تازہ ترین

ہیروئن اور برائون شوگر کرناہ میں جگہ جگہ دستیاب،اب تک 25کلو ضبط

ہر 8میں سے 3نوجوانوں کے مبتلا ہونے کا انکشاف، حد متارکہ پر واقع امروہی اور سعد پورہ دیہات سے منشیات کی آمد

19 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

اشفاق سعید
سرینگر //اس بات کا حیران کن انکشاف ہوا ہے کہ کرناہ کی آبادی میں منشیات کی وباء تشویشناک حد تک پھیل چکی ہے اور پولیس کا کہنا ہے کہ منشیات کو وادی کے دیگر علاقوں تک پھیلانے کا ایک منظم نیٹ ورک کام کررہا ہے۔پولیس کی جانب سے ابھی تک منشیات فروشوں کیخلاف11کیس درج کئے جاچکے ہیں اور 25کلو ہیروئن اور برائون شوگر ضبط کیا گیا ہے جس کی بین الاقوامی بازار میں کروڑوں روپے کی قیمت ہے۔کرناہ کی ایک رضاکار تنظیم کی جانب سے جمع کئے گئے اعدادوشمار کے مطابق ہر 8میں سے 3 نوجوان اس لت میں مبتلا ہو چکے ہیں جبکہ 20کے قریب نوجوانوں کا علاج ومعالجہ انسداد منشیات کے مراکزپر کیا جا چکا ہے ۔علاقے کے سنجیدہ فکر لوگوں کا کہنا ہے کہ اگر یہ سلسلہ بند نہ کیا گیا تو آنے والی نسلیں تباہ ہو جائیں گی۔ ذرائع نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ابتک کی تحقیقات کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے کہ امروہی اور سعد پورہ کے دیہات سے ہی منشیات کرناہ کے دیگر علاقوں سے ہوتے ہوئے کپوارہ یا وادی کے دیگر علاقوں تک پہنچائی جارہی ہے۔جن لوگوں سے منشیات ضبط کی گئی ہے ان میں سے زیادہ تر انہی دو دیہات سے تعلق رکھتے ہیں۔تاہم اب پولیس نے سادھنا ٹاب پر برے پیمانے پر تلاشی کارروائی کا سلسلہ شروع کر کے اس پر روک لگانے کی کوشش کی ہے۔پولیس کے اعدادو شمار کے مطابق 2018میں کرناہ میں 8کیس درج کئے گئے، جن کے دوران4پر سیفٹی ایکٹ لگایا گیا اور ابھی قریب 7کا معاملہ عدالت میں ہے۔2019میں مزید 3کیس درج کئے گئے ہیں اور 7افراد کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے۔امسال بھی کرناہ میں ابھی تک 2کلو ہیروئن اور برائون شوگر ضبط کیا جاچکا ہے۔جنوری کے مہینے میں پولیس نے امروہی کرناہ کے 4 افرادسے 19کلوگرام برائون شوگر برآمد کیاجس کی قیمت بین الاقوامی بازار میں 70سے 80کروڑ روپے بتائی جاتی ہے ۔21جون کو پولیس نے ریاض احمد بڈھانہ ، مدثر احمد پسوال، تنویر احمد رینہ اور ضمیر احمد رینہ ساکنان امروہی کرناہ پر پبلک سیفٹی ایکٹ ( پی ایس اے)عائد کرکے انہیں جیل بھیج دیا ۔کرناہ کے ایک نوجوان، جو منشیات کا عادی ہے، نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ہر ایک گائوں میں کھلے عام ہیروئن اور براون شوگر دستیاب ہے اور ایک گرام کیلئے 2ہزار روپے دینے پڑتے ہیں۔انہوں نے کہا’’کرناہ میں بہت سے لوگ اس کا کاروبار کرتے ہیں اور نوجوان نسل کو اس میں مبتلا کرتے ہیں‘‘ ۔انسداد منشیات مرکز صدر اسپتال سرینگر میں ابھی تک 20نوجوانوں کا علاج و معالجہ کیا گیا ہے، جبکہ پولیس کنٹرول روم مرکز میں بھی کئی افراد کو داخل کیا گیا۔بیوپار منڈل صدر اور سرپنچ حلقہ ٹنگڈار عبدالرحیم میر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ یہ لت کرناہ وادی میں زوروں سے پھیل رہی ہے اور اگر 5 ماہ تک اس پر روک نہ لگائی گئی تو علاقے میں گھمبیر صورتحال ہوجائے گی۔انہوں نے کہا کہ حالت ایسی ہے کہ نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد جن کی عمر 15 سے35سال  کے درمیان ہے ،وہ اس میں مبتلا ہیں اور پچھلے ایک سال میں چوری کی کارروئیاں بھی بڑھ چکی ہیں ۔ایچ ایچ او کرناہ وسیم احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ نشے میں مبتلا ہو ئے نوجوانوں کو پولیس کنٹرول روم سرینگر میں قائم انسداد منشیات کے مراکز میں بھرتی ہونے کی صلاح دی جاتی ہے اور اُن سے کی گئی تحقیقات کے بعد ایسے افراد کی گرفتاریاں بھی عمل میں لائی جاتی ہیں ۔ایس ایس پی کپوارہ نے کہا کہ سرحد پار سے یہ منشیات سرحدی علاقوں کے لوگوں کے ذریعے یہاں پہنچ رہی ہے اور اس سلسلے میں پولیس نے بہت سے لوگوں کی گرفتاری عمل میں لا کر پی ایس اے کے تحت انہیںسلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا ہے ۔ایس ایس پی نے مزید کہا کہ کرناہ کے سمگلر صرف کرناہ سے ہی نہیں بلکہ کپوارہ اور کرالپورہ سے بھی  ہیروئن اور برائون شوگر ڈیلرگرفتار ہوئے ہیں ۔ایس ایس پی نے کہا کہ پولیس نے صرف منشیات مخالف کارروائیوں کیلئے کپوارہ میں ہی پولیس کی تین ٹیموں کو تشکیل دیا ہے اور اس وقت ضلع کے 9افراد جیل میں بند ہیں۔
 

منشیات فروش گرفتار، چرس بر آمد

نیوز ڈیسک
 
سرینگر //منشیات فروشوں کیخلاف کریک ڈائون کے دوران سرینگر پولیس نے ایک شخص کی تحویل سے چرس برآمدکر لیا ہے۔ سید منصور صاحب پُل کے نزدیک کرن نگر پولیس نے ناکہ چیکنگ کے دوران موٹر سائیکل زیر نمبر JK01L-0605کو روک کر اُس پر سوار اشان نجار ولد غلام قادر نجار ساکن پتھر مسجد زینہ کدل کی جامہ تلاشی لی جس دوران اُس کے قبضے سے 105گرام چرس برآمد ہوا۔ پولیس نے موقع پر ہی مذکورہ شخص کی گرفتاری عمل میں لا کر اُس کے خلاف ایف آئی آر زیر نمبر 29/2019کے تحت پولیس اسٹیشن کرن نگر میں کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے۔علاوہ ازیں پولیس ٹیم نے موٹر سائیکل کو بھی اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔پولیس نے عوام الناس سے اپیل کی ہے کہ وہ منشیات کا کاروبار کرنے والوں کے خلاف قانون نافذ کرنے والے ادارے کو مطلع کریں تاکہ اس بدعت کا قلع قمع کیا جاسکے۔