تازہ ترین

کشمیر کے بارے میں بین الاقوامی برادری کو جانکاری دی ہے:مرکز

چین ،ملیشیا اور ترکی کو بھارت کے اندرونی معاملات میں مداخلت نہ کرنیکی تلقین

20 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

مانیٹرنگ ڈیسک
سرینگر//مرکزی سرکار نے جمعرات کو کہا کہ اُس نے جموں کشمیر سے متعلق دفعہ370کی منسوخی اور شہریت ترمیمی قانون کے بارے میں بین الاقوامی برادری کو مطلع کیا ہے۔وزارت خارجہ کے وزیر مملکت وی مرلی دھرن نے لوک سبھا میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ حکومت کی کوششوں کی وجہ سے بین الاقوامی برادری سمجھ گئی ہے کہ جموں کشمیر بھارت کا اندرونی معاملہ ہے اور پاکستان کی دراندازی بھارتی شہریوں کیلئے خطر ناک ہے۔وزیر موصوف نے دعویٰ کیا کہ دنیا کے سبھی ممالک نے پاکستان سے کہا ہے کہ وہ اپنی سر زمین کو بھارت کیخلاف استعمال ہونے کی اجازت نہ دے۔انہوں نے کہا ’’حکومت نے بین الاقوامی برادری تک پہنچ کر جموں کشمیر اور شہریت ترمیمی قانو ن کے بارے میں وضاحت کی ہے،دنیا کے سبھی ممالک نے بھارت کی پوزیشن کو سمجھا بھی ہے،دنیا جان گئی ہے کہ بھارت کے جمہوری ادارے سبھی معاملات کو حل کرنے کی اہلیت رکھتے ہیں۔  مرلی دھرن نے اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق کے کشمیر اور شہریت ترمیمی قانون سے متعلق بیان کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ مذکورہ بیان’’بنیادی طور پر امتیازی نوعیت کاتھا‘‘۔مرلی دھرن کے مطابق مرکزی سرکار نے جموں کشمیر کے بارے میں چین، ملیشیا اور ترکی کے بیانات کو بھی پہلے ہی مسترد کیا ہے۔انہوں نے کہا’’ہم نے مذکورہ ممالک تک یہ بات پہنچائی ہے کہ وہ بھارت کے اندرونی معاملات میں مداخلت سے باز رہ کر بھارت کی خود مختاری کا احترام کریں‘‘۔