا صورتحال کے پیش نظر غیر معینہ عرصہ کیلئے بند کیا گیا ہے۔اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ چین کے سفارتخانے نے پاکستان کی وزارت خارجہ کو ایک مکتوب روانہ کیا ہے کہ چین کے علاقہ زنگ جیانگ کا گورنر گلگت بلتستان خطے کیلئے ادویات اور ضروری سامان عطیہ کرنا چاہتے ہیں۔خط میں مزید لکھا ہے کہ زنگ جیانگ کا گورنر 2لاکھ عام ماسکس،2ہزارN.95قسم کی ماسکس،5وینٹی لیٹر،2ہزارٹیسٹنگ کٹس اور2ہزار خصوصی طبی لباس، جو طبی عملہ استعمال کرتا ہے، عطیہ کرنا چاہتے ہیں۔یہ عطیہ کرنے کا فیصلہ گلگت بلتستان کے چیف منسٹر حفیظ الرحمان کی اُس اپیل کے بعد لیا گیا ہے جو اُنہوں نے کچھ روز قبل کی۔یاد رہے کہ کورو ناوائرس کا اثر گلگت بلتستان علاقے میں کافی حد تک پایا جاتا ہے۔وہاں وینٹی لیٹروں کی تعداد بھی بہت کم ہے اور علاقہ دشوار گذار اور دور دراز ہونے کی وجہ سے وہاں طبی سہولیات کی بھی بہت کمی ہے۔گلگت بلتستان میں ابھی تک وائرس سے متاثرہ84افراد کی نشاندہی کی گئی ہے جبکہ پاکستان میں مجموعی طور پر 1,102افراد وائرس میں مبتلاء ہیں۔