تازہ ترین

بچاؤ تدابیر: تاجر برادری کی طرف سے ادویات کا چھڑکائو

19 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

سرینگر//کشمیر اکنامک  الائنس  نے بدھ کو سرینگرکے اسپتالوں، مساجد،خانقاہوں،گرجا گھروں اور مندروں میں کرونا وائرس سے تحفظ کیلئے جراثیم کش ادویات کا چھڑکائو کیا۔ الائنس کے شریک چیئرمین فاروق احمد ڈار کی سربراہی میںایک ٹیم نے بچوں کے سب سے بڑے اسپتال جی بی پنتھ اسپتال سے مہم کا آغاز کیا،جس کے بعد سونہ وار میں  حضرت سید یعقوب صاحبؒ، کتھو یلک چرچ،گردوارہ امیراکدل اور ہنومان مندر میں ادویات کا چھڑکائو کیا گیا۔ٹیم میں الائنس کے نائب چیئرمین اعجاز شہدار اور حاجی نثار سمیت دیگر تاجر لیڈر بھی موجود تھے۔ نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے فاروق احمد ڈار نے کہا کہ ایک ایسے واقت میں جب کرونا وائرس کے خدشات نے اہل کشمیر کو تشویش میں مبتلا کیا ہے،رضاکارانہ طور پر انہو ں نے جراثیم کش ادویات کا چھڑکائو عبادتگاہوں اور اسپتالوں میں شروع کیا۔ان کا کہنا تھا کہ کشمیر اکنامک الائنس عوامی معامالت میںہر وقت صف اول پر رہی ہے  اور موجودہ اس  پرآشوب دور  میں بھی وہ پیچھے  نہیںرہےگی۔انہوں نے ٹرانسپوٹروں،تعمیراتی ٹھیکداروں،شکارہ مالکان،مٹن ڈیلروں اور دکانداروں سے اپیل کی کہ وہ وادی کے اسپتالوں اور مساجدوں کے علاوہ دیگر عبادتگاہوںمیں رضاکارانہ طور پر ادویات چھڑکائو کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ وادی سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے ہمیشہ مشکل اوقات میں ایک دوسرے کا ہاتھ تھاما ہے اور ایک مرتبہ پھر اس جرتمندی کی ضرورت ہے تاکہ اس مہلک وائرس کو جموں کشمیر میں داخل ہونے سے روکا جاسکے۔انہوں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وادی میں داخل ہونے والے تمام لوگوں کی جانچ پیشہ وارانہ بنیادوں پر کیا جانا چاہے تاکہ یہ مہلک وائرس وادی میں داخل نہ ہوسکے۔