تازہ ترین

گول ۔بدھن روڈ پر غیر معیاری تارکول بچھانے کا الزام

مقامی لوگوں کا احتجاج،تحقیقات کروانے کی مانگ کی

13 جولائی 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

زاہد بشیر
گول//گول بدھن روڈ پر محکمہ گریف کی جانب سے تار کول بچھائے جانے پر مقامی لوگوں نے احتجاج کرتے ہوئے اسے نا قص قرار دیا ۔ انہوںنے کہا کہ شدید بارشوں کے بیچ تار کول ڈالا جا رہا ہے اور اس کا درجہ حرارت نوے فیصد سے زیادہ ہونا چاہئے لیکن یہ اتنا گرم ہے کہ انسان اس تار کو ل کو ہاتھ میں اُٹھاتا ہے اور کچھ ہی دنوں کے بعد یہ اکھڑ جائے گا ۔ وہیں جس روڈ پر یہ ڈالا جا رہا ہے اسے پہلے صاف نہیں کیاگیااورتارکول مٹی کے اوپر ہی بچھایاجا ر ہا ہے جبکہ پہلے روڈ کو ویکیوم کے ذریعے سے صاف کرنا ہوتا ہے اوراس پرمٹی نہیں ہونی چاہئے تا کہ یہ مضبوطی پکڑے لیکن یہاں پر تمام قوانین کو بالائے طاق رکھ کر محکمہ گریف کام کر رہا ہے ۔ مقامی لوگوں نے کہا کہ اس سے قبل بھی محکمہ نے کام کیا جو نا قص ثابت ہوا لیکن انتظامیہ کی طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ۔ گول اے کے سرپنچ گلزار احمد تراگوال نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ گول بدھن روڈ پر محکمہ گریف جو تار کول بچھارہاہے، یہ نہایت ہی غیر معیاری ہے اور نہ ہی درجہ حرارت کو دیکھاجارہاہے اور نہ ہی بارشوں کو،ایسے میں یہ کیسے ٹک پائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ پہلے سڑک کو صاف بھی نہیں کیاگیااور مٹی پر تار کول ڈالا جا رہا ہے جو ساتھ ساتھ اکھڑ رہا ہے ۔احتجاج میں موجود دیگرلوگوں عبدالرشید بیگ ، عبدالغنی منہاس ، بشیر احمد و دیگران نے ناراضگی اکاظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ کام نہایت ہی قابل رحم ہے اور جس طرح سے گریف کام کر رہا ہے ،یہ خزانہ عامرہ کو سیدھا ڈاکہ ہے ۔ انہوں نے ضلع انتظامیہ اورگورنر ستیہ پال ملک سے مطالبہ کیا کہ وہ تارکول بچھانے کی جانچ کرواکے خزانہ عامرہ کو نقصان پہنچانے والوں کے خلاف کارروائی عمل میں لائیں اور سڑک پر معیاری تارکول بچھایاجائے ۔